بیلندور جھیل کے اطراف کی تمام صنعتیں بند کی جائیں، صفائی کا کام بھی کرنے نیشنل گرین ٹریبونل کی ہدایت

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 20th April 2017, 2:11 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو:19/اپریل(ایس او نیوز)نیشنل گرین ٹریبونل (این جی ٹی) نے بنگلورو کی بیلندور جھیل کے اطراف تمام صنعتوں کو بند کرنے کی ہدایت دی اور جھیل، اس کے اطراف میں فضلہ پھینکتے ہوئے پائے جانے پر 5 لاکھ روپے جرمانہ کی بھی سزا سنائی۔اس پیانل میں تمام طرح کی آلودگی سے جھیل کو پاک بنانے کے لئے ریاستی حکام کو ایک ماہ کا وقت دیا۔ این جی ٹی کے چیف جسٹس سواتنتر ا کمار کی زیر قیادت بنچ نے کہا کہ صنعتیں ریاستی پولیوشن کنٹرول بورڈ کی ہدایات کی خلاف ورزی کررہی ہیں۔ زہریلے فضلے کے سبب 17فروری کو اس جھیل میں آگ لگ گئی تھی۔ رپورٹس کے مطابق تقریباً 3گھنٹوں تک کسی نے بھی آگ کو نہیں دیکھا۔ بنچ نے کہا کہ بیلندور جھیل کے حدود میں قائم تمام صنعتیں فضلہ خارج کررہی ہیں۔ انہیں ہدایت دی گئی ہے کہ وہ فوری بند ہوجائیں۔اس نے کہا کہ اندرون مقررہ حد فضلے کے تجزیے اور مشترکہ ٹیم کے معائنہ تک کسی بھی صنعت کو چلانے کی اجازت نہیں رہے گی۔بنچ نے کہا کہ اس جھیل کے بفرزون میں کسی بھی قسم کے بلدیہ کے ٹھوس فضلے یا گھریلو فضلے کو نہیں ڈالاجانا چاہئے۔ اس کی خلاف ورزی کرتے ہوئے کوئی پائے گئے تو اس پر 5لاکھ روپے کا جرمانہ عائد کیا جائے گا۔ ٹریبونل نے کرناٹک حکومت سے خواہش کی کہ ریاستی پولیوشن کنٹرول بورڈ 'لیک ڈیولپمنٹ اتھارٹی اور بنگلورو ڈیولپمنٹ اتھارٹی فوری طور پر جھیل کی صفائی کا کام شروع کرتے ہوئے اندرون ایک ماہ رپورٹ پیش کرے۔ یہ جھیل بنگلورو کے 262جھیلوں اور تالابوں میں سب سے بڑی جھیل ہے جہاں پر شہر کا 40فیصد سیوریج ڈالا جاتا ہے۔ قبل ازیں مئی 2015اور اگست 2016میں میتھائن گیس پیدا ہونے کے سبب اس جھیل میں آگ لگ گئی تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

109؍ کروڑ کا دھوکہ، کلرک اور آڈٹ افسر ملزم

بروہت بنگلور مہانگر پالیکے(بی بی یم پی) کو جعلی بل ا ور دستاویزات منسلک کرکے 109؍ کروڑ روپیوں کا دھوکہ دینے پر انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ محکمہ کے فرسٹ ڈویژن کلرک ماینا اور محکمہ آڈٹ کے افسر ناگراج کارنت کے خلاف السور گیٹ پولیس تھانہ میں ایف آئی آر درج کی گئی ۔

کرناٹک کا دیرینہ خواب شرمندۂ تعبیر بنگلور شہر اسمارٹ سٹی کی فہرست میں شامل

بشمول راجدھانی بنگلور ملک کے 30؍شہروں کو مرکزی حکومت نے اسمارٹ سٹی کے طورپر ترقی دینے کے لئے منتخب کرلیاہے۔ مرکزی وزیر برائے شہری ترقیات وینکیا نائیڈونے آج اس کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ مرکزی اسمارٹ سٹی اسکیم کے تحت ان 30؍شہروں کو ترقی دی جائے گی۔

اب ڈیزل کی بھی ہوگی ہوم ڈیلیوری، بنگلور بنا پہلا شہر

بنگلور  ملک کا ایسا پہلا شہر بن گیا ہے جہاں پر لوگ اپنے گھر کے دروازے پر ڈیزل منگوا سکتے ہیں۔ٹھیک ویسے ہی جیسے آپ گھر بیٹھے اپنا پیزا، فوڈ، دودھ جیسی چیزیں آرڈر کرتے ہیں۔15جون کو مائی یٹرول پمپ نامی ایک اسٹارٹ اپ نے اس کی شروعات کی ہے۔یہ اسٹارٹ اپ ایک سال پرانی ہے