بھٹکل شمس الدین سرکل پر انڈر پاس کی تعمیر : قومی شاہراہ فلائی اوور سے گذرے گی؛ سرکل پر 80 سے 85 میٹر زمین ہائی وے کی نذر

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 13th August 2017, 1:10 AM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:12/اگست (ایس اؤنیوز)بارش کا موسم شروع ہوکر  دو مہینے گزرنے کے بعد قومی شاہراہ 66کی توسیع کا کام پھر سے اپنی رفتار پکڑنے کو ہے، اسی کے ساتھ شاہراہ توسیع کو لے کر 30میٹر یا 45میٹر کا تنازعہ بھی تقریباً حل کرلیا گیا ہے، متعینہ پیمانے کے مطابق توسیع کا کام شروع کئے جانے کے لئے نشاندہی کی جارہی ہے۔

قلبِ شہر شمس الدین سرکل سے گزرنے والی قومی شاہراہ کی فلائی اوؤ رکو دیکھتے ہوئے ساگر روڈ اور بندرروڈ کو بہتر انداز میں جوڑنے کے لئے انڈر پاس تعمیر کرنے کا فیصلہ لیا گیا ہے۔نیشنل ہائی وے آفسران کے مطابق فلائی اوور کے ساتھ ساتھ یہاںسرویس روڈ کی بھی ضرورت ہے جس کے لئے متعینہ علاقے سے  زمین کی زائدحصولیابی کرنے پر ہم مجبور ہیں۔ ہائی ولے آفسران کے مطابق شمس الدین سرکلکے لئے نئی شاہراہ کے درمیان سے 85 سے 80میٹر کی زمین کو استعمال کیا جانا یقینی ہے۔

 آفسران کی بات کو مان کر چلیں تو  بھٹکل فاریسٹ دفتر کی عمارت، اس کے روبرو واقع  ستکار ہوٹل ، بس ڈپو کے کمپاؤنڈ کی دیوار، اس کے سامنے والی تجارتی کامپلکس کی عمارتیں سب ہائی وے کی نذر ہوجائیں گی۔ تعلقہ کے پرانے چلیز سے لے کر رنگین کٹہ  تک اور شرالی کوآپریٹیو بینک سے اگلی صراف بلڈنگ تک قومی شاہراہ کی چوڑائی 30میٹر تک محدود کی گئی ہے۔ بقیہ مقامی شاہراہ کی چوڑائی 45میٹر ہوگی۔ قومی شاہراہ کی توسیع کے لئے کل 19.82 ہیکٹرزمین حاصل کی جائے گی ۔ جس میں 1.44ہیکٹر سرکاری زمین ہے۔آفسران نے بتایا کہ  زمین کھونے والے 4053 خاندانوں میں 4001 خاندانوں کو معاوضہ دیا جاچکاہے۔ آفسران کے مطابق  شاہراہ کی توسیع کو لے کر جاری تنازعہ کی وجہ سے دستاویزات متعلقہ افسران کو سونپنے میں ہوئی دیری اور دیگر وجوہات کی بنا پر بقیہ 52خاندانوں کو بہت جلد معاوضہ دے کر زمین کو اپنی تحویل میں لیا جائے گا۔

اُدھر شمس الدین سرکل کے اطراف کے دکاندار اور مکینوں میں 80 سے 85  میٹر زمین ہائی وے کی نذر ہونے کو لے کر سخت ناراضگی پائی جارہی ہے اس تعلق سے خبر موصول ہوئی ہے کہ الگ الگ اداروں کی جانب سے  لوگوں نے دستخطی مہم چلاکر قومی و سماجی ادارہ مجلس اصلاح و تنظیم کو درخواستیں روانہ کی ہیں۔ اس تعلق سے تنظیم کیا فیصلہ کرے گی یہ دیکھنا باقی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کمٹہ بلاک کانگریس دفتر کا ضلعی صدر بھیمنانائک کے ہاتھوں افتتاح

مورور کے قریب اُڈپی ہوٹل سےمتصل کمٹہ بلاک کانگریس کے دفتر کا ضلع کانگریس کمیٹی صدر بھیمنا نائک نے افتتاح کرنے کے بعد خطاب کرتے ہوئے کہاکہ عوام کی سہولت کے لئے دفتر کا افتتاح کیاگیا ہے عوام اپنی شکایات اور مسائل کو یہاں پیش کرکے حل حاصل کرسکتےہیں۔ عوامی مسائل کے سلسلے میں ہی اس ...

بھٹکل کے اتی کرم داروں کو اراضی دستاویزات میں تاخیر کرنے پرراما موگیر برہم؛ ہزاروں آتی کرم داروں کی طرف سے احتجاج کا انتباہ

بیرونی ملک سے ضلع کو آئے تبتی(ٹبیٹین)عوام کو رہائش کے لئے ضلعی انتطامیہ نے مواقع فراہم کیا ہے۔ ضلع میں ہی پیدا ہوکر پرورش پانے والوں کو زمینی دستاویز(حق پترا) دینے کے لئے افسران ہی اہم وجہ سبب ہونے کا تعلقہ اتی کرم دارر ہوراٹ سمیتی کے صدر راما موگیر نے سخت برہمی  کااظہارکیا۔

بھٹکل اسمبلی حلقے میں کھیلا جارہا ہے ایک نیا سیاسی کھیل! کون بنے گا کانگریسی اُمیدوار ؟

یہ کوئی ہنسی مذاق کی بات ہرگز نہیں ہے۔بھٹکل کی موجودہ جو صورتحال ہے اس میں ایک بڑا سیاسی گیم دکھائی دے رہاہے۔ کیونکہ 2018کے اسمبلی انتخابات کی تیاریوں میں لگی ہوئی سیاسی پارٹیاں اپنا امیدوار کون ہوگا اس پر توجہ دینے کے ساتھ ساتھ مخالف پارٹیوں سے کون امیدوار بننے پر ان کی جیت کے ...