بھٹکل:نفرت و بدامنی نہیں امن و بھائی چارہ چاہیے :نیو انگلش پی یو کالج میں سیر ت النبی ﷺ پر خصوصی لکچر کا انعقاد

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 5th December 2017, 9:19 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل:5/ دسمبر(ایس اؤنیوز)اللہ کے آخری نبی اور ساری انسانیت کے رہبر حضرت محمد ﷺ نے اپنی حیات کے کسی بھی لمحہ میں کسی ذی روح سے کبھی نفرت یا دشمنی نہیں کی ،آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنے دشمنوں کو حد سے زیادہ پیار و محبت کرتے ہوئے انہیں ہمیشہ معاف کیاہے ایسے انمول ، انمٹ انسانی اقدار سے پُر آپ ؐ کی زندگی تاقیامت انسانوں کے لئے رہنمائی کرتی رہے گی اور یہی انسانیت آپ ؐ کی زندگی کا مقصد تھا۔ ان خیالات کا اظہار شانتی پرکاشن منگلورو کے مینجر اورجماعت اسلامی ہند کرناٹکا کےمجلس شوریٰ کے رکن محمد کوئیں نےکیا۔

وہ یہاں بھٹکل ایجوکیشن ٹرسٹ کے دی نیو انگلش پی یو کالج میں جماعت اسلامی ہند بھٹکل کی جانب سے منعقدہ ’’حضرت محمد ﷺانسانوں کے رہنما‘‘موضوع پر کالج کے طلبا سے مخاطب تھے۔ محمد کوئیں نے جسمانی اعضاء کی مثال پیش کرتے ہوئے کہاکہ جس طرح جسم کے اعضاء ایک دوسرے کے تعاو ن سے اپنا کام انجام دیتےہیں اسی طرح معاشرے کے تمام طبقات آپس میں ایک دوسرے کو پہچان کر تعاون سے آگے بڑھنا چاہئے، آپسی تال میل ،تعاون فطری اصول ہے۔ ہم اپنے اندر موجود برائیوں کو ، منفی پہلوؤں کو دور کریں ، آپس میں ایک دوسرے شک وشبہ کی نظر سے نہ دیکھیں۔ سماجی صحت کا تحفظ کرتےہوئے آگے بڑھیں۔انہوں نے طلبا سے کہاکہ جدید دنیا کو ’’انسانیت ‘‘ کا نعرہ دے کر انسانیت کا پیغام پھیلائیں۔

پی یو کالج کے پرنسپال وریندر شانبھاگ نے پروگرام کی صدار ت کرتے ہوئے کہاکہ دن بدن بدامنی کا ماحول پیدا ہورہاہے ، معمولی باتوں کو لے کر آپس میں جھگڑے ہونے سے نفرت کا ماحول پیدا ہورہاہے۔ ہمیں نفرت اور بد امنی نہیں بلکہ امن چاہئے ۔ انہوں نے کہاکہ سب کو سمجھ کر دل سے دل ملنے والوں سے ہی ایک بہتر سماج تشکیل پاتاہے، سیاسی وجوہات کی بنا بد امنی پھیل رہی ہے طلبا ایسے خیالات سے دور رہنے کی تلقین کی۔

شعبہ تاریخ کی لکچرر شیاملا کامت نے حضرت محمد ﷺ کی زندگی اور ان کے پیغام پر اپنے خیالات کا اظہارکیا۔ شمس انگلش میڈیم ہائی اسکول کے صدر مدرس محمد رضا مانوی نے افتتاحی کلمات پیش کرتے ہوئے شکریہ اداکیا۔ لکچرر رام چندر بھٹ نے نظامت کی۔ جماعت اسلامی ہندبھٹکل کے امیر مقامی مجاہد مصطفیٰ ، ضلع ناظم محمد طلحہ سدی باپا ، تربیت ایجوکیشن سوسائٹی کے نائب صدر سید اشرف برماور ڈائس پر موجود تھے۔ پروگرام میں طلبا کی کثیر تعداد موجود تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

یلاپور میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں اور تھرڈ پارٹی انشورنس پریمئم میں اضافہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں کے علاوہ موٹر گاڑیوں کے تھرڈ پارٹی انشورنس پریمئم میں اضافہ کے خلاف ٹرک ڈرائیور اور مالکان کی یونین کی جانب سے یلاپور ماگوڈ کراس پر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرین نے نیشنل ہائی وے 63پر ٹائر جلاکر لاریوں کی ہڑتال کی۔

منگلورو:24مقدمات میں مطلوب اور قاتلانہ حملے کے ملزمین گرفتار

الال پولیس نے ایک نوجوان کے قتل کی کوشش کرنے والے محمد مصطفےٰ عرف سونو (21سال) کو گرفتار کرلیا ہے اس کے علاوہ محمد حنیف (30سال)نامی بدنام زمانہ مجرم کوبھی گرفتار کیاگیا ہے جس کے بارے میں بتایا جاتا ہے کہ وہ 24مجرمانہ معاملات میں پولیس کو مطلوب تھا۔

بی جے پی کی شکست کے لیے ہم کسی بھی پارٹی سے اتحاد کے لیے تیارہیں : مایاوتی 

بی جے پی کو شکست دینے کے لئے بی ایس پی کسی بھی پارٹی سے اتحاد کو تیار ہے۔ اس فیصلے کا اعلان خود مایاوتی نے کیا۔ دہلی میں ان کے گھر پر ملک بھر سے آئے بی ایس پی کے کو آرڈنیٹر کی میٹنگ ہوئی۔ مایاوتی نے بی ایس پی لیڈروں کو میڈیا سے دور رہنے کی صلاح دی ہے۔ انہوں نے خبردار کرتے ہوئے کہا ...

الور موب لنچنگ واقعہ: اویسی نے کیا ٹویٹ، مودی حکومت کے چار سال ۔ لنچ راج

آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر اور رکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی نے راجستھان کے الور میں پیش آئے موب لنچنگ کے تازہ واقعہ پر اپنے سخت ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے ایک ٹویٹ کے ذریعہ اس واقعہ کو لے کر مرکز کی مودی حکومت پر سخت حملہ بولا ہے۔  

مودی کی مقبولیت کا ردعمل موب لنچنگ ہے : میگھوال 

راجستھان کے الور ضلع میں ایک بار پھر زر خرید ہجو م کے ذریعہ گائے اسمگلنگ کے شبہ میں اکبر نامی ایک مسلم تاجر کو پیٹ پیٹ کر شہید کر دیا گیا۔اس واقعہ پر مرکزی وزیر ارجن رام میگھوال نے کہا ہے کہ وہ اس واقعہ کی مذمت کرتے ہیں لیکن یہ صرف تنہا واقعہ نہیں ہے ہمیں اس کی تاریخ میں جائیں گے. ...

مرکزی حکومت ماب لنچنگ کے واقعات پرفوری قدم اٹھائے، راجستھان کے تازہ واقعہ نے پھرسے ملک کوشرمسارکیا:مولانااسرارالحق قاسمی

ایک طرف ملک کی عدالت عظمیٰ کی جانب سے ماب لنچنگ کے سلسلے میں قانون سازی کی ہدایت جاری کی جاتی ہے جس کی مخالفت کرتے ہوئے حکومت کی جانب سے کہاجاتاہے کہ قانون بنانے کی ضرورت نہیں ہے اوراس معاملے کوجتنا زیادہ پھیلایاجارہاہے اتنی حقیقت نہیں ہے،مگر دوسری جانب ایسے انسانیت سوز اور ...