ساحلی کرناٹکا میں بارش کے نقصانات کے بعد مرکزی ٹیم نے لیا مڈکیری ضلع کے نقصانات کا جائزہ : ڈی سی اور دیگر افسران کے ساتھ میٹنگ

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 12th September 2018, 9:29 PM | ساحلی خبریں |

مڈکیری :12/ستمبر(ایس اؤ نیوز) ساحلی اضلاع میں بارش کی وجہ سے ہوئے نقصانات کا جائزہ لینے پہنچی مرکزی جائزہ ٹیم مڈکیری پہنچ کر سرکٹ ہاؤس میں ڈپٹی کمشنر پی آئی شری ودییا سے مکمل جانکاری حاصل کی۔

مرکزی حکومت کے آفیسر انیل  ملک کی قیادت والی ٹیم بارش اور سیلاب سے متاثرہ کھیت، باغات، قومی اور ریاستی شاہراہیں، دیہات ، کافی باغات ،سپاری باغات کا دورہ کیا اورآب پاشی ، چھوٹی آب پاشی ، بجلی محکمہ جات کو پہنچنے والے  نقصانات کے متعلق جانکاری حاصل کی۔ ڈی سی کے علاوہ مختلف محکمہ افسران نے مرکزی ٹیم کو مرحلہ وارتفصیلات سے آگا ہ کیا۔ اس موقع پر ضلع نگراں کاروزیر سا، را، مہیش اور ایم پی پرتاپ سنہا نے بھی اپنی طرف سے نقصانات کی جانکاری دی۔ ضلع پنچایت ممبر کے پی چندرکلا، ضلع پنچایت سی ای اؤ پرشات کمار مشرا، ایڈیشنل ڈی سی، تحصیلدار ، کافی بورڈ کے افسران ، مختلف محکمہ جات کے افسران وغیر ہ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بنٹوال میں ایمبولینس اور ٹرک کا تصادم۔ 1خاتون ہلاک، 4زخمی    

نیرلکٹے کے پاس پیش آنے والے ٹرک اور ایمبولینس کے تصادم میں ایک خاتون موقع پر ہی ہلاک ہوگئے جبکہ ایمبولینس میں موجود مریض سمیت دیگر 4افراد زخمی ہوگئے ہیں، جنہیں علاج کے لئے پتور کے سرکاری اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔

کاروار:اپنی نجی خواہشات کے لئے دوسروں پر الزام عائد نہ کریں : وزیر دیش پانڈے کا ہیبار پرپلٹ وار

اغی گروپ میں شامل یلاپور کے رکن اسمبلی شیورام ہیبار نےاپنے فیس بک پیج پر ضلع نگراں کار وزیر آر وی دیش پانڈے کے خلاف لگائے گئے الزاما ت کا وزیر دیش پانڈے نے بھی فیس بک پر  ہی  کچھ اس طرح جواب دیا ہے۔ ’ہیبار اپنے نجی اور انفرادی فیصلوں اور خواہشات کے لئے خود ذمہ دار ہیں ، اس ...

اڈپی ضلع پولیس نے کروائی گائیں چرانے کے معاملات میں ملوث157 افرادکی پریڈ۔ شہر بدرکرنے اور غنڈہ ایکٹ لاگو کرنے کی دی گئی وارننگ

اڈپی ضلع میں پولیس نے گائیں چرانے کے معاملات میں شامل رہنے والے افراد کو مختلف مقامات پر طلب کرکے ان کی اجتماعی پریڈ کروائی اور انہیں تنبیہ کرتے ہوئے کہا کہ آئندہ اس طرح کی وارداتوں میں اگر وہ ملوث ہونگے تو پھر ان کے خلاف شہر بدر کرنے یا پھر غنڈہ ایکٹ لاگو کرنے جیسے اقدامات کیے ...