منگلورو: سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا جائزہ لینے مرکزی ٹیم کی آمد

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 12th September 2018, 8:20 PM | ساحلی خبریں |

منگلورو:12/ستمبر(ایس اؤ نیوز) ساحلی پٹی پر  سیلاب سے متاثرہ   دکشن کنڑا، اُڈپی اور ہاسن اضلاع میں نقصانات کاجائزہ لینے کے لئے آج منگلورو سرکٹ ہاؤس میں مرکز کی آئی ایم سی ٹی ٹیم کی آمد ہوئی۔

ضلع نگراں کاروزیر یو ٹی قادر اور ضلع ڈپٹی کمشنر سشی کانت سینتھل سے ملاقات کرنےکے بعد ٹیم اُڈپی کے لئے روانہ ہوئی ۔ دکشن کنڑا ضلع میں اس مرتبہ سیلاب سے کافی نقصانات ہوئے ہیں۔ خاص کر جانی نقصان، جانوروں کی ہلاکت، گھر کے زمین بوس ہونے اور پہاڑوں کے کھسکنےسے نقصان ہواہے۔ زرعی زمینات  کی  بربادی دیکھتے ہوئے مکمل جائزہ لے کر مرکز کو رپورٹ دینے کے لئے ضلع انتظامیہ سے مرکزی ٹیم کامکمل تعاون دئیے جانےکی یوٹی قادر نے جانکاری دی۔

مرکز کی جائزہ ٹیم  مرکزی معاشی وزارت کے معاون سکریٹری بھرتیندو کمار سنگھ، دیہی ترقی وزارت کے معاون سکریٹری مانیک چندر پنڈت، رابطہ اور ہائی وے کے آفیسر سدانند بابو وغیرہ پر مشتمل ہے۔ اُڈپی کا جائزہ لینے کےبعد منگلورو لوٹ کر آدیپاڑی ، مولکی اور بنٹوال کے مولارپٹا، وٹلا ، پڈنور، کانییور ، گونڈیا، سبرہمنیاسےہوتےہوئے ہاسن جانےکی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

ساحلی علاقے میں ریت کا مسئلہ 15اکتوبر تک حل کیا جائے گا؛ وزیر اعلیٰ کمارا سوامی کا تیقن

وزیراعلیٰ کمارا سوامی نے ساحلی علاقے اڈپی اور منگلورو ضلع کے اراکین اسمبلی کے ساتھ ودھان سودا میں منعقدہ میٹنگ کے دوران تیقن دیا ہے کہ ریت نکالنے اور اس کی فراہمی کے متعلق مسائل کو 15اکتوبر حل کیا جائے گا۔

ریت کی سپلائی کا مستقل حل ڈھونڈ نکالنے بھٹکل رکن اسمبلی کی وزیراعلیٰ سے ملاقات؛ تعمیراتی کام ٹھپ پڑنے سے مزدوربھی پریشان

منگل کی شام بنگلورو کے ودھان سبھا ہال میں وزیرا علیٰ کمار سوامی کی صدارت میں منعقدہ میٹنگ میں بھٹکل کے رکن اسمبلی سنیل نائک نے اترکنڑا، اُڈپی اور دکشن کنڑا اضلاع میں ریت سپلائی شروع نہیں  کئے جانے سے پیش آنے والے مسائل کا تذکرہ کرتے ہوئے خوشگوار طورپر حل کرنے  کے لئے ریاستی ...

ہیلمٹ اور کاغذات نہ ہونے پربھٹکل پولس نے وصولا ایک ماہ میں 85 ہزار روپیہ جرمانہ؛ بائک اور کار کے بعد اب آئی آٹو کی شامت

شہر میں نئے آنے والے پولس سب انسپکٹر " کے کوسومادھر" جگہ جگہ گاڑیوں کی چیکنگ کرنے  میں لگے ہوئے ہیں اور ہیلمیٹ نہ پہننے ، گاڑی کے ضروری دستاویزات نہ ہونے، بغیر لائسنس گاڑی چلانے وغیرہ پر جرمانہ عائد کررہے ہیں۔  اب تک موٹر بائک اور کار وغیرہ کو روک کر چیکنگ کی جارہی تھی، مگر آج ...