بھٹکل :سڑک حفاظت کے متعلق عوامی بیداری پیدا کرنے کنیا کماری سے کشمیر تک پیدل یاترا

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 10th August 2018, 9:09 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل  :10/ اگست (ایس اؤ نیوز)  سڑک حفاظت کے متعلق عوامی بیداری پیدا کرنے کے لئے کنیا کماری سے کشمیر تک پیدل یاترا پر نکلے 40سالہ سبراہمنین نارائن کو بھٹکل میں روٹری کلب کےممبران میں جمعہ کی شام استقبال کیا۔

سبراہمنین اپنے 2ماہ کی پیدل یاترا میں 10ریاستوں اور 20اہم شہروں سے گزریں گے۔ ان کی پیدل یاترا کامقصد نہ صرف سڑک تحفظ کے متعلق بیداری پیدا کرنا ہے بلکہ ملک کی مختلف ریاستوں کی سڑکوں کے معیار اور تعمیر کے متعلق مطالعہ بھی کرناہے۔ایک کیمرہ نصب کردہ انوا کار  ان کے پیچھے چلتے ہوئے ان کی یاتر ا کو ریکارڈ کرتی رہتی ہے۔ اس موقع پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ہر سال ملک میں 1.5لاکھ لوگ سڑک حادثات میں جاں بحق ہونا  تشویش کی بات ہے۔ اپنا سفر مکمل ہونے کے بعد اس کی رپورٹ مرکزی ٹرافک اور قومی شاہراہ محکمہ کے وزیر وک سونپے جانےکی بات کہی۔ اس موقع پر روٹرین راجیش نایک، شری نواس  پڈیار، روی نمبیار،جلال الدین کاسرگوڈ، مشتاق بھاوی کٹی ، ذیشان خطیب، پرشانت کامت وغیرہ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

#می ٹو لہر کی زد میں آگئے بی جے پی کے مرکزی وزیر سدانندگوڈا اورسابق وزیر شیوانند نائک 

ملک میں بھر میں کام یا پیشے سے متعلقہ مقامات پر مرد ساتھیوں کی طرف سے خواتین کی جنسی ہراسانی کے معاملات کو عام کرنے کی جو لہر’’ #می ٹو‘‘ (میرے ساتھ بھی ۔۔یا میں بھی)کے نام سے چل پڑی ہے اس کی زد میں فلمی اداکاروں کے بعد اب صحافی اور سیاست دان بھی آگئے ہیں۔

دبئی کے قریب عجمان میں شروع ہورہا ہے نوائط پرئمیر لیگ کا شاندار کرکٹ ٹورنامنٹ؛ پہلے نام درج کرنے والی چھ ٹیموں کو ملے گا ٹورنامنٹ میں موقع

متحدہ عرب امارات کے شہر عجمان میں جنوری 2019 کو نوائط پرئمیر لیگ (این پی ایل) کاشاندار کرکٹ ٹورنامنٹ منعقد کیا جارہا ہے ، جس  میں دبئی یا متحدہ عرب امارات کے شہروں میں مقیم  بھٹکل، شرالی، مرڈیشور اور منکی کے کھلاڑی اپنے جوہر دکھلا سکیں گے۔ اس بات کی اطلاع  این پی ایل کے کنوینر ...

ہوناور:پریش میستاکی پراسرار موت کے معاملے میں نیا خلاصہ۔ واردات سے پہلے بند کردیا گیا تھا سی سی کیمرہ !

ہوناور میں فرقہ وارانہ کشیدگی کے دوران پریش میستانامی نوجوان کی پراسرار موت کو سنگھ پریوار کی طرف سے فرقہ وارانہ قتل قرار دیا جارہا تھا۔لیکن سی بی آئی کی تحقیقات دوران اس معاملے نے اب ایک نیا رخ لے لیا ہے۔