بھٹکل:بیویوں کے   جہیز ہراسانی  کے الزام سے  شوہر بری

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 11th October 2018, 8:25 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:11/اکتوبر(ایس اؤ نیوز) دوسری شادی کرنے کے بعد بیوی کو ازدواجی زندگی میں اذیت  دے کر جہیز کی مانگ کرتے ہوئے گھر بھیجنے کے الزام کا سامنا کرنے والا مرڈیشور ، ماولی -1کے مکین ایشور بے قصور رہا ہوا ہے۔

ایشور 1985جون 11کو پہلی شادی کی تھی۔ لیکن بچے نہیں ہونے کی وجہ سے بیوی کو ستایا کرتاتھا، اس کی ہراسانی سے تنگ آکر پہلی بیوی نے ہی2009اکتوبر 15کو  کنداپور ، ساستان کی ایک لڑکی کے ساتھ اپنے شوہر کی دوسری شادی کی۔ لیکن دوسری بیوی سے بھی اولاد نہیں ہوئی تو اس کو بھی ملزم ہراساں کا الزام لگایاگیا۔ کنداپور کوٹا تھانہ پولس نے ملزم کے خلاف چارج شیٹ داخل کی۔ چارج شیٹ میں ملزم ایشورکے خلاف  پہلی بیوی سمیت کل 9لوگوں نے گواہی دی تھی۔مگر  عدالت میں الزام  ثابت نہیں  ہونے کی وجہ سے ملزم  بے قصور بتاتے ہوئے فیصلہ سنایاگیا۔ قابل غور بات یہ ہے کہ ملزم کی  دو بیویوں کے متعلق پولس نے قانون کی ان دیکھی کرتے ہوئے جو چارج شیٹ داخل کی تھی عدالت اس کو رد کیا ہے۔ ملزم کی طرف سے مشہور وکیل روی کرن مرڈیشور نے پیروی کی ۔

ایک نظر اس پر بھی

ایران میں گرفتار اُترکنڑا کے ماہی گیروں کی فوری رہائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کرناٹکا این آر آئی فورم کا دبئی میں ہندوستانی سفارت کار سے ملاقات

  ریاست کرناٹک کے ضلع اُترکنڑا کے 18 ماہی گیروں کی ایران میں گرفتاری کے بعد اُن کی رہائی کی کوششیں تیز ہوگئی ہیں۔ اس تعلق سے تازہ اطلاع یہ ہے کہ  دبئی میں موجود ماہی گیروں کے رشتہ داروں نے  کرناٹکا این آر فورم کے  اہم ذمہ دار اور قائد قوم جناب ایس ایم سید خلیل الرحمن صاحب سے ...