ایس سی ایس ٹی ایکٹ معاملے میں بی جے پی سیاست کر رہی ہے:مایا وتی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th September 2018, 10:55 PM | ملکی خبریں |

لکھنؤ،07؍ ستمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) بہوجن سماج پارٹی کی قومی صدر مایا وتی نے ایس سی ایس ٹی ایکٹ کے معاملے میں 6ستمبر کو اعلیٰ طبقات کے ذریعہ بھارت بند کو بی جے پی سرکار کی سازش بتایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس میں بی جے پی اور آر ایس ایس والے گھناونی سیاست کر رہے ہیں۔ بی جے پی کی اقتدار والی ریاست میں اس کی مخالفت زیادہ ہو رہی ہے ۔ بی ایس پی سپریمو نے جمعہ کو پریس خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں بی جے پی کی اکثریت کم ہو گئی ہے ۔ اس لئے وہ اس ایکٹ کے ساتھ کھلواڑ کرنے پر آمادہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن سے پہلے بی جے پی ذات کو تقسیم کرنا چاہتی ہے۔ ایس سی ایس ٹی ایکٹ میں میں ترمیم کی مخالفت صرف بی جے پی اقتدار والی ریاستوں میں کرایا گیا ۔ اب الیکشن نزدیک آتا دیکھ کر بی جے پی ذات پر مبنی کشیدگی پھیلانا چاہتی ہے ۔ مایا وتی نے کہا کہ ان کی پارٹی صرف دلتوں کی پارٹی نہیں ہے ۔ بی ایس پی دلت ،پسماندہ اور اعلیٰ طبقات اور اقلیتوں کی پارٹی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان کی پارٹی تمام طبقات کے بھلائی کے لئے کوشاں ہے ۔ مایا وتی نے کہا کہ ان کی سرکار میں ہی پہلی بار اعلیٰ طبقات کو اقتصادی طور پر ریزرویشن دینے کا مطالبہ اٹھایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ میری سرکارمیں کسی کے ساتھ نا انصافی نہیں ہوئی اور نہ ہی ایس سی ایس ٹی ایکٹ کا غلط استعمال ہوا۔

ایک نظر اس پر بھی

جموں و کشمیر میں مودی سرکارکی پالیسی ناکام ہوئی : محبوبہ مفتی

پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) صدر اور سابقہ وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیان میں جموں وکشمیر پولیس کے تین ایس پی اووز کو اغوا کے بعد گولی مار کر ہلاک کرنے کے واقعہ پر اپنا ردعمل میں کہا ہے کہ وادی کشمیر میں مرکزی حکومت کی طاقت پر مبنی پالیسی ناکام ثابت ہوئی ...

کشمیرکے بدترحالات کے لیے مودی سرکارذمہ دار:کانگریس

کانگریس نے کہاہے کہ پچھلے 24گھنٹے کے دوران جموں کشمیر میں تین پولیس جوانوں کے اغواکے بعد قتل اور دہشت گردوں کے خوف سے دس پولیس جوانوں کے مبینہ استعفیٰ کے واقعات تشویش ناک ہیں اور ریاست کے ان حالات کے لیے مودی حکومت ذمہ دارہے۔