بی جے پی صدر امیت شاہ کا اعلان؛ رام ناتھ كووند ہوں گے این ڈی اے کے صدارتی امیدوار

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 19th June 2017, 5:52 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی 19/جون (ایس او نیوز/ ایجنسی) بی جے پی صدر امیت شاہ نے اعلان کیا ہے کہ  این ڈی اے کی جانب سے صدارتی امیدوار دلت کمیونٹی سے تعلق رکھنے والے بہار کے گورنر رام ناتھ كووند ہوں گے۔ پیر کو  بی جے پی صدر امت شاہ نے كووند کے نام کا اعلان کیا. امت شاہ نے بتایا کہ كووند کے بارے میں کانگریس صدر سونیا گاندھی کو معلومات دے دی گئی ہے. شاہ کے مطابق، پارٹی نے غریب معاشرے سے تعلق رکھنے والے شخص کو صدر بنانے کا فیصلہ کیا ہے. كووند کے نام کا اعلان کرکے امت شاہ اور پی ایم نریندر مودی نے سیاسی ماہرین کو چونکا دیا ہے. صدارتی امیدوار کو لے کر لگ رہی سیاسی قیاس آرائی میں کہیں بھی كووند کا نام سامنے نہیں آیا تھا. سیاسی ماہرین  سمجھتے ہیں کہ دلت چہرہ ہونے کی وجہ سے كووند کی مخالفت کرنے کا امکان نہ ہونے کے برابر ہے.

کون ہیں كووند؟
 كووند کانپور کے رہنے والے ہیں. 1 اکتوبر 1945 کو اتر پردیش کے کانپور دیہات میں پیدا ہوے. كووند نے کانپور یونیورسٹی سے بی  کام. اور ایل. ایل. بی. کی ڈگری حاصل کی. وہ بی جے پی دلت مورچہ کے صدر رہ چکے ہیں. یوپی سے دو مرتبہ  راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ ہیں. 1994 میں یوپی سے پہلی بار راجیہ سبھا رکن پارلیمان منتخب ہوئے. 2006 تک ایم پی رہے. کئی بار  پارلیمانی کمیٹیوں کے چیئرمین بھی رہ چکے ہیں. پیشے سے وکیل رہے كووند آل انڈیا کولی سماج کے صدر بھی رہے ہیں. خیال رہےکہ كووند کو بہار کا گورنر بھی اچانک ہی بنایا گیا تھا.

ٹی آر ایس کی حمایت کا اعلان
امت شاہ نے کہا کہ دلت اور پسماندہ طبقات کے لئے كووند ہمیشہ جدوجہد کرتے رہے ہیں. شاہ نے کہا، 'پی ایم نے خود سونیا گاندھی سے بات کی ہے. منموہن جی سے بات کی ہے، سب کو فیصلے کے بارے میں بتایا گیا ہے. ' شاہ نے صاف کیا کہ نائب صدر امیدوار کو لے کر کوئی بحث نہیں ہوئی ہے. امت شاہ نے کہا، 'سونیا گاندھی جی نے بتایا ہے کہ ہم بات چیت کرکے آگے کے فیصلے کے بارے میں بتائیں گے.' ادھر، تلنگانہ کے وزیر اعلی اور ٹی آر ایس چیف کیسی راؤ نے كووند کی حمایت کرنے کا اعلان کر دیا ہے.

وہیں، مودی نے بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار، آندھرا پردیش کے وزیر اعلی چندرا بابو نائیڈو اور تمل ناڈو کے وزیر اعلی پلنسامي سے بات چیت کرکے كووند نام فائنل کئے جانے  کی معلومات دی. وہیں، وینکیا نائیڈو نے بی جے پی کے سینئر رہنماؤں اڈوانی اور مرلی منوہر جوشی کو كووند نام کا اعلان ہونے سے پہلے فیصلے کے بارے میں بتایا.

اکیلے میں شاہ اور مودی کی ملاقات
اس سے پہلے، صدارتی امیدوار طے کرنے کو لے کر دارالحکومت میں بی جے پی پارلیمانی بورڈ کی میٹنگ ہوئی. پی ایم نریندر مودی، بی جے پی صدر امت شاہ سمیت تمام بڑے لیڈر اس اجلاس میں پہنچے. میٹنگ میں ممبران پارلیمنٹ اور ممبران اسمبلی کو موجود ہونے کو کہا گیا تاکہ وہ صدر کے لیے اُمیدواری  کے  کاغذات پر دستخط کر سکیں. نامزدگی کاعمل پیر کو ہی شروع ہوچکا ہے. میٹنگ قریب 45 منٹ تک جاری رہی. میٹنگ کے بعد شاہ اور مودی نے اکیلے میں ملاقات کی. اس کے بعد ہی كووند کے نام کا اعلان کر دیا گیا. بتا دیں کہ اس سے پہلے بی جے پی نے اتوار کو صدارتی امیدوار کے معاملے پر این ڈی اے ساتھیوں اور اپوزیشن پارٹیوں سے رائے مشورے کا دور مکمل کر لیا. ذرائع کا کہنا ہے کہ پارٹی میں اس بات کو لے رضامندی بنی تھی کہ کسی فعال سیاسی شخصیت کو ہی ملک کے اس اعلی ترین عہدے پر قابض ہونا چاہئے.

ایک نظر اس پر بھی

اگرپاکستانی الیکشن میں مداخلت کررہاہے تواین آئی اے کیاکررہی ہے، اسدالدین اویسی کاسوال ،بنکاک میں پاکستان کے ساتھ مجوزہ میٹنگ کی تفصیلات بتائیں مودی

حیدرآبادکے رکن پارلیمنٹ و صدر کل ہند مجلس اتحاد المسلمین بیرسڑاسد الدین اویسی نے کہا ہے کہ گجرات کے انتخابی جلسوں میں جس طرح کی زبان وزیراعظم نریندر مودی استعمال کر رہے ہیں، اس پر ان کو کوئی تعجب نہیں ہوا ہے۔

خبطی ’ وکاس‘ کا تازہ ترین سروے ، مہنگائی آسمان پر ،اشیاء خوردنی کی قیمتوں میں اضافہ ، نومبر میں شرح 15 ماہ بلند سطح پر

سبزیاں، پھل او ر انڈوں کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ کی بری خبر ہے ۔ دن رات ٹی وی ڈیبیٹ نے عوام کو اس قدر غافل اور نکما کر دیا ہے کہ آج ہونے والے ہندو۔ مسلم موضوع پر پارٹی کے بکواس ترجمان کی ہنگامہ آرائی کو تو یاد رکھتے ہیں ؛

منی شنکر ایر کا بیان غلط:لیکن مودی جی نے جو منموہن سنگھ کے بارے میں کہا وہ بھی ٹھیک نہیں:راہل گاندھی

گجرات اسمبلی انتخابی مہم کے آخری دن پریس کانفرنس کرکے کانگریس صدر راہل گاندھی نے ایک بار پھر پی ایم مودی کو نشانے پر لیا ہے۔انہوں نے صاف کہا کہ مودی جی پر منی شنکر ایر کا تبصرہ بالکل غلط تھا آخر وہ ہمارے وزیر اعظم ہیں۔