بھٹکل: سڑی لکڑیوں سے بھی بدترحالت میں مہمان پولس کے رہائشی مکانات

Source: S.O. News Service | Published on 2nd September 2016, 9:35 PM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل:2/ اگست(ایس او نیوز)بھٹکل کے حالات کو کبھی پرامن ہونے نہیں دیا جاتا ، ابھی امن بحال ہونے کی خبریں موصول ہوتی رہتی ہیں تو شرپسند عناصر اور فرقہ پرست سیاست دان کی کرتوتوں سے حالات بگڑنے کی اطلاعات ملتی ہیں۔ یعنی بھٹکل میں امن کو بحال رکھنے کے آثار نظر نہیں آرہے ہیں۔ ویسے کوئی پولس افسر بھی ایسا نہیں ہوگا جس نے یہاں سرویس نہیں کی ہوگی۔ مرکزی ریزرو پولس دستہ ، ریاستی ریزرو دستہ سے لے کر ریاست کے ہر مقام کی پولس بھٹکل کی قائم مہمان بنتی رہی ہے۔ ایسے  حالات میں اعلیٰ افسران کے حکم پر بھٹکل پہنچنے والے  پولس عملے کے رہائشی مکانات کو دیکھیں تووہ  سڑی ہوئی لکڑی سے بھی بدتر حالت  میں ہیں۔

عام طورپر پولس کے متعلق عوام ہمیشہ ایک طرح کراہت محسوس کرتے ہیں، دوری برتنا بہتر سمجھتے ہیں، سفارش وغیرہ کے معاملے میں پولس کے پاس جانے میں ایک طرح خوف محسوس کرتے ہیں۔ کچھ کانسٹبل ایسے بھی ہیں جو ضلع ایس پی سے زائد اختیارات کی طرح رویہ برتتے ہیں، اس میں بھٹکل کے پولس تھانوں میں کب سدھار ہوگا کہنا مشکل ہے۔ لیکن ان سب کو کنارے رکھ کرہماری طرح انسانوں کی زندگی کی نظر سے ان کی زندگی پر نظر ڈالیں تو بہت افسوس ہوتاہے۔ عید، تہوار، احتجاج، جلسہ جلوس، ریلی ، ہنگامہ خیزی ، اشتعال انگیزی جیسے موقعوں پر بھٹکل پولس کے ساتھ حفاظتی اقدامات کے لئے باہر کا قریب 100پولس عملہ یہاں پہنچتاہے۔ ان سب کو رہنے کےلئے پولس پریڈ میدان میں دودو رہائشی کامپلکس دئیے گئے ہیں۔ اپنی ڈیوٹی انجام دینے کےبعد آرام کے لئے پولس انہیں رہائشی مکانات کا رخ کرتےہیں، تعجب کی بات یہ ہے کہ جانوروں کو گوبرڈالنے سمیت آوارہ کتوں کے لئے بھی اسی کامپلکس میں جگہ دی گئی ہے۔ جہاں دیکھووہاں کچرے کا ڈھیرہے، اندر جانے کےلئے ناک بند کرناضروری ہے، اندر کی صورت حال اس  سے بھی ابتر ہے۔ ایسی جگہ پر اپنا ایک ٹاول اوڑھ کر مچھروں کی حکومت میں پولس کو نیند کرنا ہے، ٹائلٹ میں قدم رکھ ہی نہیں سکتے ، گندی بو سانس روک لیتی ہے، اس کے بالمقابل اندرونی نالیاں کچھ حد تک بہتر کہی جاسکتی ہیں۔ اِدھر اُدھر بکھرے بجلی کے اشیا ء،پولس نظام کو اندھیرے میں دھکیل دیتی ہے۔ اعلیٰ افسران کے خوف سے پولس عملہ اس درگت کو ظاہر نہیں کرتا۔ پولس سے پوچھا جائے تو کہا جاتاہے کہ جناب ! ہم کچھ نہیں کہیں گے، بولنا مشکل ہے، تم خود نظارہ کرو تو پتہ چلے گا، یہ کہہ کر معاملے کواپنے سینے میں ہی دبا لیتے ہیں۔

