سی بی آئی بنام سی بی ائی ، درخواست پرسماعت مکمل ،فیصلہ محفوظ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th December 2018, 9:58 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،6دسمبر(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)سپریم کورٹ نے سی بی آئی میں خصوصی ڈائریکٹر راکیش استھانہ کی تقرری کے خلاف درخواست پرسپریم کورٹ سماعت کرے گا۔سپریم کورٹ کے چیف جسٹس رنجن گوگوئی نے ایڈوکیٹ پرشانت بھوشن کو بتایا کہ سپریم کورٹ اس درخواست پر 11دسمبر کو سماعت کرے گا،درخواست پرسماعت چیمبر میں کی جائے گی۔ایڈوکیٹ پرشانت بھوشن نے درخواست پرجلد سماعت کی مانگ کی تھی۔ بتادیں کہ اکتوبر میں حکومت نے استھاناکو چھٹی پر بھیج دیاتھا۔اس کے کچھ گھنٹوں بعدسی بی آئی سربراہ آلوک ورما کو بھی چھٹی پربھیج دیا گیا۔استھانہ نے آلوک ورما پر رشوت خوری کاالزام لگایا تھا۔وہیں ورما نے بھی استھانہ پررشوت خوری کا الزام لگایا تھا۔بتادیں کہ ان کی تقرری کو گزشتہ سال بھی سپریم کورٹ میں چیلنج کیاگیاتھا،28نومبر، 2017کو سپریم کورٹ نے اس درخواست کو مسترد کردیاتھا۔ کہا گیا تھا کہ استھانہ سی بی آئی کے خصوصی ڈائریکٹربنے رہیں گے۔یہ درخواست این جی اوکامن کاج نے داخل کی تھی، جس کی طرف سے وکیل پرشانت بھوشن نے دلیل پیش کی تھی۔اس وقت وکیل پرشنانت بھوشن نے این جی او کی طرف سے بطور وکیل حاضرہوتے ہوئے کہاتھا کہ استھانہ کی تقرری غیر قانونی ہے کیونکہ انکم ٹیکس ڈپارٹمنٹ کے ذریعے ماری گئی چھاپے ماری کے دوران ان کانام سامنے آیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ڈائری میں اس کا ذکر کیا گیا ہے کہ استھانہ نے ایک کمپنی سے غیر قانونی فائدہ اٹھایا اور حالیہ دنوں میں سی بی آئی نے مبینہ کمپنی اور کچھ سرکاری ملازمین کے خلاف ایف آئی آر درج کی ہے۔اس پر اٹارنی جنرل نے درخواست کی مخالفت کی تھی کہ سی بی آئی کی ایف آئی آرمیں استھانا کا نام نہیں ہے اور ان کا کیریئر شاندار ہے۔وہیں سپریم کورٹ میں مرکزی حکومت نے کہا تھا کہ آئی پی ایس افسر راکیش استھانہ کی تقرری قانون کے مطابق تھی ۔

ایک نظر اس پر بھی

وزیراعظم مودی نے کابینہ سمیت سونپا صدرجمہوریہ کو استعفیٰ، 30 مئی کو دوبارہ حلف لینےکا امکان

لوک سبھا الیکشن کے نتائج کے بعد جمعہ کی شام نریندرمودی نے وزیراعظم عہدہ سے استعفیٰ دے دیا۔ ان کے ساتھ  ہی سبھی وزرا نے بھی صدرجمہوریہ کواپنا استعفیٰ سونپا۔ صدر جمہوریہ نےاستعفیٰ منظورکرتےہوئےسبھی سے نئی حکومت کی تشکیل تک کام کاج سنبھالنےکی اپیل کی، جسے وزیراعظم نےقبول ...

نوجوت سنگھ سدھوکی مشکلوں میں اضافہ، امریندر سنگھ نے کابینہ سے باہرکرنے کے لئے راہل گاندھی سے کیا مطالبہ

لوک سبھا الیکشن میں زبردست شکست کا سامنا کرنے والی کانگریس میں اب اندرونی انتشار کھل کرباہرآنے لگی ہے۔ پہلےسے الزام جھیل رہے نوجوت سنگھ سدھو کی مشکلوں میں اضافہ ہونےلگا ہے۔ اب نوجوت سنگھ کوکابینہ سےہٹانےکی قواعد نے زورپکڑلیا ہے۔

اعظم گڑھ میں ہارنے کے بعد نروہوا نے اکھلیش یادو پر کسا طنز، لکھا، آئے تو مودی ہی

بھوجپوری سپر اسٹار نروہوا (دنیش لال یادو) نے لوک سبھا انتخابات کے دوران سیاست میں ڈبیو کیا تھا،وہ بی جے پی کے ٹکٹ پر یوپی کی ہائی پروفائل سیٹ اعظم گڑھ سے انتخابی میدان میں اترے تھے لیکن اترپردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے سامنے نروہا ٹک نہیں پائے۔