جھارکھنڈ میں بی جے پی لیڈر کا گولی مار کر قتل، خاندان کے 2 رکن زخمی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 3rd December 2017, 3:54 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

رانچی2دسمبر (آئی این ایس انڈیا) جھارکھنڈ کے کھونٹی ضلع کے باگما گاؤں میں گزشتہ رات نامعلوم حملہ آوروں نے بی جے پی کے ایک رہنما کا ان کے گھر کے باہر گولی مار کر قتل کر دیا ، حملہ کی تاب نہ لاتے ہوئے بی جے پی لیڈر موقع پر ہی دم توڑ گئے، اس حملے میں رہنما کی ماں اور کزن زخمی ہو گئے۔واقعہ کی اطلاع ملنے پر ہفتہ کو جائے حادثہ پر پہنچے پولیس سپرنٹنڈنٹ اشونی کمار نے کہا کہ بی جے پی کے لیڈر بھیا رام منڈوا کے قتل کے پیچھے کے مقاصد کا ابھی پتہ نہیں چل پایا ہے۔پولیس سپرنٹنڈنٹ نے کہا کہ ہم 38 سالہ رہنما کے قتل کے مقصد کا پتہ لگانے کے لئے تمام ممکنہ وجوہات کی تفتیش کریں گے ۔ قصورواروں کو پکڑنے کے لئے سب ڈویڑن پولیس افسر رنویر سنگھ کی قیادت میں سخت مہم شروع کئی گئی ہے ۔ سنگھ نے کہا کہ منڈا کے کزن برسا اور ماں اگنی دیوی کو زخمی حالت میں ایک مقامی ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا ؛ لیکن وہاں کے ڈاکٹروں نے انہیں رانچی کے راجندر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز ریفر کر دیا ہے ۔ زخمیوں کی حالت کے متعلق ابھی تک کوئی اطلاع نہیں مل سکی ہے ۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کوپاکستان جیسے بیانات دینے پربہارمیں نقصان ہوچکاہے:اسدالدین اویسی

حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ و صدر کل ہند مجلس اتحاد المسلمین بیرسڑاسد الدین اویسی نے کہا ہے کہ گجرات کے انتخابی جلسوں میں جس طرح کی زبان وزیراعظم نریندر مودی استعمال کر رہے ہیں، اس پر ان کو کوئی تعجب نہیں ہوا ہے۔

’’بھگوا غنڈہ گردی ملک کی سلامتی کے لیے سب سے بڑا خطرہ ‘‘: آل انڈیا امامس کونسل

ہندوتواوادی اور فسطائی غنڈے نے پھر سے ملک کو شرمسار کر دیا۔ ایک نہتے اور بے قصور مزدور افراز الاسلام کو مزدوری دینے کے بہانے بلاکر پھاوڑے سے قتل کر دینا اور پھر پٹرول چھڑک کر آگ لگا کر جلا دینا ملک کے لیے ایک انتہائی شرمناک معاملہ ہے۔

’’بھگوا غنڈہ گردی ملک کی سلامتی کے لیے سب سے بڑا خطرہ ‘‘: آل انڈیا امامس کونسل

ہندوتواوادی اور فسطائی غنڈے نے پھر سے ملک کو شرمسار کر دیا۔ ایک نہتے اور بے قصور مزدور افراز الاسلام کو مزدوری دینے کے بہانے بلاکر پھاوڑے سے قتل کر دینا اور پھر پٹرول چھڑک کر آگ لگا کر جلا دینا ملک کے لیے ایک انتہائی شرمناک معاملہ ہے۔

ہوناور تشدد: میرا بیٹا کسی بھی تنظیم کا ممبر نہیں تھا: مہلوک کے خاندان والوں نے کیا انصاف کا مطالبہ

ساحل آن لائن کے نمائندوں نے جب ہوناور میں پریش میستا کے گھر جاکر والدین کے ساتھ تعزیت کی تو انہوں نے بتایا کہ ابھی تک کسی بھی میڈیا والوں نے اُن سے ملاقات نہٰیں کی تھی، ہم پہلے اخباری لوگ ہیں جنہوں نے گھر پہنچ کر حالات جاننے کی کوشش کی ہے۔ انہوں نے بیٹے کے قتل پر انصاف کا مطالبہ ...