بھٹکل شہر کے کامیاب تاجر محمد ابوبکر قمری کے جانشینوں کے خوابوں کی تعبیر ’’قمری ٹاور‘‘کا شاندار افتتاح

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 4th May 2017, 6:58 PM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل:4/مئی (ایس اؤنیوز) انسان کڑی محنت ،مخلصانہ کوششوں کے ذریعے اپنی بہتری اور ترقی کی طرف گامزن ہوتاہے تو فطرت بھی اس کا استقبال کرتی ہے اور وہ سب کچھ نوازتی جاتی ہے جس کی وہ تمنا کرتاہے۔ ایسی ہی ایک مثال بھٹکل کے مثالی تاجر محترم ابوبکر قمری ہیں۔ خلیج میں اپنی بہترین کمائی کو الوداع کہہ کرسال 1982میں بھٹکل میں ایک چھوٹی سے دکان ’’اسٹیل سنٹر‘‘ کے نام سے اپنی تجارت شروع کرنے والے شہر کے مشہور ومعروف تاجر ابوبکر قمری کامیابی کی منزلوں کو طئے کرتے ہوئےاپنے جانشین عرفات، آفتاب اور عمارکے بھرپور تعاون سے جدید زمانے کے تقاضوں کے تحت پینٹنگ کے میدان میں نئی بلندیوں کو چھو رہے ہیں۔

آگے بڑھتے ہوئے ابوبکر قمری صاحب نے1995میں شمس الدین سرکل پر ’’کلر کارنر‘‘پھر 2007میں قومی شاہراہ ،گڈلک روڈ کے روبرو’’کلر ڈیکور‘‘کی شروعات کی ۔ 1982سے انڈین ایشین پینٹس کے ضلعی ڈیلر کے طورپر اپنی بہترین خدمات انجام دینا ان کی تجارت کے کامیابی کی دلیل ہے۔ اور اب شمس الدین سرکل پر فاریسٹ دفتر سے متصل ’’قمری ٹاور‘‘ نامی بہترین تجارتی و رہائشی کامپلکس افتتاح کے ساتھ ہی ان کے جانشینوں کا تجارتی سفر شروع ہوتاہے۔ یہاں تک پہنچنے کے لئے قمری صاحب نے کھٹن راہوں اور کانٹوں سے گزرے ہیں، کئی تکالیف کا سامنا کیا ہے ، دل ،جگر ایک کیا ہے، اور اسی طرح ان کی فرمانبردار اولا د نے ان کا بھر پور تعاون کیا ہے۔ تب کہیں جا کرزندگی میں یہ سہانے دن آئے ہیں۔ اللہ ان کی تجارت میں مزید برکت عطا کرے۔ آمین۔

ابوبکر قمری صاحب کے جانشینوں کے خوابوں کی تعبیر ’’قمر ی ٹاور‘‘ کا افتتاح مرکزی جماعت المسلمین بھٹکل کے چیف قاضی مولانا محمد اقبال مُلا ندوی کی دعا سے2مئی 2017 بروز منگل بعدنماز فجر 7بجے ہوا۔جلسہ کا آغاز مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین بھٹکل کے معاون قاضی مولانا ایمن قمری کی تلاوت قرآن سے ہوا۔ ا س موقع پر مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین بھٹکل کے چیف قاضی مولانا خواجہ معین الدین اکرمی ندوی مدنی ، جامعہ اسلامیہ بھٹکل کے مہتمم مولانا محمد مقبول کوبٹے ندوی نے حلال تجارت، گاہکوں کے ساتھ ایمانداری کے موضوع پر جامع خطاب کیااور تنظیم کے نائب عنایت اللہ شاہ بندری نے بھی موقع کی مناسبت سے اپنے تاثرات کااظہارکیا۔

