بھٹکل:جھوٹی یقین دہانیوں میں ہی بوسیدگی کا شکار پلی ندی کا پُل: عوامی نمائندوں کا منتظر

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 25th September 2016, 9:28 PM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل  :۲۵/ستمبر (ایس او نیوز)  یہاں عوام مسجد کو کنڑی زبان میں ’’پَلیِّ‘‘ کے نام سے موسوم کرتے ہیں ، تعلقہ کے شرالی سے الویکوڑی جانے کے لئے سفر کرتے ہیں تو وہاں ایک ندی بہتی نظر آئے گی ، ندی کے بالکل پاس ہی مسجد ہونے کی وجہ سےیہ  ندی ’’ پلی ندی ‘‘کے نام سے معروف و مشہور ہے۔ ندی کو پار کرنے کے لئے زمانہ قدیم پہلے جو برج تعمیر کیا گیاتھا وہ بوسیدہ ہوگیا ہے ، سیاست دانوں کے جھوٹی یقین دہانیوں کی بدولت  یہ پُل خطرے میں ہے اور اس پر گزرنے والے مسافر جان مٹھی میں باندھ کر گزرنے کی شکایت کررہے ہیں۔

1971-72کے قریب تعمیر کردہ یہ برج صرف سواریوں کے لئے ہی نہیں بلکہ راہ گیروں کے لئے بھی خطرہ بنا ہواہے۔ پُل کانپتاہے، پل کے ستون (پلرس )  ٹکڑے ٹکڑے ہوکر ندی کے حوالے ہوتے جارہے ہیں، پل پر گڑھوں کا راج ہے، پل کی تعمیر کے وقت  سواریوں کی آمد و رفت پیش نظر نہیں تھی ۔ اس قدیم برج کی وسعت بہت ہی کم ہے، لیکن عوام مجبور ہیں کہ اپنے گھر پہنچنے کے لئے اسی پل سے انہیں گزرنا ہے، متبادل راستوں کی تلاش کریں تو 10-12کلومیٹر کی دوری طئے کرنی ہوتی ہے۔ تعلقہ کے الویکوڑی ، تٹی ہکل ، سنبھاوی سمیت اطراف کی دیہات میں 1000گھر ہیں ، 4000سے زائد کی آ بادی ہے، موٹر بائک، آٹور کشا بھی قابل ذکر تعداد میں ہیں۔ اس کے علاوہ ہر گھنٹے کے بعد سرکاری بس بھی اسی پل سے گزرتی ہے، روزانہ سیکڑوں طلبا یہاں سے گزرتے ہیں، حالیہ دنوں میں  الویکوڑی کے علاقے میں کچھ ترقیاں نظر آرہی ہیں، سمندر کنارے درگاپرمیشوری مندر ضلع کی  مشہور مندرہے، ریاست کے مختلف علاقوں سے مندر کے درشن کے لئے بھگت آتے رہتے ہیں۔ اس کے علاوہ کروڑوں روپئے کی لاگت سے بندرگاہ کی تعمیر کی گئی ہے، بہت تھوڑا سا کام باقی ہے اس کے بعد سیکڑوں ماہی گیر ی کی کشتیاں لنگر ڈالیں گی ۔ راستے پر دوڑنے والی سواریوں کی تعداد میں 5دگنی ہوگی ۔ اس سے متصل بھٹکل سے شرالی ، الویکوڑی ، سنبھاوی ، مرڈیشور ، منکی  ہوتے ہوئے اپسرکونڈا تک ماہی گیروں  اور مسافروں کی سہولت کے لئے سرکاری بس دوڑانے کابھی فیصلہ لیا گیا ہے۔ موصولہ اطلاع کے مطابق بہت جلد پہلے مرحلے میں بھٹکل سے شرالی ، الویکوڑی سے ہوتے ہوئے مرڈیشور تک بس چلے گی ۔ ایسی تمام سواریوں کے لئے پلی برج ہی قریبی راستہ ہے، اگر خدانخواستہ پل گرگیا تو علاقہ کے عوام کا خدا ہی حافظ۔ یہ عام لوگوں کی مانگ ہے۔ لیکن عوامی نمائندوں کے غفلت کی کوئی انتہا ہی نہیں ہے۔ گذشتہ 8سالوں سے یہاں کے عوام سرکار کو توجہ دلاتے رہے ہیں، بی جے پی حکومت کے سامنے جو مانگ رکھی گئی تھی وہی مانگ پلی ندی میں  بہہ کر کانگریس کے سامنے آگئی ہے۔5-6سال پہلے پل کی تعمیر کی لاگت 2-3کروڑ روپئے تھی تو اب وہ 5کروڑ پار کر رہی ہے۔ پل کب کانپتا ہے ، کب گرتاہے کہہ نہیں سکتے ۔ بھٹکل میں ترقی کی کوئی کمی نہیں ہے، شہرمیں نئے نئے منصوبہ جات جاری ہوتے رہتے ہیں۔ علاقہ کے عوام کا مطالبہ ہے کہ تعمیراتی کی فہرست میں ہمارے اس خواب کو بھی شامل کرکے پل کی تعمیر کی جاتی ہے تو علاقہ کی قسمت  چمکے گی۔

