سی بی آئی معاملہ :عدالت نے کہا،حکومت کوغیرجانب دارہوناہوگا،بغیرمشاورت کے کارروائی پرسوال، سی وی سی نے عدالت کو بتایا،غیر معمولی حالات کے لیے غیر معمولی اقدامات لازمی ہیں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th December 2018, 10:16 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،6دسمبر(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) جمعرات کو مرکزی نگرانی کمیشن نے سپریم کورٹ سے مطالبہ کیا کہ غیر معمولی صورتحال کے لئے غیر معمولی اقدامات لازمی ہیں۔ویجلنس کمیشن نے آلوک ورما کو مرکزی تفتیشی بیورو کے ڈائریکٹر کے حقوق سے محروم کرکے چھٹی پر بھیجنے کے مرکز کے فیصلے کے خلاف ان کی عرضی پر سماعت کے دوران یہ دلیل دی۔چیف جسٹس رنجن گوگوئی، جسٹس سنجے کشن کول اور جسٹس کے ایم جوزف کی بنچ کے سامنے سی وی سی کی جانب سے ایڈیشنل سالیسٹر جنرل تشار مہتا نے یہ دلیل دی۔انہوں نے عدالت کے فیصلوں اور سی بی آئی کو کام کرنے والے قوانین کا ذکر کیا اور کہا کہ (سی بی آئی پر)کمیشن کی نگرانی کے دائرے میں ایسے حیرت انگیز اور غیر معمولی حالات بھی آتے ہیں۔اس پر بنچ نے کہا کہ اٹارنی جنرل کے وینوگوپال نے انہیں بتایا تھا کہ حالات کے تحت یہ حالات پیدا ہوئے، یہ جولائی میں شروع ہواتھا،بنچ نے کہاکہ حکومت کی کارروائی کے پیچھے جذبات کوادارے کے مفادمیں ہوناچاہیے ۔عدالت نے کہاہے کہ ایسانہیں ہے کہ سی بی آئی ڈائریکٹر اور خصوصی ڈائریکٹر راکیش استھانہ کے درمیان جھگڑا راتوں رات سامنے آیا جس کی وجہ سے حکومت کوسلیکشن کمیٹی سے مشاورت کے بغیر ہی ڈائریکٹر کے حقوق واپس لینے کے لیے مجبورہوناپڑاہو۔انہوں نے کہاہے کہ حکومت کوغیرجانبدارہوناہوگا ۔

ایک نظر اس پر بھی

پروٹوکول توڑنے میں مودی نے عمران سے مقابلہ کیا، سفارتی ناکامی پر جواب دیں: کانگریس

کانگریس نے سعودی عرب کے شہزادہ (ولی عہد) محمد بن سلمان کا پروٹوکول سے الگ جاکرخوش آمدید کئے جانے کو لے کر بدھ کو وزیر اعظم نریندر مودی پر حملہ بولا اور الزام لگایا کہ پروٹوکول توڑنے میں مودی تو گویا پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کے ساتھ، جیسے مقابلہ کر رہے ہیں۔

پلوامہ حملہ: اب آندھرا پردیش کے وزیراعلیٰ چندرا بابو نائیڈو نے مودی حکومت کو گھیرا، کہا، قومی سلامتی خطرے میں ہے

پلوامہ دہشت گردانہ حملے کو لے کر پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کے بیان پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے آندھرا پردیش کے وزیراعلیٰ این چندرا بابو نائیڈو نے مرکز کی مودی حکومت پر نشانہ لگایا ہے۔

این سی ڈی آرسی نے آپریشن کے دوران لاپرواہی برتنے والے ڈاکٹر متاثرہ خاندان کو 2.7 لاکھ روپے ادا کرنے کا حکم دیا

قومی صارفین تنازعہ سراغ رساں کمیشن(این سی ڈی آرسی) نے آپریشن کے دوران لاپرواہی کی وجہ سے ایک خاتون کی موت کے معاملے میں تین ڈاکٹروں کو متاثر خاندان کو پر 2.7 لاکھ روپے ادا کرنے کا حکم دیا ہے۔