بی جے پی قیادت سے ناراض یڈیورپا کیرلا روانہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 30th November 2018, 11:42 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،30؍نومبر(ایس او نیوز) ریاستی حکومت کو کمزور کرنے اور آپریشن کمل کے ذریعے اسے گرانے کے متعلق متعدد کوششوں کے ناکام ہوجانے کے بعد بی جے پی کے حوصلے جہاں پہلے ہی پست ہوگئے تھے حالیہ ضمنی انتخابات میں پارٹی کی غیر متوقع ناکامی نے ان پست حوصلوں کو اور بھی توڑ دیا جس کی وجہ سے پارٹی کے مختلف حلقوں میں پارٹی کی ریاستی قیادت یڈیورپا کی بجائے کسی اور کو سونپنے کی قیاس آرائیوں نے بھی زور پکڑ لیا۔

اس دوران حالانکہ بی جے پی کی مرکزی قیادت نے یہ واضح کردیا کہ یڈیورپا کو ریاستی بی جے پی صدارت سے ہٹایا نہیں جائے گا لیکن اس کے باوجود پارٹی کا ایک بڑا حلقہ جو آر ایس ایس کا وفادار مانا جاتا ہے، اس نے ریاست کی قیادت کی تبدیلی پر شدت کے ساتھ زور دینے کا سلسلہ آگے بڑھایا اور یڈیورپا کی بجائے پارٹی کی ریاستی صدارت لنگایت فرقے سے ہی وابستہ سابق وزیراعلیٰ جگدیش شٹر یا پھر بی جے پی کے قومی تنظیمی سکریٹری اور آر ایس ایس سے قریبی روابط رکھنے والے سنتوش کو سونپنے کی باتیں ہورہی ہیں۔

اس دوران ضمنی انتخابات میں بی جے پی کو یہ امید تھی کہ بلاری اور جمکھنڈی پارلیمانی حلقوں میں پارٹی جیت ضرورہوگی، لیکن ان توقعات پر کانگریس اور جے ڈی ایس اتحاد نے جب پانی پھیر دیاتو اس کی چوٹ بی جے پی کو زبردست لگی ، ساتھ ہی یڈیورپا کو ذاتی طور پر دھچکا اس وقت لگا جب شیموگہ پارلیمانی حلقے سے ان کے فرزند بی وائی راگھویندرا کو جیت بہت معمولی فرق سے ملی ۔ 2014 کے لوک سبھا انتخابات میں یڈیورپانے شیموگہ کی سیٹ 4.5لاکھ ووٹوں سے جیتی تھی، جبکہ راگھویندرا کو اس بار کانگریس جے ڈی ایس اتحاد کے امیدوار مدھو بنگارپا نے لوہے کے چنے چبا دئے اور انہیں جیت صرف 50ہزار ووٹوں سے ملی۔ ان تمام حقائق کی بنیاد پر بی جے پی میں یڈیورپا کے خلاف ایک مضبوط محاذ تیار ہوچکا ہے۔ بتایاجاتاہے کہ پارٹی قیادت سے یڈیورپا اس قدر ناراض ہیں کہ منگلور میں آر ایس ایس کے ساتھ تبادلۂ خیال کے لئے پارٹی کے قومی صدر امت شاہ کی آمدپر یڈیورپا میٹنگ میں حاضر نہیں ہوئے، ان تمام حالات کو دیکھتے ہوئے یڈیورپا نے طے کیا ہے کہ ایک ہفتے سے زیادہ مدت کے لئے وہ ریاست سے باہر رہیں گے۔

کیرلا کے کوٹاکل میں نیچورو پتی کے لئے یڈیورپا آج روانہ ہوگئے۔ یڈیورپا کا شمار ریاست کے مصروف سیاست دانوں میں کیا جاتا ہے۔ اس قدر ہنگامہ آرائی کے باوجود ریاست میں رہ کر اپوزیشن لیڈر کا رول اداکرنے کی بجائے کیرلا روانہ ہونے یڈیورپا کے فیصلے نے کئی شکوک وشبہات پیدا کردئے ہیں ، اس کے علاوہ گزشتہ روز ریاستی وزیر اور کانگریس کے سب سے طاقتور سیاست دان ڈی کے شیوکمار سے یڈیورپا کی ملاقات نے بھی کئی قیادت آرائیوں کو ہوا دی ہے۔ کیرلا جانے یڈیورپاکے فیصلے سے ریاستی بی جے پی قیادت کا ایک بہت بڑا حلقہ بھی حیران ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار کائیگا جوہری توانی پلانٹ کا توسیعی منصوبہ۔ ماحولیات کے لئے فکر مند افراد کا احتجاج