رہائشی مکانات کے حالات کو دیکھنےکے بعد سوال پیدا ہوتاہے  کہ کیا ان کی مرمت و درستی کے لئے محکمہ کی طر ف سے رقم نہیں دی جاتی ہے؟  کچھ دنوں پہلے اپنا سب کچھ چھوڑ چھاڑ کر ریاستی سطح پر احتجاج کے لئے آگے بڑھنے والے پولس کا معاملہ کی سب کو خبر ہے۔ بھٹکل رہائشی مکانات کی ابتر حالت کودیکھتے ہوئے شہر کے سنجیدہ شہریوں نے اعلیٰ افسران، عوامی نمائندوں سےمطالبہ کیاہے کہ وہ اس طرف توجہ دیں۔ اس سلسلے میں ساحل آن لائن نےجب اے ایس پی ڈاکٹر انوپ شٹی سے دریافت کیا تو انہوں نے جواب دیا کہ رہائشی مکانات بہت پرانے ہیں، اس کی درستگی کے لئے اعلیٰ افسران کو تحریری درخواست روانہ کی گئی  ہے، محکمہ کی طر ف سے معاشی طورپر منظوری ملی تو آگے بڑھ سکتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

مینگلور کے قریب بنٹوال میں نابالغہ کی عصمت دری کی کوشش : تین ملزم گرفتار

چہارم جماعت میں زیر تعلیم نابالغہ کی عصمت دری کی کوشش کئے جانے کا واقعہ بنٹوال تعلقہ پانے منگلورو کے قریب گوڈینبلی میں پیش آیاہے۔ اس سلسلے میں بنٹوال شہری تھانہ پولس نےمعاملے کو لےکر تین ملزموں کو گرفتار کیا ہے۔

ہانگل کے ہیرور میں ہوئے تشدد کے واقعات اور غریب مسلمانوں کی گرفتاریوں کے بعد اے پی سی آر ٹیم نے کیا ہانگل دورہ؛ ایس پی سے کی ملاقات

ضلع ہاویری کے ہانگل تعلقہ کے ہیرور میں گنیش تہوار کے دوران ہوئے تشدد کے واقعات کے بعد  کئی غریب مسلمانوں کی گرفتاریوں نیز کئی مسلمانوں کے  تشدد میں زخمی ہونے  کی اطلاعات کے بعد  اے پی سی آر (اسوسی ایشن فور پروٹیکشن آف سیول رائٹس) کی ایک ٹیم  ہانگل پہنچی اور متاثرہ علاقہ کا ...

کیا یلاپور کے رکن اسمبلی ہیبار کودی جائے گی وزارت ؟ کیا دیش پانڈے کو ملے گا لوک سبھا کاٹکٹ ؟ ضلع کی سیات میں ہورہی ہے زبردست ہلچل

یلاپور کے کانگریس رکن اسمبلی شیورام ہیبار وزارت کے لئے شروع کی گئی کسرت کے نتیجے میں ضلع کی سیاست میں ہلچل پیدا ہوگئی ہے۔ دوسری مرتبہ رکن اسمبلی کے طورپر منتخب ہونے والے شیورام ہیبار ، وزارت کے لئے بضد معلوم ہوتےہیں۔ انہیں مطمئن کرنے کےلئے کانگریس کے سنئیر وزیر دیش پانڈے کو ...

پارلیمانی انتخابات سے قبل مسلم سیاسی جماعتوں کا وجود؛ کیا ان جماعتوں سے مسلمانوں کا بھلا ہوگا ؟

لوک سبھا انتخابات یا اسمبلی انتخابات قریب آتے ہی مسلم سیاسی پارٹیاں منظرعام  پرآجاتی ہیں، لیکن انتخابات کےعین وقت پروہ منظرعام سےغائب ہوجاتی ہیں یا پھران کا اپنا سیاسی مطلب حل ہوجاتا ہے۔ اورجو پارٹیاں الیکشن میں حصہ لیتی ہیں ایک دو پارٹیوں کو چھوڑکرکوئی بھی اپنے وجود کو ...

