بھٹکل کے انتخابی افسران کے تبادلے کا مطالبہ لے کر جے ڈی ایس نے بلائی پریس کانفرنس

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 15th April 2018, 12:59 AM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:14/اپریل (ایس او نیوز)اترکنڑا ضلع انتظامیہ کانگریس دفتر میں منتقل ہوگئی ہے، یہ لوگ کانگریس کی مرضی کے مطابق کام کررہے ہیں، اس بات کا الزام  جےڈی ایس کے ضلعی جنرل سکریٹری ایم ڈی نائک نے  لگایا ہے۔

سنیچر کی شام بندر روڈ سکینڈکراس پر واقع جے ڈی ایس دفتر میں پریس کانفرنس کا انعقاد کرتے ہوئے بھٹکل جے ڈی ایس نے الیکشن کمیشن کو  مخاطب کرتے ہوئے کہا  کہ گذشتہ کئی سالوں سےبھٹکل میں ہی ٹھکانہ ڈالے ہوئے سرکاری افسران کو ہی اب الیکشن آفیسران کے طورپر نامزد کیا گیا ہے۔ انتخابات میں شفافیت کو باقی رکھنا ہے تو پھر الیکشن کمیشن کو چاہئے کہ وہ فوری طورپر ایسے افسران کابھٹکل سے تبادلہ کرنے کے لئے ضروری اقدامات کریں۔

لیڈران نے کہاکہ بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر اور تحصیلداردفتر میں 7-8برسوں سے خدمات انجام دینے والے افسران کےسیاست دانوں سے بہتر تعلقات ہیں،ایسے میں انصاف پر مبنی انتخابات کے تعلق سے ان کی خدمات کے سنگین اثرات ہونا یقینی ہے۔ تحصیلدار دفتر میں بدعنوانی اور رشوت خوری حد سے زیادہ بڑھ گئی ہے، مثال پیش کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ  ناگما گڈ گونڈ نامی 70سالہ بزرگ عورت سندھیاسرکھشامنصوبے کے لئے تین مرتبہ درخواست دے چکی ہے، منصوبے سے استفادہ کی اہل ہونے کے باوجود اس کی عرضی کو ردکیاگیا ہے۔ اس کے علاوہ ایک ہی گھر میں بیوی اور بیٹے کو الگ الگ 2لاکھ روپئے اور گھر مالک کو 20ہزار روپئے کی انکم سرٹیفکٹ دی گئی ہے ۔

جے ڈی ایس نے سرکاری افسران پر سیاسی دباؤ میں کام کرنےکا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اسی کے  نتیجےمیں ایسے غلط کام انجا م دئیے جارہے ہیں۔ جے ڈی ایس لیڈران کے مطابق  جب الیکشن کے لئے ایسے افسران کو نامزد کیاجاتاہے تو کیا نتائج آسکتے ہیں آپ خود اس کا اندازہ کرسکتے ہیں۔

فی الحال جے ڈی ایس کی طرف سے الیکشن کمیشن کو بھٹکل ہوناور اسمبلی حلقہ کے 26سیکٹر افسران کے تبادلہ کا مطالبہ کرتے ہوئے الیکشن کمیشن کو میمورنڈم پیش کیا ہے۔ جے ڈی ایس لیڈران کا کہنا ہے کہ کمیشن نے صرف 2لوگوں کا تبادلہ کیاہے، بقیہ افسران اپنے عہدوں پر ہی رہ کر خدمات انجام دے رہے ہیں، لیڈران نے  منتبہ کیا کہ  فوری کاروائی نہیں ہوئی تو معاملےکو لے کر احتجاج کرنا ہماری مجبوری ہوگی۔

جے ڈی ایس امیدوار عنایت اللہ شاہ بندری کے متعلق کہاکہ ہمارے امیدوار عنایت اللہ شاہ بندری کے متعلق حلقہ بھر میں اچھی رائے ہے، دیہاتوں میں پارٹی اور امیدوار کے حق میں تشہیر جاری ہے عوام کا رجحان بھی پارٹی کی طرف ہے، جس کودیکھتے ہوئے ہم کہہ سکتےہیں کہ ہماری جیت یقینی ہے۔ بھٹکل سکریٹری کرشنانند پائی ، یوتھ صدر پانڈونائک، دیاویا نائک، گنپتی بھٹ، دتاتریا نائک، عبدالصمد وغیرہ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار:انکولہ ۔ہبلی ریلوے لائن کی سدراہ بنے ماحولیاتی این جی اوز کو ملنے والی مالی امداد کی جانچ کریں : رکن اسمبلی روپالی نائک کامرکزی ریلوے وزیر سے مطالبہ

ریاست کے ساحلی علاقے سے شمالی کرناٹک  کو جوڑنے والی ’قسمت کی ریکھا‘ انکولہ ۔ ہبلی ریلوے لائن کی تعمیرمیں جو ماحولیاتی اداروں ، این جی اوزاور ماہرین سدراہ بنے ہوئے ہیں دراصل یہ تمام  بیرونی ممالک کی  کروڑوں دولت کے تعاون سے بےبنیاد چیخ وپکار کررہے ہیں کاروار انکولہ کی رکن ...

کاروار میں انکولہ ۔ہبلی ریلوے لائن منصوبےکو جاری کرنےعوامی احتجاج : قومی شاہراہ بند کرنے پر احتجاجی پولس کی تحویل میں

انکولہ۔ ہبلی ریلوے لائن منصوبہ، سرحد علاقہ کاروار میں صنعتوں کا قیام سمیت مختلف مانگوں کو لے کر لندن برج پر قومی شاہراہ کو بند کرتے ہوئے احتجاج کی تیاری میں مصروف کنڑا چلولی واٹال پارٹی کے واٹال ناگراج سمیت 21جہدکاروں کو پولس نے گرفتار کرنے کے بعد رہاکردیا۔

لوک سبھاانتخابات کی تیاری میں مصروف الیکشن کمشن :اتراکنڑا  ضلع میں 11.40 لاکھ رائے دہندگان : 14ہزار ووٹرس آؤٹ تو 12ہزار ووٹرس اِن

الیکشن کمیشن  آئندہ ہونےو الے لوک سبھا انتخابات کی تیاری میں مصروف ہے۔اندراج و اخراج   اور ترمیم کے بعد تشکیل دی گئی  رائے دہندگان کی  فہرست کے مطابق ضلع کے 6ودھان سبھا حلقہ جات میں کل 11،40،316 ووٹر ہیں۔ چونکہ انتخابات کے قریب تک ووٹروں کے اندراج کے لئے موقع دیا گیا ہے تو رائے ...

شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر ہزاروں عوام  شاہراہ روک کیا  احتجاج : مجموعی استعفیٰ کا انتباہ اور الیکشن بائیکاٹ کا اعلان

تعلقہ کے شرالی میں دن بدن قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر معاملہ گرم ہوتا جارہاہے۔ شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع 45میٹر سے کم کرکے 30میٹر کئے جانےکی مخالفت کرتے ہوئے جمعرات کو ہزاروں لوگو ں نے قومی شاہراہ روک کر سخت احتجاج درج کیا۔ اس دوران عوامی مانگوں کو منظوری نہیں دی گئی تو ...