ماہی گیر لیڈر راماموگیر نے اس سلسلے میں خیال ظاہرکرتے ہوئے کہاکہ گذشتہ 8-7سالوں سے پلی ندی برج کے لئے مسلسل مطالبہ اور مانگ کی جاتی رہی ہے، لیکن یہ صدا بصحرا  ثابت ہورہی ہے۔ سال بہ سال تعمیر ی لاگت میں اضافہ ہوتے جارہاہے، ضلع نگراں کار وزیر آر وی دیش پانڈے کو بھی توجہ دلائی گئی ہے، ضروری اقدام کرنے کا تیقن دئیے ہیں، ہمیں پوری امید ہے کہ موجودہ حکومت اپنی میعاد مکمل کرنے سے پہلے ہماری مانگ پوری کرے گی۔

:SahilOnline Coastal news bulletin in URDU dated 26 September 2016

 

ایک نظر اس پر بھی

کاروار: لاپتہ ماہی گیروں کا معاملہ۔ ڈپٹی کمشنر کے دفتر میں خصوصی اجلاس؛ بنگلہ دیشیوں کو ملازم نہ رکھنے ڈپٹی کمشنر کی تاکید

کشتی سمیت لاپتہ ماہی گیروں کے مسئلے پر ایک خصوصی جائزاتی میٹنگ ضلع شمالی کینرا کے ڈپٹی کمشنر ایس ایس نکول کے دفتر میں منعقد کی گئی، جس میں ماہی گیروں کے لیڈر، پولیس افسران اورتحقیقاتی ٹیم کے افسران شریک ہوئے۔ اس اجلاس میں ساحلی علاقے میں تحفظ اور سیکیوریٹی کے مسئلے پر بھی غور ...

ملیناڈو کراولی ریلوے لائن منصوبے پر جلد عمل درآمد کے لئے ریاستی وزیر اعلیٰ کمار اسوامی کا مرکزی حکومت سے تقاضہ

شیموگہ، شرنگیری، منگلورو جیسے علاقوں سے گزرنے والی ملیناڈو کراولی ریلوے لائن منصوبے پر جلد عمل درآمد کے لئے ریاستی وزیر اعلیٰ کمار ا سوامی نے مرکزی حکومت سے تقاضہ کیا ہے۔

ہبلی۔انکولہ ریلوے منصوبہ:سڑکوں پر احتجاج کرنے سے ریل آنے والی نہیں ہے۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کا انتظار کیا جارہا ہے۔ اننت کمار ہیگڈے کا بیان

مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے نے ہبلی۔انکولہ ریلوے منصوبے میں ہورہی تاخیر کے سلسلے میں کہا کہ اس میں کوئی سیاسی کھیل نہیں ہورہا ہے، بلکہ سپریم کورٹ نے اس منصوبے پر اسٹے لگا رکھاہے اس لئے عدالت کے فیصلے کا انتظار کیا جارہا ہے۔ اس تاخیر کے خلاف راستہ روکویا احتجاجی مظاہرے کرنے سے ...

بھٹکل میں ویلفئیر پارٹی آف انڈیا کے زیراہتمام قومی صدر کی آمد پر خطاب عام : مسلمان  جب تک حکمرانی میں شامل نہیں ہونگے کوئی مسائل حل نہیں ہونگے : قاسم رسول الیاس

آزادی کے 70سالوں بعد بھی مسلمان  سیاسی طور پر بے وزن ، بے وقعت اور پسماندگی کا شکار ہیں۔ جو کل تک اقتدار کے مالک تھےآج ملکی سیاست میں ان کاکوئی کردار نہیں ہے، اس کے برعکس پچھڑے طبقات، دلت، اچھوت ، او بی سی ایک سیاسی قوت کے طورپر ابھر کر اپنی طاقت منوانے میں کامیاب ہیں ان کی ایک ...