ابھی دو تین دن ہی ہوئے ہیں جب کاروار میں واقع کائیگا جوہری توانائی کے مرکز میں موجود یونٹ نمبر 1میں مسلسل 941دنوں تک یورینیم کے بھاری پانی سے بجلی پیدا کرنے کا عالمی ریکارڈ قائم کیا گیا تھا۔ اس ریکارڈ سے دیسی ساخت کے اس پلانٹ کی بہترین اہلیت اور صلاحیت کا مظاہرہ ہواتھا۔

منشیات کے استعمال ،سڑکو ں پر تحفظ اور ماحولیاتی آلودگی سے متعلق بیداری کے لئے بزرگ سائیکل سوار کی مہم؛ بھٹکل میں ایک دن رکنے کے بعد گوا کے لئے روانگی

سڑکو ں پر تحفظ ، منشیات کے استعمال اور ماحولیاتی آلودگی سے متعلق عوام میں بیداری پیدا کرنے کے لئے اڑیسہ کے ایک بزرگ نے سائیکل پرسوارہو کر ملک کی 10 ریاستوں کا سفرکرنے کی مہم چلارکھی ہے۔ 

منگلورو: کانگریس ایم ایل اے کی آر ایس ایس لیڈروں کے ساتھ موجودگی ۔آپریشن کنول کا اشارہ تو نہیں!

ریاست کرناٹک کے مختلف علاقوں میں بی جے پی کی طرف سے آپریشن کنول کا راستہ اپنانے اور کانگریس و جنتادل ایس کی مخلوط حکومت کو گرانے کی سازشیں رچنے کی خبریں وقتاً فوقتاً سر اٹھاتی رہتی ہیں۔ اب تازہ ہوا منگلورو کے قریب کلاڈکا سے چلی ہے جہاں پر آر ایس ایس لیڈر کلاڈکا پربھاکر بھٹ کے ...

کاروار: کائیکا اٹامک پاور اسٹیشن نے مسلسل بجلی تیار کرنے کا ورلڈ ریکارڈ قائم کیا۔ وزیر اعظم مودی نے عملے کو دی مبارکباد

) کائیگا اٹامک پاوراسٹیشن(کے اے پی ایس)میں جوچار یونٹس بجلی تیار کررہے ہیں ان میں سے یونٹ نمبر1نے مسلسل 941 دنوں تک یورینیم کے بھاری پانی(ہیوی واٹر) سے بجلی تیار کرنے کا ورلڈ ریکارڈ بنایا ہے ، جس پر ملک کے وزیر اعظم نریندرمودی نے ہندوستان کے جوہری توانائی پروگرام پر کام کررہے ...

بھٹکل کے مرڈیشور میں دو لوگوں پر حملے کی پولس تھانہ میں دو الگ الگ شکایتیں

تعلقہ کے مرڈیشور میں کل جمعرات کو  دو لوگوں پر حملہ اور پھر جوابی حملہ کے تعلق سے آج مرڈیشور تھانہ میں دو الگ الگ شکایتیں درج کی گئی ہیں اور پولس نے دونوں پارٹیوں کی شکایت درج کرتے ہوئے چھان بین شروع کردی ہے۔

مرڈیشور میں غیر ضروری بات کو لے کر ماحول خراب کرنے کی کوشش؛ سری رام سینا لیڈر اسپتال میں داخل

تعلقہ کے مرڈیشور میں  سری رام سینا  ضلعی صدر مسلم نوجوانوں سے اُلجھنے کے بعد زخمی ہو کر سرکاری اسپتال میں داخل ہونے کی واردات پیش آئی ہے، جس کے بعد سوشیل میڈیا پر زخمی شخص  کے فوٹو کے ساتھ مسیجس پھیلاکر عوام میں انتشار پیدا کرنے کی کوشش ہورہی ہے۔

گوا کے افسران نے10لاکھ روپے مالیت کی مچھلیاں برباد کردیں۔کاروار کے مچھلی فروش کا الزام

ضلع شمالی کینرا کے ماہی گیروں کے لیڈر نے الزام لگایا ہے کہ گواحکومت انتقامی کارروائی کی راہ اپناتے ہوئے تمام قانونی تقاضے پورے کرنے کے بعدبھی کرناٹکا سے گوا میں لے جائی مچھلیوں کوتباہ کررہی ہے۔

منگلورومیں نوجوان کو اغوا کرکے تاوان وصول کرنے والے نکلے منشیات فروش۔ 2.89لاکھ روپے مالیت کی اشیاء ضبط

چند دن پہلے فالنیر علاقے سے شماق نامی نوجوان کو اغوا کرنے اور بعد میں 50ہزار روپے تاوان وصول کرکے چھوڑنے والے کے الزام میں گرفتار کیے گئے گوتم(۲۸سال) اور لوئی ویگس (۲۶سال)کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ وہ منشیات فروشی کے دھندے میں ملوث ہیں۔