بھٹکل کی مختلف زمینات کے نقشہ جات فراہم کرنے تنظیم وفد کی بنگلور میں ریاستی سروے کمشنر سے مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 4th October 2018, 10:27 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے | ریاستی خبریں |

بھٹکل:4/ اکتوبر(ایس اؤ نیوز) بھٹکل کے عوام کو اپنی ہی زمین پر سرچھپانے کےلئےعمارت کی تعمیر کرنا جوئے شیر لانے کے برابر ہے۔ جب کبھی اس سلسلے میں عمارت تعمیرکرنے  کی منظوری کے لئے متعلقہ محکمہ سے رجوع کیا جاتا ہے  تو جواب ملتاہے کہ آپ کے زمین کا نقشہ ہی نہیں ہے۔اس سنگین مسئلے کو لے کر مجلس اصلاح و تنظیم بھٹکل کا ایک وفد بنگلورو میں محکمہ رینیوو کے ریاستی کمشنر منیش مڈگل سے ملاقات کی اور اُنہیں میمورنڈم پیش کرتے ہوئے   مسئلہ کے حل کی درخواست کی۔

ملاقات کے دوران وفد نے کمشنر کو باور کرایا کہ برسوں پرانی زمینات کے نقشے اگر محکمہ میں نہیں ہیں تو عوام کہاں جائیں؟ اس سلسلے میں متعلقہ افسران کو ہدایات جاری کرتے ہوئے سروے کرائے جانے کی درخواست کی۔

اس تعلق سے   نائب  کمشنر رمیش   نے  افسوس ظاہر کرتے  ہوئے کہاکہ مقامی اور ضلعی افسران کے ہوتے ہوئے  یہاں تک آپ کا آنا افسوس ناک ہے۔ انہوں نے  یقین دلایا کہ آپ بھی ضلع کے ڈپٹی کمشنر سے اس سلسلے میں ملاقات کریں ، میں بھی اپنی طرف سے انہیں ہدایات دوں گا۔

تنظیم کی طرف سے دئیے گئے میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ بھٹکل شہر کے کئی علاقوں کے نقشہ جات ناپید ہیں، متعلقہ محکمہ سے رجوع کرتے ہیں تو وہاں  نقشہ جات میسر نہیں ہونے کا پتہ چلتاہے۔ مثال کے طورپر بھٹکل تعلقہ سوسگڑی دیہات کے نوائط کالونی ، عثمان نگر، پرانا بھٹکل ، سروے نمبر 9999، 351،اے1/351،اے1اے2، 510،بھٹکل گلمی کے سروے نمبر 267اے کے علاقوں کی زمین کے نقشہ جات ہی نہیں ہیں۔ اس کے علاوہ  جالی دیہات میں سرکارکی طرف سے منظور کردہ سروے نمبر 66پر واقع 120پلاٹ، وینکٹاپور دیہات کے سروے نمبر 88پر موجود 150پلاٹ کے نقشے ہی نہیں ہیں۔ جن علاقوں کا یہاں تذکرہ کیاگیا ہے وہ شہر کے قدیم علاقوں میں شمار ہوتے ہیں، تعجب کی بات ہے کہ متعلقہ محکمہ میں ابھی تک ان علاقوں کی زمینات کے نقشے نہیں ہیں۔

میمورنڈم کے مطابق عوام  ان علاقوں میں رہائش کے لئے گھروں اور مکانوں کی تعمیر نہیں کرپارہے ہیں، کافی پریشانی جھیلنی پڑرہی ہے۔ جب کبھی متعلقہ محکمہ کو گھر یا عمارت کی تعمیر کے لئے عرضی دی جاتی ہے توافسران اسی عرضی کے پیچھے ’’ہمارے محکمہ میں اس زمین کا کوئی نقشہ نہیں ہے‘‘  لکھ کر ہاتھ میں تھما دیتے ہیں۔ اور بھٹکل کے نوائط کالونی اور دیگر علاقوں میں سرکار کی طرف سے قریب 50سال پہلے منظور شدہ کئی پلاٹوں کے نقشے محکمہ میں ہی نہیں ہیں۔ جس سے عوام کو" کے جی پی"  بنانے اور عمارت کی تعمیر کرنا ممکن نہیں ہوپارہاہے۔ کل ملا کر بھٹکل کی ترقی رک سی گئی ہے۔ میمورنڈم میں تنظیم کی جانب سے کمشنر صاحب سے اپیل کی گئی ہے کہ فوری طورپر سٹی سروے کے ذریعے کارروائی کی جائے تنظیم نے  شہر کی تمام زمینات کے نقشہ جات کو فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے  اور زور دیا ہے کہ اس سلسلے میں متعلقہ افسران کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کام مکمل کرنے کی ہدایات دیں۔ اس موقع پر تنظیم کے جنرل سکریٹری محی الدین الطاف کھروری ، نائب صدر عنایت اللہ شاہ بندری ، جناب محتشم برنی جعفر، جناب کے ایم اشفاق وغیرہ موجود تھے۔