کاروار: بوٹ سمیت لاپتہ ہونے والے ماہی گیروں کے اہل خانہ کو گزربسر کے لئے ریاستی حکومت کی طرف سے فی کس ایک لاکھ روپے کی امداد

ضلع شمالی کینرا کے ایڈیشنل ڈی سی ڈاکٹر سریش ایٹنال نے بتایا ہے کہ ملپے بندرگاہ سے ماہی گیری کے لئے نکلنے کے بعد مہاراشٹرا کے حدودمیں لاپتہ ہونے والی سوورنا تریبھوجا ماہی گیر کشتی پر موجود 7مچھیروں کے اہل خانہ کو گزربسر کے لئے ریاستی حکومت کی جانب سے عبوری راحت کے طورپر فی کس ...

لوک سبھا انتخابات 2019؛ کرناٹک میں نئے مسلم انتخابی حلقہ جات کی تلاش ۔۔۔۔۔۔ آز: قاضی ارشد علی

جاریہ 16ویں لوک سبھا کی میعاد3؍جون2019ء کو ختم ہونے جارہی ہے ۔ا س طرح جون سے قبل نئی لوک سبھا کا تشکیل ہونا ضروری ہے۔ انداز ہ ہے کہ مارچ کے اوائل میں لوک سبھا انتخابات کا عمل جاری ہوجائے گا‘ اور مئی کے تیسرے ہفتے تک نتائج کا اعلان بھی ہوجائے گا۔ یعنی دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت 17ویں ...

2002گجرات فسادات: جج پی بی دیسائی نے ثبوتوں کو نظر انداز کردیا: سابق IAS افسر و سماجی کارکن ہرش مندرکا انکشاف

 خصوصی تفتیشی ٹیم عدالت کے جج پی ۔بی۔ دیسائی نے ان موجود ثبوتوں کو نظر انداز کیاکہ کانگریس ممبر اسمبلی احسان جعفری جنہیں ہجوم نے احمدآباد کی گلمرگ سوسائٹی میں فساد کے دوران قتل کردیا تھا انہوں نے مسلمانوں کو ہجوم سے بچانے اور اس وقت کے وزیر اعلیٰ نریندر مودی سے فساد پر قابو ...

ضلع اترکنڑا کے قحط زدہ تعلقہ جات میں بھٹکل بھی شامل؛ کم بارش سے فصلوں پر سنگین اثرات مرتب ہونے کا خدشہ

ضلع اُترکنڑا کے پانچ قحط زدہ تعلقہ جات میں بھٹکل کا بھی نام شامل ہے جس پر عوام میں تشویش پائی جارہی ہے۔ جس طرح  ملک بھر میں سب سے زیادہ بارش چراپونجی میں ہوتی ہے، اسی طرح بھٹکل کا ضلع کا چراپونچی کہا جاتا تھا، مگر اس علاقہ میں بھی  بارش کم ہونے سے بالخصوص کسان برادری میں سخت ...

بھٹکل کے سرکاری اسکولوں میں گرم کھانے کے اناج میں کیڑے مکوڑوں کی بھرمار

  اسکولی بچوں کو مقوی غذا فراہم کرتے ہوئے انہیں جسمانی طورپر طاقت بنانے کے لئے سرکار نے دوپہر کے گرم کھانا منصوبہ جاری کیاہے۔ متعلقہ منصوبے سے بچوں کو قوت کی بات رہنے دیجئے، حالات کچھ ایسے ہیں کہ تعلقہ کے اسکول بچوں کی صحت پر اس کے برے اثرات ہونے کا خطرہ ہے۔ گزشتہ 2مہینوں سے ...

نئے سال کی آمد پر جشن یا اپنامحاسبہ ................ آز: ڈاکٹر محمد نجیب قاسمی سنبھلی

ہمیں سال کے اختتام پر، نیز وقتاً فوقتاً یہ محاسبہ کرنا چاہئے کہ ہمارے نامۂ اعمال میں کتنی نیکیاں اور کتنی برائیاں لکھی گئیں ۔ کیا ہم نے امسال اپنے نامۂ اعمال میں ایسے نیک اعمال درج کرائے کہ کل قیامت کے دن ان کو دیکھ کر ہم خوش ہوں اور جو ہمارے لئے دنیا وآخرت میں نفع بخش بنیں؟ یا ...

بنگلورو شہر میں لاپتہ ہونے والوں کی تعداد میں تشویش ناک اضافہ؛ لاپتہ افراد کو ڈھونڈ نکالنے میں پولس کی ناکامی پر عدالت بھی غیر مطمئن

شہر گلستان بنگلورو میں خاندانی مسائل، ذہنی ودماغی پریشانیاں اور بیماریوں کی وجہ سے اپناگھر چھوڑ کر لاپتہ ہوجانے والوں کی تعداد میں تشویش ناک اضافہ دیکھا جارہا ہے۔  ایک جائزے کے مطابق گزشتہ تین برسوں میں گمشدگی کے جتنے معاملات پولیس کے پاس درج ہوئے ہیں ان میں سے 1500گم شدہ ...