بی جے پی کی حامی پارٹی نے اتحاد توڑنے کی دی دھمکی، کہاجا سکتے ہیں ایس پی۔بی ایس پی کے ساتھ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th February 2019, 12:19 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،10 ؍فروری (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) لوک سبھا انتخابات کی تاریخ جیسے جیسے قریب آ رہی ہیں، بی جے پی کی مشکلیں بھی بڑھتی جا رہی ہیں۔اب اتر پردیش میں بی جے پی کی اتحادی پارٹی سہیلدیو ہندوستانی سماج پارٹی نے اتحاد توڑنے کی دھمکی دی ہے۔

سہیلدیو ہندوستانی سماج پارٹی کے جنرل سکریٹری ارون راج بھر نے کہا کہ اگر بی جے پی ہماری جانب سے اٹھائی گئے مطالبات سے اتفاق نہیں رکھتی ہے تو یقینی طور پر ہم ان سے رشتہ توڑ دیں گے۔اگر سماجی انصاف کمیٹی کی سفارشات کو 24 فروری تک نافذ نہیں کیا گیا تو ہمارا بی جے پی سے راستہ مختلف ہو جائے گا اور اس کے بعد ہم اتر پردیش کی تمام 80 لوک سبھا سیٹوں پر الیکشن لڑیں گے۔انہوں نے کہاکہ ہم ضرورت پڑنے پر بی جے پی مخالف اتحاد (ایس پی۔بی ایس پی) کے ساتھ بھی جا سکتے ہیں۔ان کے ساتھ کئی دور کے مذاکرات ہو چکے ہیں۔

راج بھر نے کہا کہ یہ آخری انتباہ ہے اور 24 فروری کے بعد بی جے پی کے ساتھ کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔سہیلدیو بھارتیہ سماج پارٹی کے علاوہ نیشنل پیپلز پارٹی (این پی پی) نے بھی مرکز میں حکمران این ڈی اے سے الگ ہونے کی دھمکی دی۔این پی پی کے صدر اور میگھالیہ کے وزیر اعلی کونراڈ کے سنگما نے دھمکی دی ہے کہ اگر یہ بل راجیہ سبھا میں منظور ہوتا ہے تو ان کی پارٹی مرکز میں حکمران این ڈی اے سے الگ ہو جائے گی۔سنگما نے کہا کہ این پی پی کی یہاں ہفتہ کو ہوئی جنرل اسمبلی میں اس ارادے کی ایک قرارداد منظور کیا گیا۔

انہوں نے بتایا کہ این پی پی میگھالیہ کے علاوہ اروناچل پردیش، منی پور اور ناگالینڈ کی حکومتوں کو حمایت دے رہی ہے۔جنرل اسمبلی میں ان چاروں شمال مشرقی ریاستوں کے پارٹی لیڈر موجود تھے۔سنگما نے کہا کہ پارٹی نے متفقہ طورپر ایک تجویز قبول کی ہے جس میں شہریت ترمیم بل 2016 کی مخالفت کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔اگر یہ بل منظور ہو جاتا ہے تو این پی پی این ڈی اے کے ساتھ اپنا اتحاد ختم کردے گا۔
 

ایک نظر اس پر بھی

سادھوی کا کرکرے پر نازیبا تبصرہ؛ کانگریس نے بی جےپی پر سادھا نشانہ ؛ بری طرح پھنسی بی جےپی نے پلہ جھاڑا تو سادھوی بیان واپس لینے پر ہوئی مجبور

کانگریس نے بھوپال لوک سبھا سیٹ سے بی جے پی کی امیدوار سادھوی پرگیہ سنگھ ٹھاکر کی طرف سے شہید ہیمنت کرکرے پر کئے گئے نازیبا تبصرے کو لے کر بی جے پی پر سخت نشانہ سادھا ہے اور  کہا ہے کہ وزیر اعظم مودی کو چاہئے کہ وہ ملک سے معافی مانگیں اور پرگیہ کے خلاف کارروائی کریں۔

سادھوی پرگیہ پر عدالت کو گمراہ کرکے ضمانت حاصل کرنے کا الزام؛ جمعیۃ العلما نے داخل کی عدالت میں عرضداشت

مالیگاؤں 2008بم دھماکہ معاملے کی کلیدی ملزمہ سادھوی پرگیہ سنگھ ٹھاکر کے الیکشن لڑنے کے خلاف ممبئی کی خصوصی این آئی اے عدالت میں جمعرات کو  بم دھماکہ متاثرین کی نمائندگی کرنے والی تنظیم جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) کے وکیل شاہد ندیم نے پانچ صفحات پر مشتمل عرضداشت داخل کی جسے ...

سادھوی پرگیہ کا شہید ہیمنت کرکرے پر نازیبا تبصرہ، کہا ؛ میری ’بددعا‘ سے ہوا تھا کرکرے کا خاتمہ

بی جےپی نے بھوپال پارلیمانی حلقہ سے جس  سادھوی پرگیہ سنگھ ٹھاکر کو  اپنا اُمیدوار بناکر میدان میں اُتارا ہے ، اُس نے  دہشت گردوں کے ساتھ مقابلہ کرتے ہوئے  شہید ہونے والے  مہاراشٹرا اے ٹی ایس کے سربراہ ہیمنت کرکرے کے خلاف نازیبا تبصرہ کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ  اس کی بددُعا سے ...

لوک سبھا انتخابات ؛ کیا اُترپردیش میں پہلے مرحلے کی طرح دوسرے مرحلے میں بھی مسلم-دلت اتحاد سے بی جے پی کا قلعہ ڈانواڈول ہوگا ؟

لوک سبھا انتخابت کے پہلے مرحلے کی طرح اب دوسرے مرحلے میں بھی دلت مسلم اتحاد سے  بی جے پی کا قلعہ ڈانواڈول ہوتا نظر آرہا ہے۔ سمجھا جارہا ہے کہ اُترپردیش میں  جمعرات کو ہوئی پولنگ کے بعد رائے دہندگان کا جو رحجان سامنے آیا ہے، اسے دیکھتے ہوئے  بی جے پی کے لئے واپسی کی اُمیدیں دم ...