میمورنڈم کو وصول کرتے ہوئے ایک طرف نائب کمشنر رمیش نے اپنی جانب سے کاروائی کا یقین دلایا  وہیں ریاستی کمشنر منیش مڈگل نے  بھی  نقشہ جات  جاری کرنے کے لئے متعلقہ آفسران کو ہدایات دینے کا یقین دلایا۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں موسلادھار بارش؛ بندر روڈ پر کمپاونڈ کی دیوار گر گئی؛ بائک کو نقصان؛ بارش سے دو بجلی کے کھمبوں پر بھی درخت گرگئے

شہر میں گذشتہ کچھ دنوں سے بارش  کا سلسلہ جاری ہے، البتہ  پیر اور منگل کی درمیانی شب سے  آج منگل شام تک کافی اچھی بارش ریکارڈ کی گئی ہے، ایسے میں  شام کو  ایک مکان کے کمپاونڈ کی دیوار گرنے کی واردات بھی پیش آئی ہے۔

کاروار میں کرناٹکا جرنالسٹ یونین اترکنڑا کے زیراہتمام یکم جولانی کو ہوگا یوم صحافت کا ضلعی پروگرام

کرناٹکا جرنالسٹ یونین اترکنڑا ضلعی شاخ کے زیر اہتمام یکم جولائی کو ضلع پتریکابھون میں ’’یوم صحافت ‘‘ کا پروگرام منعقد کیا جائے گا جس میں سورنا نیوز کے کرنٹ آفیرس ایڈیٹر جئے پرکاش شٹی کو ہرسال دئیے جانے والا ’ہرمن موگلنگ ‘ریاستی ایوارڈ سے نوازا جائے گا۔

بھٹکل اور اطراف کے عوام توجہ دیں: دبئی اور امارات میں حادثات کے بڑھتے واقعات؛ ہندوستانی قونصل خانہ نے جاری کی سفری انشورنس کی ایڈوائزری

دبئی سمیت متحدہ عرب امارات کے مختلف شہروں اور قصبوں  میں  مختلف حادثات میں شدید  طور پر زخمی ہوکر اسپتالوں میں ایڈمٹ ہونے کی  تعداد میں  اضافہ کو دیکھتے ہوئے  اور اسپتالوں  میں اُن کا کوئی پرسان حال نہ ہونے  کے واقعات کا مشاہدہ کرنے کے بعد  ہندوستانی سفارت خانہ کی طرف سے  عرب ...

جانوروں پر حکومت کی مہربانی۔اب دوپہر 12تا3بجے کے دوران رہے گی کھیتی باڑی کی مشقت پر پابندی

کھیتی باڑی اور دیگر محنت و مشقت کے کاموں میں استعمال ہونے والے مویشیوں پر ریاستی حکومت نے بڑے مہربانی دکھاتے ہوئے ایک سرکیولر جاری کیا ہے کہ گرمی کے موسم میں تپتی دھوپ کے دوران دوپہر 12سے 3بجے تک کسان اپنے جانوروں کو کھیت جوتنے یا دوسرے مشقت کے کاموں میں استعمال نہیں کرسکیں گے۔

جانوروں پر حکومت کی مہربانی۔اب دوپہر 12تا3بجے کے دوران رہے گی کھیتی باڑی کی مشقت پر پابندی

کھیتی باڑی اور دیگر محنت و مشقت کے کاموں میں استعمال ہونے والے مویشیوں پر ریاستی حکومت نے بڑے مہربانی دکھاتے ہوئے ایک سرکیولر جاری کیا ہے کہ گرمی کے موسم میں تپتی دھوپ کے دوران دوپہر 12سے 3بجے تک کسان اپنے جانوروں کو کھیت جوتنے یا دوسرے مشقت کے کاموں میں استعمال نہیں کرسکیں گے۔

دُبئی میں 18 برس سے کم عمر بچوں کی ویزہ مفت؛ 15 جولائی سے 15 ستمبر تک رہے گی سہولیت

 متحدہ عرب امارات میں سیاحتی سیزن کے دوران غیر مُلکی سیاحوں کے 18 برس سے کم عمر بچوں کے لیے مفت ویزے کی سہولت فراہم کی جا رہی ہے۔ یہ اعلان فیڈرل اتھارٹی فار آئیڈینٹٹی اینڈ سٹیزن شپ کی جانب سے کیا گیا ہے۔ دُبئی میں ہر سال سیاحتی سیزن کا آغاز 15 جولائی سے ہوتا ہے جو 15 ستمبر تک جاری ...

کاسرگوڈ میں جانور لے جانے کے الزام میں دو لوگوں پر حملہ؛ بجرنگ دل کارکنوں کے خلاف معاملات درج کرنے پر مینگلور کے قریب وٹلا اور بنٹوال میں بسوں پر پتھراو

پڑوسی ریاست کیرالہ کے  کاسرگوڈ میں جانور لے جانے کے الزام میں دو لوگوں پر حملہ اور لوٹ مار کی وارداتوں کے بعد پولس نے جب  بجرنگ دل کارکنوں کے خلاف معاملات درج کئے  تو  مینگلور کے قریب  وٹلا اور بنٹوال  میں  بسوں پر پتھراو اور توڑ پھوڑ کی واردات پیش آئی ہے۔ پتھراو میں   نو ...