لالویادو کے بیٹے تیج پرتاپ کے خلاف درخواست داخل،نتیش کمارکی طرح انتخابی حلف نامہ میں حقائق چھپانے کاالزام

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th September 2017, 10:17 PM | ملکی خبریں |

پٹنہ،13؍ستمبر(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)بی جے پی کے ایک لیڈر نے آر جے ڈی سربراہ لالو پرساد کے بڑے بیٹے تیج پرتاپ یادو کے خلاف 2015کے بہار اسمبلی انتخابات کے وقت پرچہ نامزدگی کے وقت دیے گئے حلف نامہ میں اورنگ آباد ضلع میں ان کے ایک پلاٹ کوجان بوجھ کرچھپانے کو لے کر پٹنہ عدالت میں ایک درخواست درج کی گئی ہے۔چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ اوم پرکاش کی عدالت میں بہار قانون ساز کونسل میں بی جے پی رکن سورج نندن پرساد نے کل درخواست دائرکی۔عدالت نے اس معاملے کی سماعت کے لیے 22ستمبر کو تاریخ طے کی ہے۔پرساد نے اپنی درخواست میں تیج پرتاپ پر ان کی خاندانی کمپنی لارا ڈسٹریبیوٹرس پرائیویٹ لمیٹڈ دواراورنگ آبادضلع میں 45.2 ڈیسیمل کے ایک پلاٹ پرموٹر شوروم کے بارے میں اپنے انتخابی حلف نامے میں ’’جان بوجھ کرحقائق چھپا کر‘‘عوامی نمائندگی قانون 1951کی دفعہ 125اے کا خلاف ورزی کرنے کا الزام لگایا اور عدالت میں پیشی کے لیے ان کے خلاف غیرضمانتی وارنٹ جاری کیے جانے کی درخواست کی۔واضح ہوکہ وزیراعلیٰ نتیش کمارپربھی اسی طرح کاالزام ہے ۔اورعدالت نے سخت تبصرہ کرتے ہوئے ان کی رکنیت منسوخ کرنے سے متعلق الیکشن کمیشن سے جواب طلب کیاہے ۔نائب وزیراعلیٰ اوربی جے پی کے سینئر لیڈر سشیل کمار مودی تیج پرتاپ کے اس پلاٹ کا ذکر لالو اور ان کے خاندان کے ارکان کی طرف ’’غلط‘‘طریقے سے حاصل کی جائیدادکاذکر پہلے بھی کر چکے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

گورنر جموں وکشمیر آئین کے تحت حاصل اختیارات کا استعمال کریں: بھیم سنگھ

نیشنل پنتھرس پارٹی کے سرپرست اعلیٰ ،سابق رکن اسمبلی اور اسٹیٹ لیگل ایڈ کمیٹی کے ایکزکیوٹیو چیرمین پروفیسر بھیم سنگھ نے جموں وکشمیر کے گورنر این این ووہرہ سے درخواست کی ہے کہ وہ جموں وکشمیر آئین کے تحت حاصل اختیارات کا استعمال کریں۔