’بھگواآتنگ واد ‘پرسیاست گرم

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th April 2018, 2:59 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 17؍اپریل(ایس او نیوز؍ایجنسی)حیدرآباد کے مکہ مسجد بلاسٹ معاملے میں آج این آئی اے کی خصوصی عدالت نے اپنا فیصلہ سنادیاہے۔عدالت نے ثبوتوں کے ناکافی میں سبھی ملزموں کوبری کردیاہے۔بری کئے جانے والوں میں سوامی اسیمانند بھی ہیں۔اسلئے مکہ مسجدبلاسٹ میں ملزموں کے بری ہونے کے بعد بھگوادہشت گردی پرسیاست گرماگئی ہے۔بی جے پی نے پریس کانفرنس کرکے اس معاملے پرکانگریس کومعافی مانگنے کوکہاہے۔بی جے پی ترجمان سمبت پاترا نے کہاکہ آج کانگریس کے چہرے سے مکھوٹااترگیاہے۔کانگریس جس طرح سے ہندوآتنگواد کے نام ہندودھرم کوبدنام کرنے کی سیاست کرنے کا کام کرہی تھی ، اس کا آج پردہ فاش ہوگیاہے۔انہو ں نے کہاکہ اب ہم کہہ سکتے ہیں کہ ہندو کمیونٹی کے خلاف ایک سازش تھی۔میں پی ایم مودی سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ سابق وزیر داخلہ پی چدمبرم اور راہل گاندھی کے خلاف کیس درج کرائیں۔بہرکیف مکہ مسجد بلاسٹ میں این آئی اے کی خصوصی عدالت نے 11سال بعد آج یعنی پیر کو فیصلہ سنایا۔کورٹ نے اسیمانند سمیت معاملے کے تما م ملزمین کو بری کر دیا۔

ایک نظر اس پر بھی

جے پی سی سے جانچ کرانے کا راستہ ا بھی کھلا ہے، عام آدمی پارٹی نے کہا،عوام کی عدالت اورپارلیمنٹ میں جواب دیناہوگا،بدعنوانی کے الزام پرقائم

آپ کے راجیہ سبھا رکن سنجے سنگھ نے کہا ہے کہ رافیل معاملے میں جمعہ کو آئے سپریم کورٹ کے فیصلے کے باوجود متحدہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی) سے اس معاملے کی جانچ پڑتال کرنے کا اراستہ اب بھی کھلا ہے۔

رافیل پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ، راہل گاندھی معافی مانگیں: بی جے پی

فرانس سے 36 لڑاکا طیارے کی خریداری کے معاملے میں بدعنوانی کے الزامات پر سپریم کورٹ کی کلین چٹ ملنے کے بعد کانگریس پر نشانہ لگاتے ہوئے بی جے پی نے جمعہ کو کہا کہ کانگریس پارٹی اور اس کے چیئرمین راہل گاندھی ملک کو گمراہ کرنے کیلئے معافی مانگیں۔