110 دیہاتوں کو کاویری کے پانی کی فر اہمی کے کام کی شروعات، میری حکومت قول وفعل کی پابند:سدرامیا

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 20th April 2017, 12:54 AM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو:19/اپریل(ایس او نیوز) برہت بنگلور مہانگر پالیکے کی حدود میں شامل 110 دیہاتوں کو کاویری کاپانی مہیا کرانے کیلئے 1886 کروڑ روپیوں کے منصوبے کا آج وزیر اعلیٰ سدرامیا نے آغاز کیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ کاویری پانچویں اسٹیج کے پراجکٹ کی تکمیل کے ساتھ شہر بنگلور کے مزید علاقوں کو پینے کے پانی کی سربراہی ممکن ہوسکے گی۔پانچ ہزار کروڑ روپیوں کی لاگت پر اس پراجکٹ کو مکمل کیا جارہاہے۔سدرامیا نے کہا کہ ان کی حکومت قول اور فعل کی پابند حکومت ہے۔ یہ وعدہ کیاگیاتھاکہ بی بی ایم پی کی حدود میں شامل ہونے والے نئے دیہاتوں کوکاویری کاپانی مہیا کرایا جائے گا۔ اس وعدہ کی تکمیل کرتے ہوئے پانی کی سربراہی کا کام آج سے شروع کیا جارہاہے۔ انہوں نے کہاکہ آنے والے دنوں میں ریاست کی ترقی کیلئے منصوبوں کوآگے بڑھانے کے ساتھ اور بھی عوام پرور فلاحی اسکیمیں لاگو کی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ جن 110 دیہاتوں کو آج سے پینے کے پانی کی فراہمی کے کام کا آغاز ہورہا ہے، جلد ہی ان دیہاتوں کیلئے مستقل ڈرینج نظام بھی مہیا کرایا جائے گا۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے وزیر برائے ترقیات بنگلور کے جے جارج نے کہا کہ ریاستی حکومت شہر کی ترقی کی پابندہے۔ آنے والے دنوں میں اور بھی بڑے بڑے منصوبوں کو عملی شکل دی جائے گی، اس کیلئے حکمت عملی وضع کرنے کا سلسلہ چل پڑا ہے۔ تقریب میں وزیر زراعت کرشنا بائرے گوڈا، رکن اسمبلی بائرتی بسوراج، میئر جی پدماوتی، راجیہ سبھا ممبر کے سی رام مورتی، اراکین اسمبلی اروند لمباولی، وشواناتھ، کارپوریٹر رادھما وینکٹیش، بی ڈی اے ممبر جگدیش ریڈی وغیرہ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک کی کانگریس حکومت پر نشانہ لگانے پر سدرامیا نے کیا پلٹ وار؛ کہا مودی میں وزیراعظم بننے کی صلاحیت ہی نہیں

کرناٹک کی کانگریس حکومت پر نشانہ سادھنے پر پلٹ وار کرتے ہوئے ریاست کے وزیر اعلیٰ سدرامیا نے وزیراعظم نریندر مودی کو جھوٹ کا پلندہ   قرار دیتے ہوئے    کہا  کہ نریندر مودی   میں وزیراعظم بننے کی صلاحیت ہی نہیں ہے

کانگریس لیڈر کی بی بی ایم پی دفتر کو آگ لگادینے کی دھمکی؛سی سی ٹی وی میں قیدہوا پورا منظر؛ سدارامیا نے دکھایا پارٹی سے باہر کا راستہ

کانگریس لیڈر نارائن سوامی کے  بی بی ایم پی دفتر میں گھس کر پٹرول چھڑکنے اوردفتر کو آگ لگادینے کی دھمکی کی وڈیو نیوز چینلوں میں نشر ہونے کے بعد فوری حرکت کرتے ہوئے سدرامیا نے نارائن سوامی کو   کانگریس پارٹی سے باہر کا راستہ دکھادیا ہے۔

این اے حارث نے فرزند کی حرکت پر اسمبلی میں کی معذرت خواہی

رکن اسمبلی این اے حارث کے فرزند نلپاڈ محمد کی طرف سے کل پیر کو ایک طالب العلم کو زودوکوب کرنے کا معاملہ سامنے آنے کے بعد آج این اے حارث نے ریاستی اسمبلی میں معذرت طلب کی اور کہا کہ ان کے بیٹے کی حرکت کی وجہ سے  اُنہیں جس طرح ندامت اُٹھانی پڑی، وہ وقت کسی باپ پر نہ آئے۔

بی جے پی صدر امت شاہ کا کرناٹک دورہ؛ کرناٹک سے کانگریس کو اُکھاڑ پھینکنے کا کیا دعویٰ

کرناٹک کے دورہ پر آئے  بی جے پی کے قومی صدر امت شاہ نے کانگریس پر حملہ بولتے ہوئے کہا کہ کرناٹک حکومت لوگوں کی اُمیدوں پر پورا اُترنے میں بری طرح ناکام ہوگئی ہے۔جس کی بنا پر  آئندہ انتخابات میں یہاں بی جے پی کو شاندار جیت حاصل ہوگی۔ وہ یہاں مینگلور کے قریب سولیا میں منگل ...

اسلام میں عورت کے حقوق ...............آز: گل افشاں تحسین

صدیوں سے انسانی سماج اور معاشرہ میں عورت کے مقام ومرتبہ کو لیکر گفتگو ہوتی آئی ہے ان کے حقوق کے نام پر بحثیں ہوتی آئی ہیں لیکن گذشتہ چند دہائیوں سے عورت کے حقوق کے نام پرمختلف تحریکیں اور تنظیمیں وجود میں آئی ہیں اور صنف نازک کے مقام ومرتبہ کی بحثوں نے سنجیدہ رخ اختیار کیا ...

نوئیڈا میں پولیس انکاؤنٹر میں انعامی بدمعاش ہلاک

ضلع کے تھانہ کاسنہ علاقے کے اومی کرن سیکٹر کے پاس گزشتہ رات پولیس اور بدمعاشوں کے درمیان انکاؤنٹر میں گولی لگنے سے ایک انعامی بدمعاش کی موت ہو گئی۔بدمعاشوں کی طرف سے چلائی گئی گولی سے ایک سپاہی بھی زخمی ہوا ہے۔

این اے حارث نے فرزند کی حرکت پر اسمبلی میں کی معذرت خواہی

رکن اسمبلی این اے حارث کے فرزند نلپاڈ محمد کی طرف سے کل پیر کو ایک طالب العلم کو زودوکوب کرنے کا معاملہ سامنے آنے کے بعد آج این اے حارث نے ریاستی اسمبلی میں معذرت طلب کی اور کہا کہ ان کے بیٹے کی حرکت کی وجہ سے  اُنہیں جس طرح ندامت اُٹھانی پڑی، وہ وقت کسی باپ پر نہ آئے۔

آر ٹی ای کے تحت اسکولوں میں داخلے کی کارروائی کا آغاز ۔ خواہمشند توجہ دیں

ڈی ڈی پی آئی کاروار کی طرف سے جاری اعلان کے مطابق تعلیمی سال 2018-19کے لئے امدادی اور نجی اسکولوں میں رائٹ ٹو ایجوکیشن (آر ٹی ای ) کے تحت بچوں کاداخلے کی آن لائن درخواستیں دینے کی کارروائی شروع ہوگئی ہے۔