شاہراہ کنارے باکڑا دکانوں کو ہٹانے  بھٹکل محکمہ پولس نے میونسپالٹی کو لکھا خط

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 4th December 2018, 9:47 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل:4؍ڈسمبر (ایس او نیوز)قومی شاہراہ (این ایچ 66) کے کناروں پر باکڑا دکانوں کی وجہ سے شاہراہ پر حد سے زیادہ سواریوں کی گنجانی ہونے سے  حادثات میں اضافہ ہورہاہے، اس پر پابندی  لگانے کے لئے شاہراہ کناروں پر عارضی شیڈ تعمیر کرکے بیوپار کرنے والے  باکڑا دکانداروں کو نکال باہر کرنے کے لئے محکمہ پولس نے بھٹکل میونسپالٹی  کو خط لکھا ہے۔

خط میں کہا گیا ہے کہ بھٹکل کے پورورگا گنیش نگر سے تنگنگنڈی کراس تک دن بدن باکڑا دکانوں میں اضافہ ہورہاہے، سینکڑوں گاہک اپنی سواریوں کےساتھ شاہراہ کنارے کھڑے رہ کر  حادثات کو دعوت دے رہے ہیں۔ اس کے علاو ہ باکڑا بیوپاریوں کی وجہ سے  شاہراہ سے جڑے معاون راستوں سے چلنے والی سواریوں کو  سامنے سے آنے والی سواریوں کا پتہ نہیں چل پانے سے بھی حادثے ہورہے ہیں۔ ان وجوہات کی بنا پر این ایچ 66کے دونوں کناروں پر موجود دکانوں ، باکڑا بیوپاریوں کو نکال باہر کرنےکے لئے کہا گیا ہے۔

دکانداروں سے اپیل : پولس محکمہ کی جانب سے خط موصول ہوتے  ہی بلدیہ صدر محمد صادق مٹا نے بلدیہ افسران کے ساتھ متعلقہ شاہراہ کناروں کا دورہ کرتے ہوئے باکڑا بیوپاریوں کو شاہراہ سے دور رہنے کی اپیل کی۔ کچھ دکاندار شاہراہ سے بالکل متصل بیوپار کررہے ہیں ایسی جگہوں کی   شاہراہ پر لوگوں کا ہجوم ہونے سے ٹرافک کے لئے کافی دقت ہورہی ہے۔ انہوں نے دکانداروں سے کہا کہ  ہم کسی غلط مقصد سے یہ کام نہیں کررہے  ہیں اس لئے دکاندار تعاون کریں۔ بلدیہ چیف آفیسر ڈی  دیوراج، سنئیر صحت عامہ افسر سوجیا سومن وغیرہ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُترکنڑا سے چھٹی مرتبہ جیت درج کرنے والے اننت کمار ہیگڑے کی جیت کا فرق ریاست میں سب سے زیادہ؛ اسنوٹیکر کو سب سے زیادہ ووٹ بھٹکل میں حاصل ہوئے

پارلیمانی انتخابات میں شمالی کینرا کے بی جے پی امیدوار اننت کمار ہیگڈے نے پوری ریاست کرناٹک میں سب سے زیادہ ووٹوں سے کامیابی حاصل کی ہے۔ انہوں نے 479649 ووٹوں کی اکثریت سے کانگریس  جے ڈی ایس مشترکہ اُمیدور  آنند اسنوٹیکر  کو شکست دی ۔

ریاست میں کبھی ہار کا منھ نہ دیکھنے والے سیاسی لیڈروں کی ذلت بھری شکست

ریاست کرناٹکا میں انتخابی میدان میں کبھی ہار کا منھ نہ دیکھنے والے چند نامورسیاسی لیڈران جیسے ملیکا ارجن کھرگے، دیوے گوڈا، ویرپا موئیلی اورکے ایچ منی اَپا وغیرہ کو اس مرتبہ پارلیمانی انتخاب میں انتہائی ذلت آمیز شکست سے دوچار ہونا پڑا ہے۔ 

منگلورو:کلاس میں اسکارف پہننے پر سینٹ ایگنیس کالج نے طالبہ کو دیا ٹرانسفر سرٹفکیٹ۔طالبہ نے ظاہر کیاہائی کورٹ سے رجوع ہونے اور احتجاجی مظاہرے کاارادہ

کلاس روم میں اسکارف پہن کر حاضر رہنے کی پاداش میں منگلورومیں واقع سینٹ ایگنیس کالج نے پی یو سی سال دوم کی طالبہ فاطمہ فضیلا کو ٹرانسفر سرٹفکیٹ دیتے ہوئے کالج سے باہر کا راستہ دکھا دیا ہے۔

بھٹکل میں رمضان باکڑہ کی نیلامی؛ 40 باکڑوں کے لئے میونسپالٹی کو 1126 درخواستیں

رمضان کے آخری عشرہ کے لئے بھٹکل  میں لگنے والے رمضان باکڑہ کی آج میونسپالٹی کی جانب سے  نیلامی کی گئی۔ بتایا گیاہے کہ 40 باکڑوں کی نیلامی کے لئے  میونسپالٹی کے جملہ 1126 درخواست فارمس فروخت ہوئے تھے۔ 

مسلمانوں کے خلاف اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کی بھاری اکثریت کے ساتھ جیت

مسلمانوں کے خلاف ہمیشہ اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کو اس مرتبہ لوک سبھا انتخابات میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اترکنڑا لوک سبھا حلقے کے بی جے پی اُمیدوار اننت کمار ہیگڈے جنہوں نے کہا تھا کہ جب تک اسلام رہے گا دہشت گردی رہے گی،اسی طرح انہوں نے  دستور کی ...

ایچ کے پاٹل نے راہل گاندھی کو بھیجا استعفیٰ

ریاست میں کانگریس کے تشہیری مہم کمیٹی کے صدر ایچ کے پاٹل نے لوک سبھا انتخابات میں ریاست میں پارٹی کی شکست کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفی دینے کی پیشکش کی ہے۔