برٹیش ڈپٹی ہائی کمشنر ڈومنیک میک الیسٹر کی بھٹکل آمد؛ علی پبلک اسکول سمیت دیگر اداروں کا دورہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 29th January 2019, 7:31 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل 29جنوری (ایس او نیوز) بنگلور سے برٹیش ڈپٹی ہائی کمشنر مسٹر ڈومنیک میک الیسٹر نے آج منگل کو بھٹکل کے تعلیمی اداروں کا دورہ کرتے ہوئے بھٹکل میں تعلیمی معیار کو بہتر کرنے اوریونائیٹیڈ کنگڈم  کی جانب سے یہاں کے طلبا کو ہرممکن تعاؤن فراہم کرنے کے تعلق سے اداروں کے ذمہ داران سے بات چیت کی انہوں نے کہا کہ تعلیمی معیار کو بڑھانے کے لئے وہ لندن سے خصوصی ماہرین کی ٹیم کو بھٹکل بلاکر یہاں کے ٹیچروں کو ٹریننگ فراہم کرواسکتے ہیں۔

ڈومنیک میک الیسٹرکے تعلق سے بتایا گیا ہے کہ وہ ہندوستان اور یونائیٹیڈ کنگڈم کے درمیان تعلقات کو مضبوط اور استوار کرنے اور دونوں حکومتوں اور عوام کے آپسی تعاون سے خوشحالی ، کامیابی اور ترقیاتی کاموں کو فروغ دینے کے لئے کوشاں ہیں۔برٹیش شہری ڈومنیک اس سے قبل 25 سالوں تک یوگوسلاویہ، مصر، سعودی عربیہ، تائیوان، وینزویلااور جنوبی کوریا میں دولت مشترکہ دفتر میں ڈپلومیٹ کے طور پر اپنی خدمات انجام دے چکے ہیں۔اب وہ بنگلور میں برٹیش ڈپٹی ہائی کمشنر کے عہدہ پر فائز ہیں۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق ڈومنیک بنگلور سے ہبلی کسی پروگرام میں شریک ہونے پہنچے تھے، انہوں نے کل پیر کو ہبلی اور سرسی میں کئی تعلیمی اداروں کا دورہ کیا اور وہاں کی تعلیمی صورتحال کا جائرہ لینے کے بعد رات کو مرڈیشورپہنچ کر آر این ایس ریسارٹ میں قیام کیا۔آج صبح وہ بھٹکل میں علی پبلک اسکول کا دورہ کرتے ہوئے بچوں سے ملاقات کی۔ اسکول میں ان کی آمد پر خصوصی پروگرام ترتیب دیا گیا اور ڈومنیک کو پورے اہتمام کے ساتھ اسکواڈ فراہم کرتے ہوئے بچوں نے استقبال کیا۔ اسکول کے روح رواں مولانا الیاس جاکٹی ندوی نے اس موقع پر اسکول کا تعارف پیش کیا، جس کے بعد مسٹر ڈومنیک نے اسکولی بچوں سے مخاطب ہوتے ہوئے بچوں کو اعلیٰ سے اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کا مشورہ دیا۔ اس موقع پر بچوں نے بھی انگریزی میں مسٹر ڈومنیک سے سوالات کئے اور  اُن سے رائے اور تجاویز طلب کیں۔

مسٹر ڈومنیک نے بعد میں مولانا الیاس جاکٹی ندوی سے اسکول میں بین المدارس پروگراموں کو منعقد کروانے سمیت تعلیمی معیار بڑھانے کے تعلق سے گفتگو کی اور کہا کہ اس تعلق سے برٹیش حکومت کی جانب سے وہ ہرممکن تعاون فراہم کرسکتے ہیں، انہوں نے کہا کہ تعلیمی معیار بڑھانے کے لئے یہاں کے ٹیچروں کو ٹریننگ دی جاسکتی ہے اس کے لئے ہم لندن سے ماہر ٹیچروں کو یہاں بلواسکتے ہیں۔اسی طرح بچوں کی قابلیت اور اُن کی ذہانت کو آزمانے کے لئے اُنہیں لندن لے جانے میں تعاون کرسکتے ہیں۔ مسٹر ڈومنیک یہاں سے مولانا ابوالحسن ندوی اسلامک اکیڈمی پہنچ کر قران میوزیم کا معائنہ کیا، انہوں نے اسلامیات کے کتابوں کا بھی جائزہ لیا، اس موقع پر مولانا الیاس جاکٹی ندوی نے اسلامیات کے کتابوں کو یونائیٹید کنگڈم کے تعلیمی اداروں کے نصاب میں داخل کئے جانے کے بارے میں بات کی اور اس تعلق سے مولانا نے اُنہیں ایک درخواست نامہ بھی دیا۔ مسٹر ڈومنیک نے بھٹکل میں ہونے والے غیر مسلموں کے ساتھ گیٹ ٹو گیدر پروگراموں کے انعقاد پر خوشی کا اظہار کیااور اس طرح کے پروگراموں کو بار بار منعقد کرائے جانے کا مشورہ دیا۔

اکیڈمی کے بعد مسٹر ڈومنیک نے ساحلی کرناٹکا کے سب سے بڑے دینی درسگاہ جامعہ اسلامیہ کا دورہ کیا اور یہاں کی تعلیمی صورتحال کا جائزہ لیا، جامعہ میں ان کی آمد پر فوری طور پر جلسہ کا اہتمام کیا گیا اور مہمان کے سامنے جامعہ کا مکمل تعارف پیش کیا گیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مولانا الیاس جاکٹی ندوی نے مسٹر ڈومنیک میک السٹر کو اسلام قبول کرنے کی  دعوت دی اور بتایا کہ آج جس طرح ہم یہاں خوشی خوشی ساتھ ساتھ بیٹھ کر باتیں کررہے ہیں، اسلام قبول کرنے کی صورت میں کل جنت میں بھی ہم ساتھ ساتھ ہوں گے۔مولانا نے اُنہیں اسلام کا مکمل تعارف پیش کرنے کے ساتھ ساتھ اسلامی  لٹریچرس بھی پیش کئے۔

