مکھوٹا کمپنیوں کے معاملے میں فلمی دنیا، بلڈر اور بروکر بھی جانچ کے گھیرے میں

Source: S.O. News Service | Published on 13th August 2017, 10:06 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی13اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)مارکیٹ ریگولیٹری سیبی نے کالا دھن معاملے میں کارروائی تیز کر دی ہے۔ اس معاملے میں بلڈر، بروکر اور فلمی علاقے سے منسلک فیکٹریاں بھی جانچ کے گھیرے میں آئی ہیں۔ غیر قانونی دولت کو جائز بنانے میں مختلف اکائیوں کے کردار کا پتہ لگانے کے لیے بہت سی تفتیشی ایجنسیاں سینکڑوں مشتبہ ماسک کمپنیوں کی جانچ میں مصروف ہیں۔ ریگولیٹری اور سرکاری ذرائع نے بتایاکہ ہندوستانی سیکورٹیز اور تبادلہ بورڈ (سیبی) نے ان331 درج یونٹس کووجہ بتاؤنوٹس دیاہے جن پر مکھوٹا کمپنیوں کے طور پر دولت کے لین دین کا کام کرنے کا شبہ ہے۔ اس کے علاوہ100 غیردرج یونٹس کے خلاف بھی کارروائی شروع کی گئی ہے جن پر غیر قانونی دھن کو سفید بنانے کے لئے حصص میں کام کرنے کا شبہ ہے۔سرمایہ مارکیٹ ریگولیٹری سیبی نے مشتبہ ماسک اسٹاک میں کاروبار پر پابندی کا فیصلہ کیا لیکن کچھ کمپنیوں نے اس معاملے کو سیکورٹیز اور ایس اے ٹی میں چیلنج کیا۔ ٹریبونل نے ان کمپنیوں کے حق میں فیصلہ سنایا اور کیس میں تحقیقات آگے بڑھانے کی اجازت دے دی تاکہ یہ پتہ لگایا جا سکے کہ انہوں نے سیکورٹیز قوانین کی خلاف ورزی کی ہے یا نہیں۔ ان میں سے بہت سی کمپنیاں عوامی طور پر بیان جاری کرتے ہوئے کسی قسم کی خرابی سے انکار کیا اور زور دے کر کہا کہ وہ ماسک کمپنیاں نہیں ہیں۔ایک سینئر افسر نے کہا کہ ماسک کمپنیوں کے زمرے میں رکھے جانے سے غلط فہمی بنی ہے کہ کچھ بڑی کمپنیاں بھی منی لانڈرنگ اور غیر قانونی دولت کو جائز بنانے کے لیے پلیٹ فارم فراہم کراکر ماسک کمپنی کے طور پر کام کر سکتی ہیں۔ ایک اور اہلکار نے کہا کہ بہت سے چھوٹے بروکر مشتبہ ماسک کمپنیوں کی فہرست میں ہے۔ ان کے بڑے بروکرز گروپ سے وابستگی کی تحقیقات سیبی کر رہا ہے۔ اس نے کہا کہ کچھ بروکرز کے کردار جانچ کے گھیرے میں آنے سے اسٹاک مارکیٹ میں افراتفری جیسی صورتحال ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

مالیگائوں دھماکے کا ملزم کرنل پروہت کو ملی سپریم کورٹ سے ضمانت

مالیگائوں بم دھماکے کے کیس میں ملزم کرنل پرساد پروہت  کو سپریم کورٹ سے بالاخر ضمانت مل گئی ہے.وہ  9 سال سے  جیل میں بند تھا.اس سے پہلے 17 اگست کو معاملے کی سنوائی پوری کرتے ہوئے سپریم کورٹ نے اپنا فیصلہ محفوظ رکھا تھا

بہار میں سیلاب سے صورتحال ہنوز تشویشناک،اب تک 253 افراد کی موت ، 1.27 کروڑ افراد متاثر

بہار کے 18 اضلاع میں آنے والے شدید سیلاب میں ریلیف اور ریسکیو آپریشن جنگی سطح پر جاری رہنے کے درمیان اب تک اس میں 253 لوگوں کی موت ہو چکی ہے وہیں اس سے کل ایک کروڑ 27 لاکھ افراد متاثر ہوئے ہیں۔