بھٹکل ریلوے ٹریک کے باہر پڑی ہوئی لاش کی شناخت ہوگئی؛ رشتہ داروں کے حوالے

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 21st April 2017, 8:58 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 21/ اپریل (ایس او نیوز) کل جمعرات صبح موگلی ہونڈا  ریلوے ٹریک سے لگے ہوئے ایک برساتی نالے میں ایک نامعلوم شخص کی لاش بازیافت ہوئی تھی، جس کے بدن کے تکڑے تکڑے ہوچکے تھے ، اُس کی شناخت آج ہوگئی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ یہ شخص یلوڈی کووئور کا رہنے والا منجیا گویل نائک ہے جس کی عمر 68 سال ہے۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ یہ اکثر شراب پی کر نشہ میں دھت رہتا تھا، اس بناء پر سمجھا جارہا ہے کہ غالباً بدھ کی رات کو بھی یہ شخص شراب کے نشے میں دھت ہوکر ریلوے ٹریک کے قریب سے گذر رہا ہوگا کہ اچانک تیز رفتار ٹرین کی زد میں آگیا اور تکڑے تکڑے ہوکر قریبی نالے میں جاگرا۔

بھٹکل سرکاری اسپتال میں لاش کا پوسٹ مارٹم کرنے کے بعد بھٹکل ٹائون پولس نے لاش کو گھروالوں کے حوالے کردیا ہے۔

پی ایس آئی کوڈگونٹی  مزید چھان بین کررہے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی اور سنگھ پریوار کے احتجاج اور تشدد کے چلتے بالاخر کرناٹک سرکار کا ہوناور کے پریش میستا کی موت کا معاملہ سی بی آئی کے حوالے کرنے کا اعلان

ریاست میں کافی بحث کا موضوع بنے ہوناور کے پریش میستا کی موت کی گتھی سلجھانے کے لئے بالاخر اب ریاستی حکومت نے   اس  معاملے کو سی بی آئی کے ذریعہ تحقیق کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اخبارنویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرداخلہ رام لنگا ریڈی  نے کہا کہ سچائی کو منظر عام پر لانے کے لئے ...

ضلع اُتر کنڑا میں وہاٹس ایپ پر اشتعال انگیزپیغامات پوسٹ کرنے پر 28 معاملات درج

ہوناور میں ایک نوجوان کی ہلاکت کے بعدبی جے پی اور سنگھ پریوار کی حمایت میں  اور بالخصوص مسلمانوں کے خلاف سوشیل میڈیا پر اشتعال انگیز پیغامات روانہ کئے جارہے تھے، ساتھ ساتھ سوشیل میڈیا کے ذریعے مختلف علاقوں میں بند منائے جانے اور احتجاج کے پیغامات پھیلائے جارہے تھے، جس پر ...

ہوناور پریش میستا کی موت کا معاملہ؛ وہاٹس ایپ پراشتعال انگیز افواہیں پھیلانے کے الزام میں ہائی اسکول ٹیچر گرفتار

ہوناور فساد کے پس منظر میں سوشیل میڈیا اور خاص کر وہاٹس ایپ پر افواہیں پھیلا کر ماحول خراب کرنے کے الزام میں کاروار کے ایک ہائی اسکول ٹیچر کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

پریش میستا کے پوسٹ مارٹم کی فائنل رپورٹ ابھی نہیں ملی ۔ دیشپانڈے

ہوناور میں فرقہ وارانہ فسادات کا سلسلہ شروع ہونے کے بعد پریش میستا نامی نوجوان کی جو لاش دستیاب ہوئی تھی اور اس سے پورے ضلع میں نفرت کی آگ بھڑکائی گئی تھی، اس تعلق سے ضلع انچارج وزیر دیشپانڈے نے کہا ہے کہ پریش کے پوسٹ مارٹم کی قطعی رپورٹ ابھی نہیں آئی ہے۔