بی جے پی حکومت کو کمزور کرنے کی حماقت نہ کرے: کمار سوامی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th September 2018, 12:01 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو12؍ستمبر(ایس او نیوز) وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے ریاستی حکومت کو گرانے بی جے پی کی طرف سے کی جارہی کوششوں پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ریاست میں سیلاب کی تباہی اور سنگین خشک سالی کی صورتحال سے نپٹنے کے لئے فکر مند حکومت کاساتھ دینے کی بجائے بی جے پی کے بعض قائدین محض حکومت کو گراکر اقتدار پر قبضہ کرنے کا خواب خرگوش دیکھنے میں لگے ہوئے ہیں۔

اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ بی جے پی ہر دن حکومت کو گرانے کی ایک نئی تاریخ مقرر کررہی ہے، اب یہ کہا جارہاہے کہ گنیش تہوار تک حکومت گر جائے گی۔اس کے بعد کہے گی کہ گاندھی جینتی کو گرادیں گے، پھر بعد میں کہے گی کہ دسہرہ تک حکومت گر جائے گی۔ دیکھتے ہیں بی جے پی حکومت گرانے کا یہ کھیل کب تک کھیلے گی۔ اراکین اسمبلی کی خرید وفروخت کے متعلق الزامات کو میڈیا کی بکوس قرار دیتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے میڈیا سے سوال کیا کہ یہ تمام فرضی خبریں انہیں ملتی کہاں سے ہیں۔ عوام کی فلاح وبہبود کے لئے اگر میڈیا کچھ کرسکتا ہے تو کرے اس طرح کی فرضی خبریں اچھال کر اپنے آپ کو جھوٹا ثابت نہ کرے۔

انہوں نے کہاکہ بی جے پی میں اگر ہمت ہے تو ریاستی حکومت گرادے ، دیکھتے ہیں کیا ہوتاہے، فی الوقت وہ ریاست کے سیلاب زدہ عوام کی باز آباد کاری میں لگے ہوئے ہیں، بی جے پی کو اگر ان سیلاب زدہ لوگوں سے ہمدردی نہیں ہے تو کوئی کچھ نہیں کرسکتا۔ انہوں نے کہاکہ ریاست میں سیلاب اور خشک سالی کی صورتحال کا تفصیلی جائزہ لے کر خسارے کا اندازہ لگایا جارہا ہے۔ دونوں طرف سے رپورٹ ملنے کے بعد آگے کا لائحہ عمل تیار کیا جائے گا۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ کل وزیر اعظم سے ملاقات کے دوران انہوں نے گزارش کی تھی کہ ریاست میں تباہی کا جائزہ لینے مرکزی ٹیم روانہ کی جائے ، آج ہی مرکزی ٹیم کرناٹک کے لئے روانہ کی گئی ہے۔اس کے لئے وہ مرکزی حکومت کے شکر گزار ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ریاست میں دو دنوں تک ٹیم مقیم رہ کر خشک سالی اور سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا الگ الگ طور پر معائنہ کرے گی۔ آپریشن کمل کے ذریعے کانگریس اورجے ڈی ایس اراکین اسمبلی کو خریدنے بی جے پی قائدین کی کوششوں کے بارے میں ایک سوال پر کمار سوامی نے کہاکہ بی جے پی اگر کانگریس اور جے ڈی ایس کے اراکین اسمبلی کی وفاداری کو خریدنے کی کوشش کرے گی تو وہ بھی خاموش نہیں بیٹھیں گے ، اتنا یقینی بناسکتے ہیں کہ بی جے پی کے کم از کم پانچ اراکین اسمبلی مستعفی ہوجائیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

اپنے امیدوار کو بے وجہ بڑھا چڑھا کر پیش کر رہی ہے بی جے پی: ملکا ارجن کھڑگے

اپوزیشن لیڈر اور کانگریس کے موجودہ ایم پی ملکا ارجن کھڑگے نے اتوار کو یقین ظاہر کیا کہ وہ الیکشن جیت جائیں گے۔انہوں نے بی جے پی پر الزام لگایا کہ وہ محفوظ گلبرگہ پارلیمانی سیٹ سے اپنے امیدوار امیش جادھو کو بے وجہ بڑھا چڑھا کر پیش کر رہی ہے۔کھڑگے نے کہا کہ بی جے پی جادھو کے ...

سابق وزیراعظم دیوے گوڈا کا بھٹکل دورہ؛ کہا، جمہوریت خطرے میں ہے، اُسے بچانے کے لئے ہر شہری کو آگے آنا ہوگا

اس بار کے انتخابات سب سے زیادہ اہم اس لئے  ہے کہ مودی کے زیر اقتدار ملک کی جمہوریت کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے۔جب سے مودی ملک کے وزیراعظم  بنے ہیں ملک کے سرکاری جمہوری اداروں میں  دخل اندازی سے  عدالت تک محفوظ نہیں ہے، ریزروبینک آف انڈیا  ہو ، انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ ہو، سی بی آئی ...

بنگلور سے شموگہ اور بھدراوتی لے جانے کے دوران دوکروڑ کی رقم ضبط؛ گاڑی کے ایک ٹائر میں چھپا کر رکھی گئی تھی رقم

الیکشن کا ضابطہ اخلاق لاگو ہونے کے بعد انتخابی قوانین کی خلاف ورزیوں پر نظر رکھنے والے دستے نے کرناٹکا میں اب تک غیر محسوب رقم اور دیگر اشیاء جو ضبط کی ہے اس کی مالیت کا اندزاہ 83کروڑ روپے لگایا گیا ہے۔

الیکٹرانک ووٹنگ مشینیں سخت نگرانی میں اسٹرانگ رومس منتقل

جنوبی کرناٹک کے 14 پارلیمانی حلقوں میں کل پہلے مرحلے کی پولنگ کے دوران ڈالے گئے ووٹ الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں قید ہیں ، اور ان الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کو مرکزی دستوں کی سیکورٹی کے تحت اسٹارنگ رومس میں قید کردیا گیا ہے۔

ملک میں بی جے پی کی لہر اور جال بالکل نہیں ہے مودی انتظامیہ کارپورٹ کارڈ فیل ہوگیا : دنیش گنڈو راؤ

ملک کے کسی بھی علاقہ میں وزیر اعظم نریندر مودی کی کوئی لہر بالکل نہیں ہے ۔مودی لہر کا جھانسہ دے کر عوام کو جال میں پھانسنے کی کوشش بی جے پی کر رہی ہے ۔یہ باتیں کے پی سی سی کے صدر دنیش گنڈو راؤ نے کہی ہیں ۔آ