بی جے پی دنیا کی سب بڑی اور قابل اعتماد پارٹی:یوگی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th April 2018, 12:28 AM | ملکی خبریں |

لکھنؤ ،16؍اپریل ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی)کو دنیا کی سب سے بڑی سیاسی جماعت اور قابل اعتماد ہونے کی علامت قرار دیتے ہوئے اترپردیش کے وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے آج کہاکہ مرکز اور بی جے پی کی حکمرانی والی ریاستوں میں ترقی اور اچھی حکمرانی کی بدولت پارٹی مقبولیت کے نئی اونچائیوں پر پہنچ رہی ہے۔یوگی قانون ساز کونسل کے امیدواروں کو نامزدگی داخل کرنے سے پہلے اعزاز سے نواز رہے تھے۔ انہوں نے کہاکہ آٹھ نو مہینہ پہلے قانون ساز کونسل کی رکنیت سے استعفی دیکر کچھ اپوزیشن جماعتوں کے لوگوں نے ان کے اور ان کے ساتھیوں کے لئے سیٹ چھوڑی تھی۔ بی جے پی نے ان لوگوں کو پھر سے قانون ساز کونسل کا امیدوار بناکر قابل اعتماد ہونے کا پیغام دیا ہے۔انہوں نے کہاکہ سیٹ چھوڑنے والوں کو پھر سے امیدوار بناکر بی جے پی نے اپنا عزم دہرایا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ترقی اور اچھی حکمرانی کو وزیراعظم نریندر مودی نے قائم کیا ہے۔ امید ہے کہ یہ تمام اس کے سپاہی بنکر اسے آگے بڑھائیں گے۔ انہوں نے وزیراعظم اور بی جے پی کے صدر امت شاہ کا تشکر کا بھی اظہار کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

پروٹوکول توڑنے میں مودی نے عمران سے مقابلہ کیا، سفارتی ناکامی پر جواب دیں: کانگریس

کانگریس نے سعودی عرب کے شہزادہ (ولی عہد) محمد بن سلمان کا پروٹوکول سے الگ جاکرخوش آمدید کئے جانے کو لے کر بدھ کو وزیر اعظم نریندر مودی پر حملہ بولا اور الزام لگایا کہ پروٹوکول توڑنے میں مودی تو گویا پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کے ساتھ، جیسے مقابلہ کر رہے ہیں۔

پلوامہ حملہ: اب آندھرا پردیش کے وزیراعلیٰ چندرا بابو نائیڈو نے مودی حکومت کو گھیرا، کہا، قومی سلامتی خطرے میں ہے

پلوامہ دہشت گردانہ حملے کو لے کر پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کے بیان پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے آندھرا پردیش کے وزیراعلیٰ این چندرا بابو نائیڈو نے مرکز کی مودی حکومت پر نشانہ لگایا ہے۔

این سی ڈی آرسی نے آپریشن کے دوران لاپرواہی برتنے والے ڈاکٹر متاثرہ خاندان کو 2.7 لاکھ روپے ادا کرنے کا حکم دیا

قومی صارفین تنازعہ سراغ رساں کمیشن(این سی ڈی آرسی) نے آپریشن کے دوران لاپرواہی کی وجہ سے ایک خاتون کی موت کے معاملے میں تین ڈاکٹروں کو متاثر خاندان کو پر 2.7 لاکھ روپے ادا کرنے کا حکم دیا ہے۔