 ڈومنیک میک السٹر نے پھر انجمن انجینرنگ کالج کا دورہ کیا ، جہاں انجمن کے جنرل سکریٹری صدیق اسماعیل سمیت سکریٹری محمد محسن شاہ بندری نے انجمن کا تعارف پیش کرتے ہوئے انجینرنگ کالج کے تعلق سے تفصیل سے گفتگو کی۔ مسٹر ڈومنیک نے انجمن کے ذمہ داران سے بھی تعلیمی معیار کو بڑھانے کے تعلق سے برٹیش حکومت کی جانب سے ہرممکن تعاؤن فراہم کئے جانے کا یقین دلایا، اسی طرح انجمن انجینرنگ کالج سے فارغ ہونے والے طلبا کے لئے برٹیش کمپنیوں میں ملازمت کے مواقع فراہم کرنے کے تعلق سے بھی تعاؤن دینے کا یقین دلایا۔

آخر میں اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے مسٹر ڈومنیک نے بتایا کہ بھٹکل کے تعلق سے اُن کے اندر کافی غلط فمہیاں تھی، مگر یہاں آنے اور یہاں کے لوگوں کے سے ملنے کے بعد وہ غلط فہمیاں دور ہوگئیں، ڈومنیک نے بتایا کہ بھٹکل اور یہاں کے لوگ بے حد ملنسار اور اچھے لوگ ہیں، یہاں ترقیاتی کام کرنے کے بھی کافی اچھے مواقع ہیں انہوں نے لیڈران کو مشورہ دیا کہ وہ بھٹکل کی صحیح تصویر لوگوں کے سامنے پیش کرنے اور لوگوں کے اندر پھیلی غلط فہمیوں کو دور کرنے کی کوشش کریں۔ مولانا الیاس جاکٹی ندوی کی رہائش گھر پر دوپہر کی ضیافت کے بعد مسٹر ڈومنیک منی پال کے لئے روانہ ہوئے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُترکنڑا سے چھٹی مرتبہ جیت درج کرنے والے اننت کمار ہیگڑے کی جیت کا فرق ریاست میں سب سے زیادہ؛ اسنوٹیکر کو سب سے زیادہ ووٹ بھٹکل میں حاصل ہوئے

پارلیمانی انتخابات میں شمالی کینرا کے بی جے پی امیدوار اننت کمار ہیگڈے نے پوری ریاست کرناٹک میں سب سے زیادہ ووٹوں سے کامیابی حاصل کی ہے۔ انہوں نے 479649 ووٹوں کی اکثریت سے کانگریس  جے ڈی ایس مشترکہ اُمیدور  آنند اسنوٹیکر  کو شکست دی ۔

ریاست میں کبھی ہار کا منھ نہ دیکھنے والے سیاسی لیڈروں کی ذلت بھری شکست

ریاست کرناٹکا میں انتخابی میدان میں کبھی ہار کا منھ نہ دیکھنے والے چند نامورسیاسی لیڈران جیسے ملیکا ارجن کھرگے، دیوے گوڈا، ویرپا موئیلی اورکے ایچ منی اَپا وغیرہ کو اس مرتبہ پارلیمانی انتخاب میں انتہائی ذلت آمیز شکست سے دوچار ہونا پڑا ہے۔ 

منگلورو:کلاس میں اسکارف پہننے پر سینٹ ایگنیس کالج نے طالبہ کو دیا ٹرانسفر سرٹفکیٹ۔طالبہ نے ظاہر کیاہائی کورٹ سے رجوع ہونے اور احتجاجی مظاہرے کاارادہ

کلاس روم میں اسکارف پہن کر حاضر رہنے کی پاداش میں منگلورومیں واقع سینٹ ایگنیس کالج نے پی یو سی سال دوم کی طالبہ فاطمہ فضیلا کو ٹرانسفر سرٹفکیٹ دیتے ہوئے کالج سے باہر کا راستہ دکھا دیا ہے۔

بھٹکل میں رمضان باکڑہ کی نیلامی؛ 40 باکڑوں کے لئے میونسپالٹی کو 1126 درخواستیں

رمضان کے آخری عشرہ کے لئے بھٹکل  میں لگنے والے رمضان باکڑہ کی آج میونسپالٹی کی جانب سے  نیلامی کی گئی۔ بتایا گیاہے کہ 40 باکڑوں کی نیلامی کے لئے  میونسپالٹی کے جملہ 1126 درخواست فارمس فروخت ہوئے تھے۔ 

مسلمانوں کے خلاف اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کی بھاری اکثریت کے ساتھ جیت

مسلمانوں کے خلاف ہمیشہ اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کو اس مرتبہ لوک سبھا انتخابات میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اترکنڑا لوک سبھا حلقے کے بی جے پی اُمیدوار اننت کمار ہیگڈے جنہوں نے کہا تھا کہ جب تک اسلام رہے گا دہشت گردی رہے گی،اسی طرح انہوں نے  دستور کی ...

ایچ کے پاٹل نے راہل گاندھی کو بھیجا استعفیٰ

ریاست میں کانگریس کے تشہیری مہم کمیٹی کے صدر ایچ کے پاٹل نے لوک سبھا انتخابات میں ریاست میں پارٹی کی شکست کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفی دینے کی پیشکش کی ہے۔