روہنگیا معاملے میں ہندوستان کی شبیہ بگاڑنے کی کوشش:کرین رججو

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th September 2017, 9:56 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،13؍ستمبر(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)مرکزی وزیرمملکت برائے امور داخلہ کرین رججو نے روہنگیا معاملے میں ہندوستان کی’’کھلنایک‘‘جیسی تصویر بنانے کی کوششوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ملک کی شبیہ خراب کرنے کی سوچی سمجھی کوشش ہے۔رججو کا یہ بیان اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے صدرزیڈراد الحسین کی طرف سے ہندوستان کے روہنگیا پناہ گزینوں کو واپس بھیجنے پر تنقید کرنے کے2دن بعدآیاہے ۔رججو نے کہا کہ غیر قانونی طور پر ہندوستان میں داخل ہونے والے روہنگیاکے لوگوں کے معاملے میں ہندوستان کی تنقیدمیں ملک کی سلامتی کونظراندازکیاگیاہے۔انہوں نے ٹویٹ کیا کہ اس معاملے میں ہندوستان کوکھلنایک کہناہندوستان کی تصویر کو خراب کرنے کی منظم کوشش ہے۔ان تنقیدوں میں ہندوستان کی سلامتی کو نظر انداز کیا گیا ہے۔مرکزی حکومت میانمار میں نسل کشی کرنے کی وجہ سے روہنگیا مسلمانوں کوغیر قانونی تارکین وطن مانتے ہوئے ہندوستان سے بھیجنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔رججو نے پہلے ہی کہا ہے کہ روہنگیا کمیونٹی کے لوگ جو غیر قانونی طورپرہندوستان آئے ہیں انہیں واپس بھیجا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں موجود پناہ گزینوں کی تعداد دنیا میں سب سے زیادہ ہے۔حکومت نے گزشتہ 9اگست کو پارلیمنٹ میں بتایا تھا کہ موجودہ اعدادوشمار کے مطابق ہندوستان میں رہ رہے روہنگیا پناہ گزینوں کی تعداد 14ہزار سے زیادہ ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اے ایم یوریزرویشن: مولانا ولی رحمانی نے پیش کیا 50-50 کا فارمولہ، اولڈ بوائزنے ٹھکرائی تجویز

مسلم پرسنل لا بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانا محمد ولی رحمانی نے علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے متعلق  بڑا بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ اے ایم یوکو لے کرپولرائزیشن کی سیاست کی جارہی ہے۔ اس پرپرسنل لا بورڈ نے 50 فیصد مسلم اور 50 فیصد دلت ریزرویشن  کی تجویز پیش کردی۔

چنئی میں 12سالہ بچی کی 7 مہینوں تک عصمت دری ؛ 17 گرفتار؛ عدالت میں وکیلوں نے کیا ملزموں پر حملہ؛ کوئی نہیں لڑے گا کیس

چنئی میں 11سال کی بچی کی مبینہ طور سے عصمت دری کرنے کے الزام میں پولیس نے18  لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ ان لوگوں پر الزام ہے کہ انہوں نے ایک اپارٹمنٹ میں سات مہینوں تک بچی کا جنسی استحصال کیا۔ گرفتار ملزموں کو منگل کو کورٹ میں پیش کیا گیا جہاں مشتعل ہجوم نے ملزموں کی پٹائی کردی۔