چین میڈیا کی دھمکی، اگر ہندوستان نے ویت نام کو آکاش میزائل بیچا تو چین خاموش نہیں بیٹھے گا

Source: S.O. News Service | Published on 11th January 2017, 9:16 PM | عالمی خبریں |

بیجنگ، 11جنوری(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)چین کی سرکاری میڈیا نے کہا کہ بیجنگ کا مقابلہ کرنے کیلئے اگرویت نام کے ساتھ ہندوستان اپنے فوجی تعلقات مضبوط کرنے کا کوئی قدم اٹھاتا ہے تو اس سے علاقے میں رکاوٹ پیدا ہوگی اور چین ہاتھ پر ہاتھ دھرکر نہیں بیٹھے گا۔چین کی سرکاری میڈیا نے یہ بات اس رپورٹ کے تناظر میں کہی ہے کہ نئی دہلی ہنوئی کو سطح سے ہوا میں مار کرنے والے آکاش میزائل فروخت کرنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔ویت نام سطح سے ہوا میں مار کرنے والے آکاش میزائل نظام کی فراہمی کی خبروں پر چین کے خدشات کو اجاگر کرتے ہوئے گلوبل ٹائمز میں شائع ایک مضمون میں کہا گیا ہے کہ اگر حکومت ہند اسٹریٹیجک معاہدے یا بیجنگ کے خلاف انتقام کے جذبے سے ویتنام کے ساتھ بنیادی طور پر اپنے فوجی تعلقات کو مضبوط کرتی ہے تو اس سے علاقے میں رکاوٹ پیدا ہوگی اور چین کے ہاتھ پر ہاتھ دھرے نہیں بیٹھے گا۔
اس میں کہا گیا کہ میزائل کی فراہمی عام ہتھیار فروخت کے طور پر ہونی ہے، جسے ہندوستانی میڈیا میں اب تک چین کے خطرے سے نمٹنے کے لئے ایک جواب کے طور پر بتاتا رہا ہے۔گلوبل ٹائمز نے یہ بات ان خبروں کا حوالہ دیتے ہوئے کہی کہ نئی دہلی کا یہ قدم چین کی طرف سے ہندوستان کو جوہری سپلائر گروپ (این ایس جی)کا رکن بننے سے روکنے اور جیش محمد کے دہشت گرد مسعوداظہر پر اقوام متحدہ سے پابندی لگانے کی ہندوستان کے کوششوں میں چین کی طرف سے رکاوٹ لگائے جانے کے جواب میں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

جرمنی: میونخ میں چاقو سے حملہ، 4 افراد زخمی

جرمنی میں پولیس نے ہفتے کے روز اعلان کیا ہے کہ میونخ شہر میں چاقو سے وار کر کے چار افرد کو زخمی کر دیا گیا۔پولیس کا کہنا ہے کہ نامعلوم شخص کی جانب سے کیے جانے والے حملے کی وجوہات ابھی تک معلوم نہیں ہو سکیں۔

کرکوک پر کنٹرول کے باوجود متنازع علاقوں کی حیثیت تبدیل نہیں ہوئی: امریکا

امریکی وزارت خارجہ نے شمالی عراق میں پرشدد واقعات پر اپنی تشویش کا اظہار کرتے ہوئے عراقی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کرکوک کے نزدیک اپنی نقل و حرکت پر روک لگائے جو بغداد اور عراقی کردستان کی حکومتوں کے درمیان متنازع علاقہ ہے۔

نئی امریکی پابندیاں ایران اور حزب اللہ کی راہ دیکھ رہی ہیں

امریکی ایوانِ نمائندگان میں ریپبلکن رہ نماؤں نے انکشاف کیا ہے کہ آئندہ چند روز میں ایوان میں ایرانی بیلسٹک میزائل پروگرام اور تہران نواز لبنانی ملیشیا حزب اللہ پر نئی پابندیاں عائد کرنے کے لیے رائے شماری ہو گی۔