کاروار میں پریس رپورٹروں کے خلاف معاملہ درج کرنے پر بھٹکل میں پریس اسوسی ایشن نے دیا تحصیلدار کو میمورنڈم

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 10th January 2019, 1:56 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 10؍جنوری (ایس اونیوز) گذشہ روز کاروار میں تین  پریس رپورٹروں کے خلاف پولس تھانہ میں معاملہ درج کئے جانے پر کاروار میں اخبارنویسوں نے احتجاج کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر کو میمورنڈم پیش کیا تھا، اُسی طرح کا ایک میمورنڈم بدھ کو بھٹکل تحصیلدار کو بھی پیش کیا گیا ہے جس میں پریس رپورٹروں کے خلاف معاملات درج کرنے پر سخت تشویش ظاہر کی گئی ہے۔

’ بھٹکل پترکرتا سنگھا‘ کے صدر رامچندر کینی نے تحصیلدار کو بتایا کہ  عوام کے مسائل ، سرکاری افسران کی کوتاہی جیسے موضوعات کے ساتھ ساتھ عوام یا افسران کی طرف سے کیے گئے بہتر اقدامات کی ستائش کرنے اور اپنی پیشہ ورانہ خدمات انجام دینے والے صحافیوں کو ہراساں کرنے اور ان پر حملے کرنے کی وارداتیں آج کل بڑھتی جارہی ہیں۔جس کی اسوسی ایشن سخت  مذمت کرتا ہے۔

انہوں نے  وزیر اعلیٰ کماراسوامی کے نام  میمورنڈم پیش کرتے ہوئے کہا   کہ کاروار کے سرکاری انجینئرنگ کالج میں نقل نویسی کی خبر ملی تھی۔ اس تعلق سے رپورٹ تیار کرنے کے لئے 5جنوری کو کاروار کے تین صحافیوں پر کالج میں غیر قانونی طور پر داخل ہونے اور امتحان کے دوران فوٹو گرافی کرنے کا   الزام عاید کرتے ہوئے کاروار کے  چیتاکول پولیس اسٹیشن میں جھوٹا کیس داخل کیا گیا ہے۔ انہوں نے اس طرح کے جھوٹے کیس داخل کرکے پریس کی آزادی پر روک لگانے کی کوشش کو لائق مذمت قرار دیا۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ صحافیوں پر دائر کیا گیا جھوٹا کیس فوری طور پر واپس لیاجائے۔

میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ  کاروار میں ڈپٹی کمشنر دفتر کے احاطے میں پہلے منزلے پر واقع سروے ڈپارٹمنٹ کے باہر صحافیوں کو نیوز بنانے کی اجازت نہیں ہے۔بلکہ وہاں ضلع ڈی سی کی پیشگی اجازت لینے کی نوٹس چسپاں کردی گئی ہےاس کے علاوہ ہر ڈپارٹمنٹ میں نیوز بنانے سے پہلے صحافیوں کو ڈی سی کے دفتر پہنچ کر اجازت لینا ممکن نہیں ہے، اس لئے پریس کو اپنی آزادی کے ساتھ کام کرنے کی اجازت ملنی چاہیے۔میمورنڈم میں عوامی مفاد کو نقصان پہنچانے اورجھوٹے کیس داخل کرکے پریس کی آزادی چھین لینے کی کوشش کرنے والے افسران کے خلاف مناسب قانونی کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

ا س موقع پر  شنکر نائک، وشنو دیواڈیگا، راگھویندرابھٹ، سبرامنیا بھٹ، منموہن نائک ، یحییٰ ہلارے، منجو ناتھ نائک، اودئے نائک، پرسنّا بھٹ،    وسنت دیواڈیگا اور دیگر کئی میڈیا سے جُڑے  افراد موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

ہوناور میں تمام سہولیات سے آراستہ پہلے "سٹی سنٹر " کا شاندار افتتاح : کئی برانڈڈ کمپنیوں کے اسٹال؛ خریداری کی ہر چیز ہوگی دستیاب

 ہوناورسمیت اطراف کے  عوام  کو اپنی ضروریات کی خریداری کے لئے  دور دراز شہروں میں جانے کی ضرورت  نہیں ہوگی کیونکہ شہر میں  ایک شاندار  ’’سٹی سنٹر  ‘‘ کا افتتاح عمل میں آیا ہے۔ کرناٹکا مائنارٹی ڈیولپمنٹ بورڈ کے سابق چیرمن سلیمان یو تلکھنی کے ہاتھوں آج  بروز پیر اس پہلے ...

بھٹکل انجمن انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی اینڈ مینجمنٹ کے 26طلبا کیمپس انٹرویو کے ذریعے منتخب

انجمن انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی اینڈ مینجمنٹ بھٹکل کے کل 26طلبا بنگلورو کی انفوٹک پرائیویٹ لمیٹیڈ کمپنی میں بحیثیت انجنئیر منتخب ہونےکی کالج کے پلیسمنٹ آفیسر پروفیسر توفیق نے پریس ریلیز کے ذریعے جانکاری  دی ہے۔

کمٹہ میں آنند اسنوٹیکر کی پریس کانفرنس :ہندونوجوانوں کو جیل بھیجنا ہی اننت کمار کی بہت بڑی ترقی ؛ نجی تجارت میں مسلمانوں کے ساتھ لین دین

5میعاد کے لئے پارلیمانی رکن منتخب ہوئے اننت کمار ہیگڈے اشتعال انگیز بیانات کے سوا ایک پیسہ کا نالج نہیں ہے۔خلیجی ممالک سے تارکول کا بزنس کرنے والے اننت کمار ہیگڈے  پرائیویٹ بزنس میں مسلمانوں کے ساتھ لین دین کرتےہیں بھارت میں انہیں مسلمانوں کی ضرورت نہیں ہے۔ اترکینرا ...

بغیر لائسنس کا ریوالوررکھنے پر سابق وزیر آنند اسنوٹیکراوران کے 2 ساتھیوں پر کیس درج۔ ریوالور اور کار ضبط

لائسنس رینیو کیے بغیرریوالور رکھنے کے الزام میں سابق ریاستی وزیر اور درپیش پارلیمانی انتخاب میں جنتا دل اور کانگریس کے مشترکہ امیدوار سمجھے جانے والے آنند اسنوٹیکر اور ان کے دیگر ساتھیوں پر کیس درج کیا گیا ہے۔