بلند شہر: قصورواروں کو سخت سزادی جانی چاہیے: مایاوتی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 5th December 2018, 2:08 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،04؍ دسمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کی سپریمو مایاوتی نے مغربی اتر پردیش کے ضلع بلندشہر میں گؤ رکشکوں کی بھیڑ کے تشدد میں ایک پولیس افسر سمیت دو افراد کے قتل کے لیے ریاست میں بھارتیہ جنتا پارٹی حکومت کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے قصورواروں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مایاوتی نے کہا کہ ہر طرح کی افراتفری کو تحفظ دینے ہی کا نتیجہ ہے کہ اتر پردیش میں اب قانون کیرکھوالے بھی قربان ہو رہے ہیں۔ بلندشہر پرتشدد واقعہ کا شکار ہونے والے ایک پولس افسر اور ایک نوجوان کی موت پر گہرے رنج اور تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بی جے پی اور ان کی حکومتوں کو بھیڑکے تشدد اور افراتفری کے راج کو ختم کرنے اور قانون کا راج قائم کرنے کی پوری ایمانداری سے کوشش کرنی چاہیے تاکہ ملک کے آئین اور جمہوریت کی بھيڑ سے حفاظت کی جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ بلندشہر کے افسوسناک واقعہ میں مرنے والوں کے خاندانوں کو صرف مناسب معاوضہ دینا ہی کافی نہیں ہو گا بلکہ اس تشدد کے لیے تمام قصورواروں کو سخت سے سخت سزا وقت پر دلانا بھی یقینی ہونا چاہیے۔

ایک نظر اس پر بھی

پروٹوکول توڑنے میں مودی نے عمران سے مقابلہ کیا، سفارتی ناکامی پر جواب دیں: کانگریس

کانگریس نے سعودی عرب کے شہزادہ (ولی عہد) محمد بن سلمان کا پروٹوکول سے الگ جاکرخوش آمدید کئے جانے کو لے کر بدھ کو وزیر اعظم نریندر مودی پر حملہ بولا اور الزام لگایا کہ پروٹوکول توڑنے میں مودی تو گویا پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کے ساتھ، جیسے مقابلہ کر رہے ہیں۔

پلوامہ حملہ: اب آندھرا پردیش کے وزیراعلیٰ چندرا بابو نائیڈو نے مودی حکومت کو گھیرا، کہا، قومی سلامتی خطرے میں ہے

پلوامہ دہشت گردانہ حملے کو لے کر پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کے بیان پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے آندھرا پردیش کے وزیراعلیٰ این چندرا بابو نائیڈو نے مرکز کی مودی حکومت پر نشانہ لگایا ہے۔

این سی ڈی آرسی نے آپریشن کے دوران لاپرواہی برتنے والے ڈاکٹر متاثرہ خاندان کو 2.7 لاکھ روپے ادا کرنے کا حکم دیا

قومی صارفین تنازعہ سراغ رساں کمیشن(این سی ڈی آرسی) نے آپریشن کے دوران لاپرواہی کی وجہ سے ایک خاتون کی موت کے معاملے میں تین ڈاکٹروں کو متاثر خاندان کو پر 2.7 لاکھ روپے ادا کرنے کا حکم دیا ہے۔