کمار سوامی ذاتی فائدہ کے لئے عہدہ کااستعمال کررہے ہیں: بی جے پی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th March 2019, 11:17 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،12؍مارچ (ایس او نیوز) ریاستی بی جے پی نے وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی پر آج الزام لگایا ہے کہ وہ عہدہ کا غلط استعمال کرتے ہوئے اپنے کنبہ کی تجارت کو فروغ دینے بیٹے کو سیاست میں لارہے ہیں۔ بی جے پی نے اپنے ٹویٹ میں وزیراعلیٰ پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ کمار سوامی اپنے اداکار بیٹے نکھل کمار سوامی کو جے ڈی ایس کے مضبوط قلعہ منڈیا پارلیمانی حلقہ میں اتارکر ان کی کامیابی کو یقینی بنانے دن رات جدوجہد کررہے ہیں۔ بی جے پی کے اس ٹویٹ پر جواب دیتے ہوئے جے ڈی ایس نے زعفرانی پارٹی پردوسری پارٹیوں کے اراکین اسمبلی کو خریدنے میں ملوث ہونے کا الزام لگایا۔ اس معاملہ میں دونوں پارٹیوں کے درمیان ٹویٹ وار شروع ہوگیا۔ زعفرانی پارٹی نے کہاہے کہ کمار سوامی پہلے اور دوسرے مہینے میں حکومت تشکیل دینے میں مصروف رہے۔ تیسرے اور چوتھے مہینہ میں بیوی انتیا کمار سوامی کو رامنگرم حلقہ سے کامیاب بنانے میں مگن رہے۔ 7ویں؍اور8؍ویں مہینے کے دوران بیٹے کو منڈیا سے کس طرح کامیاب بنانا ہے اس فکر میں رہے۔ ریاستی بی جے پی نے کمار سوامی پر یہ بھی الزام لگایا ہے کہ وہ وزیراعلیٰ کی کرسی کا استعمال اپنے خاندانی تجارت کی ضرورت کے لئے کررہے ہیں۔ کمار سوامی کی بیوی انیتا رامنگرم حلقہ کی ایم ایل اے ہیں لیکن اسی حلقہ کی ذمہ داری بھی وزیراعلیٰ سنبھالتے ہیں۔ نکھل امبریش کی بیوہ سمالتا کے ساتھ منڈیا سے مقابلہ کریں گے۔ ذرائع کے مطابق اگر کانگریس نے سمالتا کو منڈیا سے ٹکٹ نہیں دیا تو وہ بی جے پی میں شامل ہوسکتی ہیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

ہندو لیڈر سورج نائک سونی نے اننت کمار ہیگڈے کو کہا،مودی حکومت کا داغدار وزیر؛ اُس کی مخالفت میں کام کرنے کے لئے نوجوانوں کی ٹیم تیار

ضلع شمالی کینرا میں ایک نوجوان ہندو لیڈر کے طور پر اپنی پہچان رکھنے والے کمٹہ کے سورج نائک سونی نے اخباری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ’’ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں چل رہی مرکزی حکومت میں اننت کمار ہیگڈے کی حیثیت ایک داغداروزیر کی ہے۔ اور ایسا لگتا ہے کہ انہیں ...

کرناٹک میں نوٹیفکیشن کے پہلے دن 6؍امیداروں کی نامزدگیاں داخل 

ریاست میں لوک سبھا الیکشن کے پہلے مرحلہ میں 14؍سیٹوں پر 18؍اپریل کو ہونے والے الیکشن کے لئے پرچہ نامزدگی کرنے کا آغاز ہوگیا ۔ پہلے دن چار حلقوں میں6؍ امیدواروں کی جانب سے 11؍ مزدگیاں داخل کئیں۔ یہ اطلاع ریاستی الیکشن افسر سنجیو کمار نے دی۔

بنگلورو کے تینوں پارلیمانی حلقوں میں ڈی سی پیز کی زیرنگرانی سخت بندوست لائسنس یافتہ 7؍ہزار ہتھیارات تحویل میں :پولیس کمشنر ٹی۔ سنیل کمار

پولیس کمشنر ٹی۔ سنیل کمار نے بتایا کہ بنگلور سنٹرل ،بنگلور نارتھ اور بنگلور ساؤتھ لوک سبھا حلقوں میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے لئے ڈپٹی کمشنر آف پولیس (ڈی سی پی) سطح کے پولیس افسروں کی نگرانی میں پولیس کا سخت بندوبست کیاگیا ہے۔