بھٹکل میں سواریوں کی  من چاہی پارکنگ پرمحکمہ پولس نے لگایا روک؛ سواریوں کو کیا جائے گا لاک؛ قانون کی خلاف ورزی پر جرمانہ لازمی

اترکنڑا ضلع میں بھٹکل جتنی تیز رفتاری سے ترقی کی طرف گامزن ہے اس کے ساتھ ساتھ کئی مسائل بھی جنم لے رہے ہیں، ان میں ایک طرف گنجان  ٹرافک  کا مسئلہ بڑھتا ہی جارہا ہے تو  دوسری طرف پارکنگ کی کہانی الگ ہے۔ اس دوران محکمہ پولس نے ٹرافک نظام میں بہتری لانے کے لئے  بیک وقت کئی محاذوں ...

غیر اعلان شدہ ایمرجنسی کا کالا سایہ .... ایڈیٹوریل :وارتا بھارتی ........... ترجمہ: ڈاکٹر محمد حنیف شباب

ہٹلرکے زمانے میں جرمنی کے جو دن تھے وہ بھارت میں لوٹ آئے ہیں۔ انسانی حقوق کے لئے جد وجہد کرنے والے، صحافیوں، شاعروں ادیبوں اور وکیلوں پر فاشسٹ حکومت کی ترچھی نظر پڑ گئی ہے۔ان لوگوں نے کسی کو بھی قتل نہیں کیا ہے۔کسی کی بھی جائداد نہیں لوٹی ہے۔ گائے کاگوشت کھانے کا الزام لگاکر بے ...

اسمبلی الیکشن میں فائدہ اٹھانے کے بعد کیا بی جے پی نے’ پریش میستا‘ کو بھلا دیا؟

اسمبلی الیکشن کے موقع پر ریاست کے ساحلی علاقوں میں بہت ہی زیادہ فرقہ وارانہ تناؤ اور خوف وہراس کا سبب بننے والی پریش میستا کی مشکوک موت کو جسے سنگھ پریوار قتل قرار دے رہا تھا،پورے ۹ مہینے گزر گئے۔ مگرسی بی آئی کو تحقیقات سونپنے کے بعد بھی اب تک اس معاملے کے اصل ملزمین کا پتہ چل ...

گوگل رازداری سے دیکھ رہا ہے آپ کا مستقبل؛ گوگل صرف آپ کا لوکیشن ہی نہیں آپ کے ڈیٹا سےآپ کے مستقبل کا بھی اندازہ لگاتا ہے

ان دنوں، یورپ کے  ایک ملک میں اجتماعی  عصمت دری کی وارداتیں بڑھ گئی تھیں. حکومت فکر مند تھی. حکومت نے ایسے لوگوں کی جانکاری  Google سے مانگی  جو لگاتار اجتماعی  عصمت دری سے متعلق مواد تلاش کررہے تھے. دراصل، حکومت اس طرح ایسے لوگوں کی پہچان  کرنے کی کوشش کر رہی تھی. ایسا اصل ...

کیرالہ اور مڈکیری میں پہاڑ کھسکنے کے واقعات کے بعد کیا بھٹکل محفوظ ہے ؟

جب کسی پر  بوجھ حد سے زیادہ  بڑھ جاتا ہے تو انسان ہو یا  جانور اس کو جھکنا ہی پڑتاہے، اس میں پہاڑ، چٹان، مٹی کے ڈھیر،تودے  سب  کچھ شامل ہیں۔ قریبی ضلع کورگ اورپڑوسی ریاست کیرالہ میں شدید بارش کے نتیجے میں جس طرح پہاڑ کے پہاڑ کھسک گئے اور چٹانیں راستوں پر گرنے کے ساتھ ساتھ  ...