اسی دن دوپہر 12بجےقمری ٹاور میں ایشین پینٹنگ شوروم کی تقریب رونمائی منعقد ہوئی ، تنظیم کے صدر محمد مزمل قاضیا نے افتتاح کیا۔ اس موقع پر ایشین پینٹس کے ڈی ایم مسٹر آشیش رائے، ریجنل مینجر مہیندر ا جی ، انجمن کے صدر عبدالرحیم جوکاکو سمیت کئی ذمہ داران موجود تھے۔ آفتاب قمری نے مہمانوں کا استقبال کرتے ہوئے نظامت کے فرائض بھی انجام دئیے اورآخر میں شکریہ اداکیا۔ پروگرام کے بعد ظہرانہ کا انتظام کیا گیا تھا۔

نئے افتتاح کردہ قمر ی ٹاور میں

1۔ آفتاب قمری ’’اسٹیل سنٹر ‘‘کی نگرانی کریں گے جہاں Architectural Hardware and Fittings۔گودریج ، Yell۔Spider۔ لنک اینڈ ہارڈویر فٹنگس۔ ایشین پینٹس کے موڈلر کچنس وغیرہ دستیاب ہیں۔

2۔عرفات قمری کی نگرانی میں ’’کلر ڈیکور ‘‘کام کرے گا۔ جہاں آٹوموبائیل پینٹس، انڈسٹریل پینٹس سے آپ اپنے مکانات، دکان ، عمارات کو رنگین کرسکتے ہیں۔

3۔’’اسمارٹ انٹیرئیر ‘‘کی ذمہ داری محمد عمار قمری سنبھالیں گے۔جہاں Sanitary ware۔ پلمبنگ، الکٹریکلس، لائٹس، پلائی ووڈ لامینیٹس وینیر ، ڈیکوریٹیو وال پیانلس، سی سی ٹی وی کیمرے ، بائیو میٹرک انٹرئیر ڈیزائننگ اور 3ڈی رینڈرنگ وغیرہ کی سہولیات ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

پتور: سڑک حادثے میں ولیج اکاؤنٹنٹ ہلاک

پتور کے پونجا گاؤں میں ولیج اکاؤنٹنٹ کے فرائض انجام دینے والاسدیش رائے بالنجا(32سال) اس وقت ہلاک ہوگیا جب وہ اپنی موٹر بائک پر کہیں جارہاتھا تو ایک کار نے اسے ٹکر ماردی۔

ساحلی علاقے میں موسلادھار بارش۔ آسمانی بجلیوں کے نقصانات

ساحلی علاقے میں اور خاص کر جنوبی کینرا ضلع میں اتوار کی شام سے رات دیر گئے تک زبردست بارش ہوئی ہے۔ بادلوں کی گھن گرج کے ساتھ بجلیوں کے کڑکنے کا سلسلہ بھی جاری رہا اور بعض مقامات پر بجلی گرنے سے گھروں کونقصان پہنچنے کی اطلاعات بھی ملی ہیں۔

بھٹکل میں زائد منافع کالالچ دے کر 100کروڑ سے زائد رقم کی دھوکہ دہی کا الزام : کمپنی مالکان کے گھروں کا گھیراؤ اور احتجاج

شہر کے آزاد نگر میں واقع فلالیس نامی کمپنی کے مالکان  پر سو کروڑ سے زائد رقم لے کر فرار ہونے کا الزام عائد کرتے ہوئے  سینکڑوں لوگوں نے آج اُن  کے مکانوں  کا گھیراو کیا اور اپنی رقم واپس دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے احتجاج کیا۔  احتجاجیوں کا کہنا تھا کہ   فلالیس نامی جعلی کمپنی ...

ملک کے موجودہ حالات اور دینی سرحدوں کی حفاظت ....... بقلم : محمد حارث اکرمی ندوی

   ملک کے موجودہ حالات ملت اسلامیہ ھندیہ کےلیے کچھ نئے حالات نہیں ہیں بلکہ اس سے بھی زیادہ صبر آزما حالات اس ملک اور خاص کر ملت اسلامیہ ھندیہ پر آچکے ہیں . افسوس اس بات پر ہے اتنے سنگین حالات کے باوجود ہم کچھ سبق حاصل نہیں کر رہے ہیں یہ سوچنے کی بات ہے. آج ہمارے سامنے اسلام کی بقا ...

