بابری مسجد کی شہادت کیلئے بی جے پی ذمہ دار: اگرپا

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 21st April 2017, 2:03 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو:20/اپریل(ایس او نیوز) سینئر کانگریس لیڈر اور رکن کونسل وی ایس اگرپا نے بی جے پی کی قومی قیادت بشمول وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی کے قومی صدر امیت شا سے مطالبہ کیا کہ بابری مسجد کی شہادت کیلئے وہ ملک کے عوام سے معافی مانگیں۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ عدالت میں اب یہ بات ثابت ہوچکی ہے کہ بابری مسجد بی جے پی کی ایک منظم سازش کے تحت گرادی گئی۔ بی جے پی کے 13قومی قائدین کے خلاف مقدمہ چلانے کی عدالت عظمیٰ نے اجازت دیتے ہوئے تیزی سے اس کارروائی کو مکمل کرنے کا حکم سنایا ہے۔ عدالت کے اس فیصلے کی روشنی میں بی جے پی کو یہ واضح کردینا چاہئے کہ وہ اس سازش کا حصہ کیوں بنی اور ملک کے عوام کے تئیں اپنی ذمہ داری ادا کرتے ہوئے اپنی کوتاہی کیلئے معذرت خواہی کرے۔انہوں نے کہاکہ ملک کے قانون اور آئین پر اگر بی جے پی کو بھروسہ ہے تو اسے فوراً ملک کے عوام سے معافی مانگنی چاہئے۔ انہوں نے کہاکہ سپریم کورٹ کی طرف سے یہ فیصلہ خوش آئند ہے کہ اس کیس کی سماعت کو دو سال کے اندر مکمل کیا جائے۔عدالت کے اس فیصلے نے عوام کے اس یقین کو پختہ کردیا ہے کہ اس ملک میں اب بھی انصاف کی جڑیں مضبوط ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ملک کے عوام سے معافی مانگنے کا مطالبہ ان کا ذاتی ہے۔ انہیں یقین ہے کہ کانگریس پارٹی کا موقف بھی یہی ہوگا۔انہوں نے کہاکہ بابری مسجد کی شہادت کیلئے صرف اڈوانی یا 13ملزم نہیں بلکہ پوری بی جے پی ذمہ دار ہے۔اس کے علاوہ سنگھ پریوار اور وشواہندو پریشد کو بھی اس کیلئے ذمہ دار ٹھہرایا جانا چاہئے۔ بابری مسجد کے تنازعہ کو باہمی بات چیت یا عدالت کے ذریعہ سلجھانے کی بجائے متنازعہ ڈھانچے کو گراکر بی جے پی نے ملک کے امن وامان کو تار تار کردیا اور دو فرقوں کے درمیان اعتماد کی فضا کو مکدر کردیا۔ اس سنگین جرم کیلئے بی جے پی کو جس قدر بھی سزا دی جائے کم ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو کا معاملہ؛ایم پی شوبھا کرندلاجے نے پولس سے کہا؛ بی جے پی کارکنان کی گرفتاری بند کی جائے؛ لیڈران کو گرفتار کرنے کی صورت میں دی دھمکی

بی جے پی لیڈر شوبھا کرندلاجے نے آج منگل کو بھٹکل ٹائون پولس تھانہ پہنچ کر بھٹکل ڈی وائی ایس پی سے نہایت ترش لہجہ میں کہا کہ وہ بی جے پی کارکنان کی گرفتاری کا سلسلہ فوری طور پر بند کرے۔ شوبھا نے کہا کہ پولس نے اب تک 9 لوگوں کو گرفتار کیا ہے، اگر پولس مزید لوگوں کو گرفتار کرتی ہے تو ...

جی ایس ٹی کی وجہ سے ریاست کرناٹک کو900 کروڑ کانقصان

گوڈس اینڈ سروس ٹیکس (جی ایس ٹی) نے ریاست کے خزانہ پر بہت بری طرح سے اثر کیا ہے اور جدید مربوط محصول نظام کے جاری کئے جانے کے ایک ماہ بعد جولائی کے مہینہ میں ریاست کو محصول کی آمدنی میں سے نو سو کروڑ روپئے کا نقصان برداشت کرنا پڑا ہے۔