بنگلورو میں ایک سال کے لئے فلیکس اور بینروں پر سخت پابندی، پابندی کی خلاف ورزی کرنے والوں پر ایک لاکھ روپیوں کا جرمانہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th August 2018, 10:13 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،7؍اگست(ایس او نیوز) برہت بنگلور مہانگر پالیکے نے شہر بھر میں فلیکس بینرس اور پوسٹروں پر پابندی کو انتہائی سختی سے لاگو کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پابندی کی شدت یہ ہوگی کہ مذہبی تقریبات اور شادیوں میں بھی فلیکس کا استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

حال ہی میں شہر کوفلیکس اور بینروں سے پاک کرنے کے متعلق ہائی کورٹ کی سخت ہدایت کے بعد بی بی ایم پی نے اس ہدایت کو کافی سنجیدگی سے لیتے ہوئے طے کیا ہے کہ شادی اور دیگر مذہبی تقریبات وغیرہ کے لئے بھی فلیکس اور بینر استعمال نہیں کئے جائیں گے۔اس کے لئے بی بی ایم پی نے عوامی بیداری مہم چلانے کا فیصلہ کیا ہے۔ عبادت گاہوں اور ہوٹلوں کے علاوہ دیگر مقامات پر ہونے والی میٹنگوں کی تشہیر کے لئے بھی فلیکس اور بینر استعمال میں نہیں آئیں گے۔ عوامی جلسوں کے لئے بینر کے استعمال کو مکمل طور پر ممنوع قرار دیا گیا ہے۔ نہ صرف شادی محلوں اور جلسہ گاہوں کے باہر بلکہ اندر بھی بیاک ڈراپ کے طور پر فلیکس کے استعمال کو ممنوع قرار دیا گیا ہے۔

بی بی ایم پی کمشنر منجوناتھ پرساد نے ہدایت دی ہے کہ ان ضوابط کی پامالی کرتے ہوئے انہوں نے بیاک ڈراپ کے لئے بھی فلیکس کا استعمال کیا گیا تو تقریب کا اہتمام کرنے والوں کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے۔ شہر کی خوبصورتی کو متاثر کرنے والے فلیکس اور بینروں پر روک لگانے کے مقصد سے بی بی ایم پی نے آج سے ایک سال کی مدت تک شہر میں کہیں بھی فلیکس یا بینر لگانے پر صدفیصد پابندی عائد کردی ہے۔آج میئر کی صدارت میں منعقدہ بی بی ایم پی اسپیشل کونسل میٹنگ میں یہ فیصلہ لیاگیا۔ اس فیصلے کی تعمیل کرتے ہوئے کمشنر کی طرف سے فوراً حکمنامہ بھی جاری کردیا گیا اور کہا گیا کہ ا س پابندی کے باوجود اگرشہر میں فیکس یا بینر نظر آیا تو بینر لگانے والے پر نہ صرف فوجداری مقدمہ درج کیا جائے گا بلکہ ایک لاکھ روپے کا جرمانہ بھی عائد کیا جائے گا۔ شہر میں فی الوقت جتنے بھی فلیکس اور بینر لگے ہوئے ہیں انہیں ہٹانے کے لئے پندرہ دنوں کی مہلت دی گئی ہے، اور کہا گیا ہے کہ پندرہ دنوں کے اندر ان فلیکس اور بینروں کو ہٹایا نہیں گیاتو جن کی تشہیر ان بینروں کے ذریعے ہورہی ہے ان کے خلا ف فوجداری مقدمہ درج کیا جائے گا۔اس دوران شادی اور مذہبی تقریبوں میں فلیکس اور بینروں کے استعمال پر پابندی عائد کئے جانے پر عوامی حلقوں میں اعتراض کیا جارہاہے،اور کہا جارہا ہے کہ تقریب گاہوں کے اندر فلیکس کے استعمال کی اجازت دی جانی چاہئے۔

ایک نظر اس پر بھی

چکبلاپور کے شڈلگٹہ میں کوہ نور ٹیپو تعلیم مائنارٹی ٹرسٹ کی جانب سے پلوامہ میں شہید فوجیوں کو خراج عقیدت؛ اہل خانہ کو پانچ کروڑ روپیہ معاوضہ دینے کا مطالبہ

22فروری بروزجمعہ کو کوہ نور ٹیپو تعلیم مائنارٹی ویلفئیر ٹرسٹ شڈلگٹہ کی زیر قیادت بعد نماز جمعہ ہزاروں مسلمانوں نے 14فروری کو کشمیر کے پلوامہ میں دہشت گردوں کا نشانہ بنے سی آر  پی ایف جوانوں کی شہادت کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے دہشت گردی کی سخت مذمت کی گئی ۔