کیرالہ میں بی جے پی کی ہڑتال کی وجہ سے عوام پریشان 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th December 2018, 11:11 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

تروننت پورم،14؍ دسمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) بی جے پی کی کیرل یونٹ کی جانب سے بلائی گئی ہڑتال سے ریاست میں جمعہ کو عام زندگی متاثر رہی۔ سڑک سے سرکاری اور نجی بسیں ندارد رہیں، دکانیں اور ہوٹل بند رہے۔سبریملا مندر کے ارد گرد حکم کی مخالفت میں بی جے پی کے مظاہرے کے پاس جمعرات کو 55 سالہ وینو گوپال نیر نام کے شخص نے خود کشی کر لی تھی۔ اس کے بعد بی جے پی نے ریاست میں ہڑتال کا اعلان کیا تھا۔بھگوا پارٹی کا دعوی تھا کہ پنرائی وجین کی قیادت والی کیرل حکومت کے سبریملا مندر معاملے میں سخت رخ کو دیکھتے ہوئے نائر نے یہ قدم اٹھایا تھا۔تاہم پولیس نے کہا کہ مجسٹریٹ کے سامنے آخری وقت میں نیر نے کہا کہ وہ ڈپریشن میں تھا اور آگ لگانے کے بعد مظاہرین کی طرف دوڑا۔کیرل ریاست روڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن (کے ایس آر ٹی سی) نے سبریملا عقیدت مندوں کی پریشانیوں کو کم کرنے کے لئے پانبا بس سروس کو منظم کر رہا ہے۔حالانکہ ہڑتال حامیوں کی طرف سے بس پر پتھراؤ کرنے کی وجہ سے کے ایس آر ٹی سی کے تین بس کو نقصان پہنچا ۔وہیں تروننت پورم میں پولیس نے مریضوں کو میڈیکل کالج اور علاقائی کینسر سینٹر تک پہنچانے کے لئے نقل و حمل کی سہولت مہیا کرائی۔پولیس کے ایک اہلکار نے کہاکہ پولیس بس دوپہر تک میڈیکل کالج اور آرسی سی کے چھ چکر لگا چکی تھی اور ہر چکر میں تقریباًسو لوگ تھے۔ہم نے ہوائی اڈے تک کے لئے بھی گاڑیوں کا انتظام کیا ہے۔وہیں کئی کاروباری تنظیموں نے کھلے طور پر بی جے پی کی اس ہڑتال کی مخالفت کی کیونکہ تین ہفتوں کے اندردوسری بار ریاست میں ہڑتال بلائی گئی ہے۔بی جے پی ضلع یونٹ نے بھی این ای ای ٹی کا امتحان دینے آئے طالب علموں کے لئے ٹرینوں کا بندوبست کیا۔وزیر اعلی پنرائی وجین نے بی جے پی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی ریاست میں خود مضحکہ خیز ہو گئی ہے۔بی جے پی کے ریاستی سربراہ پی ایس شريدھرن پلئی نے جمعہ کو خود کشی کے اس معاملے میں عدالتی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔وہیں کانگریس کے سربراہ ملاپلی رام چندرن نے بی جے پی کو یہ بتانے کو کہا ہے کہ اس نے یہ ہڑتال کیوں بلائی؟متدا کے رہنے والے وینو گوپال نیر کا جسم 90 فیصد تک جل گیا تھا اور ان کی موت سرکاری طبی کالج اسپتال میں شام کو ہو گئی۔

ایک نظر اس پر بھی

سی ایم یوگی ایکشن میں،اوم پرکاش راج بھرکویوپی کابینہ سے کیا برخاست

انتخابات ختم ہوتے ہی اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے ریاست کے گورنر رام نائک سے لوک سبھا انتخابات میں باغیانہ تیور اپنانے والے پسماندہ طبقات بہبود کے وزیر اوم پرکاش راج بھر کو کابینہ سے برطرف کرنے کی سفارش کی،جسے گورنر نے منظور کر لیا ہے۔