پارلیمانی انتخابات سے قبل مسلم سیاسی جماعتوں کا وجود؛ کیا ان جماعتوں سے مسلمانوں کا بھلا ہوگا ؟

لوک سبھا انتخابات یا اسمبلی انتخابات قریب آتے ہی مسلم سیاسی پارٹیاں منظرعام  پرآجاتی ہیں، لیکن انتخابات کےعین وقت پروہ منظرعام سےغائب ہوجاتی ہیں یا پھران کا اپنا سیاسی مطلب حل ہوجاتا ہے۔ اورجو پارٹیاں الیکشن میں حصہ لیتی ہیں ایک دو پارٹیوں کو چھوڑکرکوئی بھی اپنے وجود کو ...

بھٹکل میں سواریوں کی  من چاہی پارکنگ پرمحکمہ پولس نے لگایا روک؛ سواریوں کو کیا جائے گا لاک؛ قانون کی خلاف ورزی پر جرمانہ لازمی

اترکنڑا ضلع میں بھٹکل جتنی تیز رفتاری سے ترقی کی طرف گامزن ہے اس کے ساتھ ساتھ کئی مسائل بھی جنم لے رہے ہیں، ان میں ایک طرف گنجان  ٹرافک  کا مسئلہ بڑھتا ہی جارہا ہے تو  دوسری طرف پارکنگ کی کہانی الگ ہے۔ اس دوران محکمہ پولس نے ٹرافک نظام میں بہتری لانے کے لئے  بیک وقت کئی محاذوں ...

غیر اعلان شدہ ایمرجنسی کا کالا سایہ .... ایڈیٹوریل :وارتا بھارتی ........... ترجمہ: ڈاکٹر محمد حنیف شباب

ہٹلرکے زمانے میں جرمنی کے جو دن تھے وہ بھارت میں لوٹ آئے ہیں۔ انسانی حقوق کے لئے جد وجہد کرنے والے، صحافیوں، شاعروں ادیبوں اور وکیلوں پر فاشسٹ حکومت کی ترچھی نظر پڑ گئی ہے۔ان لوگوں نے کسی کو بھی قتل نہیں کیا ہے۔کسی کی بھی جائداد نہیں لوٹی ہے۔ گائے کاگوشت کھانے کا الزام لگاکر بے ...

اسمبلی الیکشن میں فائدہ اٹھانے کے بعد کیا بی جے پی نے’ پریش میستا‘ کو بھلا دیا؟

اسمبلی الیکشن کے موقع پر ریاست کے ساحلی علاقوں میں بہت ہی زیادہ فرقہ وارانہ تناؤ اور خوف وہراس کا سبب بننے والی پریش میستا کی مشکوک موت کو جسے سنگھ پریوار قتل قرار دے رہا تھا،پورے ۹ مہینے گزر گئے۔ مگرسی بی آئی کو تحقیقات سونپنے کے بعد بھی اب تک اس معاملے کے اصل ملزمین کا پتہ چل ...

گوگل رازداری سے دیکھ رہا ہے آپ کا مستقبل؛ گوگل صرف آپ کا لوکیشن ہی نہیں آپ کے ڈیٹا سےآپ کے مستقبل کا بھی اندازہ لگاتا ہے

ان دنوں، یورپ کے  ایک ملک میں اجتماعی  عصمت دری کی وارداتیں بڑھ گئی تھیں. حکومت فکر مند تھی. حکومت نے ایسے لوگوں کی جانکاری  Google سے مانگی  جو لگاتار اجتماعی  عصمت دری سے متعلق مواد تلاش کررہے تھے. دراصل، حکومت اس طرح ایسے لوگوں کی پہچان  کرنے کی کوشش کر رہی تھی. ایسا اصل ...