ملپے کی بوٹ لاپتہ ہونے کے بعد بھٹکل میں کشتیوں کے مالک مچھلیوں کے شکار پر نکلنے تیار۔ لیکن ماہی گیروں نے ساتھ چلنے سے کیا انکار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th January 2019, 8:12 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل8؍جنوری (ایس او نیوز) ملپے ماہی گیری بندرگاہ سے نکلی ہوئی کشتی سات مچھیروں کے ساتھ لاپتہ ہوجانے کے پس منظر میں پچھلے کچھ دنوں سے بندرگاہ پر بطور احتجاج جو کشتیاں لنگر انداز کی گئی ہیں اور ماہی گیری بند رکھی گئی ہے۔ ان تیز رفتارکشتیوں کے مالکان اور ملاحوں نے مالی خسارے کو دیکھتے ہوئے سمندر میں مچھلیوں کے شکار پر نکلنے کا من بنا لیا ہے۔ لیکن مشکل یہ آگئی ہے کہ ان کشتیوں پر کام کرنے والے  ماہی گیر ساتھ دینے کے لئے تیار نہیں ہیں۔

۷ جنوری کی صبح بھٹکل کی نوتعمیر شدہ مچھلی مارکیٹ کے احاطے میں منگلورو، ملپے، بھٹکل سمیت کرناٹکا کے ساحلی علاقے سے جمع ہونے والے اسپیڈ بوٹ پر ماہی گیری کی مزدوری کرنے والے سینکڑوں ماہی گیروں نے کہا کہ لاپتہ ہونے والے مچھیروں کے خاندانوں کو انصاف ملنے تک ہم لو گ کشتیوں پر سوار نہیں ہونگے ۔ اس سلسلے میں ان پر کسی قسم کادباؤ ہرگز نہ ڈالا جائے۔ان کا کہناتھا کہ حکومت کی طرف سے کسی قسم کی یقین دہانی کے بغیر اب اگر واپس سمندر میں مچھلی کے شکار پر نکلیں گے تو پھر 6جنوری کو جوملپے سے ریالی نکالی گئی اور احتجاجی مظاہرہ کیا گیا اس کا کوئی مطلب باقی نہیں رہتا ہے۔ہم لوگ ماہی گیری میں لگ جائیں گے تو پھر حکومت اس معاملے کو بھلا دے گی، اور ہمیں ایسا موقع نہیں دینا چاہیے۔

حالات کے اس بدلتے رخ کو دیکھتے ہوئے اسپیڈبوٹ مالکان اور ملاحوں نے شام کے وقت وینکٹاپور کے ہال میں کشتیوں کے ماہی گیروں کے ساتھ بات چیت کے لئے نشست منعقدکی او رانہیں سمجھا بجھاکر سمندر میں ماہی گیری شروع کرنے پر آمادہ کرنے کی کوشش کی ۔ مگر معلوم ہوا ہے کہ ماہی گیروں نے کسی بھی قسم کی نرمی نہیں دکھائی اور اپنی ضد پر اڑے رہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: عوامی مطالبات پر شرالی میں30 میٹر کے بجائے 45 میٹرپر ہائی وے تعمیر ہوگی، مرکزی وزیر ہیگڈے کی یقین دہانی

شرالی میں عوامی مطالبات کے مطابق ہی 45میٹر کی توسیع کے ساتھ قومی شاہراہ ،فلائی اوور کی تعمیر کے لئے ضروری اقدامات اٹھائے جانے کی مرکزی وزیر اننت کمارہیگڈے نے جانکاری دی۔

بھٹکل میں 24جنوری کو اتی کرم داروں کی اہم میٹنگ

فاریسٹ اتی کرم داروں کے مسائل ابھی جوں کے توں باقی رکھتے ہوئے کوئی حل نکل نہیں آنے پر 24جنوری کی صبح 30-10 بجے بھٹکل تعلقہ اتی کرم داروں کی میٹنگ انعقاد کئے جانے کی بھٹکل تعلقہ فاریسٹ اتی کرم ہوراٹ سمیتی کے صدر راما موگیر نے پریس ریلیز کے ذریعے جانکاری دی ہے۔

بھٹکل تعلقہ کے استاد ریاستی سطح کے برجستہ تقریری مقابلے میں اول

کرناٹکا حکومت تعلیمات عامہ کے زیرا ہتمام بنگلورو میں اساتذہ کے لئے منعقدہ ریاستی سطح کے برجستہ تقریری مقابلے میں تعلقہ کے سرکاری ہائر پرائمری اسکول کوڈسولو کے استاد پرمیشور نائک مرڈیشور اسٹیٹ لیول پر اول انعام کے حق دار بنے ہیں۔

ہم بے قصور تھے، مگر وہ ہماری زبان سمجھنے سے قاصر تھے، ایرانی حراست سے رہا ہونے کے بعد ماہی گیروں کا بھٹکل میں والہانہ استقبال

دبئی سمندر میں ماہی گیر ی کے دوران ایرانی پولیس کی تحویل میں رہنے کے بعد واپس لوٹنے والے کمٹہ اور بھٹکل کے ماہی گیروں کا کہنا ہے کہ ان کے لئے سب سے بڑا مسئلہ زبان کا تھا۔ ایرانی افسران ان کی زبان سمجھ نہیں رہے تھے ۔ اور ایرانی سمندری سرحد پار نہ کرنے کا یقین دلانے کے باوجود وہ لوگ ...

منڈگوڈ کی تبّتی کالونی میں فلمی انداز کا ڈاکہ۔ لاکھوں روپے نقد اورزیورات اڑا لے گئے لٹیرے

منڈگوڈ تعلقہ کی تبّتی کالونی میں سنیچر کے دن رات کے وقت فلمی انداز میں ڈاکہ ڈالا گیا جس میں گھر کے مالکان کو رسی سے باندھنے کے بعدلٹیروں نے گھر میں موجود 7لاکھ روپے نقد اور 4لاکھ روپے مالیت کے سونے کے زیورات پر ہاتھ صاف کردیا گیا۔