ملیکاارجن کھرگے نے کہا، ایگزٹ پول کے نتائج مبالغہ آرائی پر مبنی ہیں

لوک سبھا میں کانگریس پارٹی کے لیڈر ملیکارجن کھرگے نے لوک سبھا انتخابات کے متعلق مختلف ایجنسیوں کی طرف سے کروائے گئے ایگزٹ پول کے نتائج کو مبالغہ آرائی سے تعبیر کیا اور کہا  کہ ان نتائج کو معتبر نہیں سمجھا  جاسکتا۔

کرناٹک کے وزیراعلیٰ کمار سوامی کا آخری لمحوں میں دورہ دہلی منسوخ؛ ریاست میں نئی سیاسی صف بندیوں کے اشاروں کو ہوا

ایگزٹ پول کے منظرعام پر آتے ہی الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کی معتبریت پر سوال اٹھانے والے وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی آج دہلی میں اپوزیشن پارٹیوں کی طرف سے اس سلسلے میں منظم کئے گئے احتجاج کا حصہ بننے والے تھے لیکن آخری لمحوں میں انہوں نے اپنا دورہ  دہلی منسوخ کرکے سیاسی حلقوں میں ...

سرسی میں دلہن کے گھروالوں نے دُلہا کے گھر پر پہنچ کر کیا ہنگامہ؛ چھ زخمی

ضلع اُترکنڑا کے سرسی میں  نچلے طبقہ کے لڑکے کی اونچی ذات والی لڑکی سے شادی کرنے پر  معاملہ ہاتھاپائی تک پہنچ گیا جس کے نتیجے میں چھ لوگ زخمی ہوگئے جنہیں  قریبی اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔واقعہ  سرسی تعلقہ کے بنواسی کے قریب کیروتّی قصبہ میں  پیر کو پیش آیا۔

اُترکنڑا ڈپٹی کمشنر نے جاری کیا اعلامیہ؛ 23مئی کو ہونے والی ووٹوں کی گنتی کے موقع پر انتخابی مرکز میں موبائل فون اندر لے جانے پر پابندی

اُترکنڑا لوک سبھا حلقہ کے انتخابات کے ووٹوں کی گنتی ہر سال کی طرح امسال بھی کمٹہ  ڈاکٹر اے  وی بالیگا کالج میں  ہوگی، جہاں اس تعلق سے مناسب حفاظتی بندوبست کیا گیا ہے۔ جیسا کہ ہرکوئی واقف ہے، ووٹوں کی گنتی  23 مئی کو ہوگی۔ اس موقع پر  اُترکنڑا ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار  نے ...

سیاحت کے لئے مرڈیشور پہنچے گوا کے تین طلبا کو سمندر میں ڈوبنے کے دوران بچالیا گیا

بھٹکل تعلقہ کے مرڈیشور میں سیاحت کے لئے آئے گوا کے تین طلبا کو اُس وقت بچالیا گیا جب وہ بحر عرب میں  نہانے کےدوران اچانک ایک بڑی سمندری موج  کی لپیٹ میں آکر غوطے کھارہے تھے کہ لائف گارڈ کے اہلکار ان کی مدد کو پہنچ گئے۔ حادثہ منگل صبح  پیش آیا۔

بنگلور میں 23/ مئی کو ووٹوں کی گنتی کے دوران امتناعی احکامات نافذ

23 مئی کو لوک سبھاانتخابات کے نتائج کا اعلان ہورہا ہے۔ انتخابات کے نتائج ظاہر ہونے کے مرحلے میں کوئی ناخوشگوار صورتحال پیدا نہ ہونے پائے اس کے لئے شہر کے پولیس کمشنر سنیل کمار نے 23مئی کی صبح چھ بجے سے شہر بھر میں امتناعی احکامات نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے۔