بھٹکل کے سابق رکن اسمبلی منکال وئیدیا پٹرول، ڈیزل ڈکیتی معاملے میں باعزت بری

Source: S.O. News Service | Published on 8th November 2018, 6:18 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل8؍نومبر (ایس اونیوز) سال 2009میں کنداپور تعلقہ کے ہوسانگڈی میں ہوئے ڈیزل اورپٹرول ٹینکر ڈکیتی معاملے میں کنداپور کے ایڈیشنل سیشنس ڈسٹرکٹ کورٹ نے بھٹکل کے سابق رکن اسمبلی منکال وئیدیا سمیت 9ملزمین کو باعزت بری کردیا ہے۔

5مئی 2009کو صبح کی اولین ساعتوں میں پیش آئے اس پٹرول ڈیزل ٹینکر ڈکیتی معاملے میں پرکاش بھنڈاری ، منجو عرف منجو ناتھ، پرکاش پجاری، ستیش پجاری، ستیش شیٹی اور شیکھر پجاری پر الزام لگایا گیا تھا کہ انہوں نے کنداپور کیرے کٹے کے انتھونی چرچ کے پاس پارک کیا گیا پیٹرول اور ڈیزل ٹینکر کے ڈرائیور اور کلینر کے ہاتھ پیر اور منھ پر کپڑا باندھ کر ٹینکر اغوا کرلیا تھا۔ پھر موہن پجاری نامی ایک او رملزم کی معرفت اس ٹینکر میں موجود پٹرول اور ڈیزل منکال وئیدیا اور راماموگیر کی ملکیت والے پٹرول بنک میں فروخت کیا گیا تھا۔اس ضمن میں تحقیقات کے بعد پولیس نے عدالت میں چارج شیٹ داخل کی تھی۔

عدالت میں اس مقدمے کی سماعت کے دوران 33گواہوں کے بیانات درج کیے گئے۔ لیکن اس وقت کنداپورکے تحصیلدار راجو موگویر کے سامنے پولیس نے ملزمین کی جو شناختی پریڈ کی تھی، اس میں گواہوں کی طرف سے صحیح شناخت کروانے میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا تھا۔اس کے علاوہ ڈکیتی کے وقت بھارت پٹرولیم کی طرف سے ٹینکر میں 4ہزار لیٹر پٹرول اور 8ہزار لیٹر ڈیزل سپلائی کیے جانے کے تعلق سے مناسب ثبوت بھی عدالت میں پیش نہیں کیے جاسکے۔

مقدمے کی مکمل سماعت کے بعد سیشنس جج پرکاش کھنڈیری نے ناکافی ثبوت کی بنیاد پر تمام ملزمین کو بے قصور قراردیتے ہوئے اس مقدمے سے باعزت بری کردیاہے۔ 

خیال رہے کہ منکال وئیدیا پر چلنے والا یہ مقدمہ ان کے مخالفین کے لئے ایک ہتھیار بن گیا تھا اور اس مسئلے کو اچھال کر اس سے سیاسی فائدہ اٹھانے کی کوشش کی جارہی تھی۔ حالیہ اسمبلی الیکشن کے دوران بھی اس مقدمے کو بنیاد بناکر منکال وئیدیا کے خلاف مہم چلائی گئی تھی۔ سمجھا جاتا ہے کہ اب عدالت کے تازہ فیصلے کے تحت انہیں باعزت بری کیے جانے کے بعد ایک طرف منکال وئیدیا نے راحت کی سانس لی ہوگی تو دوسری طرف ان کے کٹر مخالفین کی بولتی بند ہوگئی ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار:انکولہ ۔ہبلی ریلوے لائن کی سدراہ بنے ماحولیاتی این جی اوز کو ملنے والی مالی امداد کی جانچ کریں : رکن اسمبلی روپالی نائک کامرکزی ریلوے وزیر سے مطالبہ

ریاست کے ساحلی علاقے سے شمالی کرناٹک  کو جوڑنے والی ’قسمت کی ریکھا‘ انکولہ ۔ ہبلی ریلوے لائن کی تعمیرمیں جو ماحولیاتی اداروں ، این جی اوزاور ماہرین سدراہ بنے ہوئے ہیں دراصل یہ تمام  بیرونی ممالک کی  کروڑوں دولت کے تعاون سے بےبنیاد چیخ وپکار کررہے ہیں کاروار انکولہ کی رکن ...

کاروار میں انکولہ ۔ہبلی ریلوے لائن منصوبےکو جاری کرنےعوامی احتجاج : قومی شاہراہ بند کرنے پر احتجاجی پولس کی تحویل میں

انکولہ۔ ہبلی ریلوے لائن منصوبہ، سرحد علاقہ کاروار میں صنعتوں کا قیام سمیت مختلف مانگوں کو لے کر لندن برج پر قومی شاہراہ کو بند کرتے ہوئے احتجاج کی تیاری میں مصروف کنڑا چلولی واٹال پارٹی کے واٹال ناگراج سمیت 21جہدکاروں کو پولس نے گرفتار کرنے کے بعد رہاکردیا۔

لوک سبھاانتخابات کی تیاری میں مصروف الیکشن کمشن :اتراکنڑا  ضلع میں 11.40 لاکھ رائے دہندگان : 14ہزار ووٹرس آؤٹ تو 12ہزار ووٹرس اِن

الیکشن کمیشن  آئندہ ہونےو الے لوک سبھا انتخابات کی تیاری میں مصروف ہے۔اندراج و اخراج   اور ترمیم کے بعد تشکیل دی گئی  رائے دہندگان کی  فہرست کے مطابق ضلع کے 6ودھان سبھا حلقہ جات میں کل 11،40،316 ووٹر ہیں۔ چونکہ انتخابات کے قریب تک ووٹروں کے اندراج کے لئے موقع دیا گیا ہے تو رائے ...

شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر ہزاروں عوام  شاہراہ روک کیا  احتجاج : مجموعی استعفیٰ کا انتباہ اور الیکشن بائیکاٹ کا اعلان

تعلقہ کے شرالی میں دن بدن قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر معاملہ گرم ہوتا جارہاہے۔ شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع 45میٹر سے کم کرکے 30میٹر کئے جانےکی مخالفت کرتے ہوئے جمعرات کو ہزاروں لوگو ں نے قومی شاہراہ روک کر سخت احتجاج درج کیا۔ اس دوران عوامی مانگوں کو منظوری نہیں دی گئی تو ...

شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر ہزاروں عوام  شاہراہ روک کیا  احتجاج : مجموعی استعفیٰ کا انتباہ اور الیکشن بائیکاٹ کا اعلان

تعلقہ کے شرالی میں دن بدن قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر معاملہ گرم ہوتا جارہاہے۔ شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع 45میٹر سے کم کرکے 30میٹر کئے جانےکی مخالفت کرتے ہوئے جمعرات کو ہزاروں لوگو ں نے قومی شاہراہ روک کر سخت احتجاج درج کیا۔ اس دوران عوامی مانگوں کو منظوری نہیں دی گئی تو ...

بھٹکل انجمن بی بی اے کی طالبہ مریم حرا کو  کرناٹکا یونیورسٹی سطح پر دوسرا رینک

انجمن انسٹی ٹیوٹ آف مینجمنٹ بھٹکل کی طالبہ مریم حرابنت ارشاد ائیکری ڈاٹا نے کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کے زیر اہتمام اپریل 2018میں منعقد ہوئی بی بی اے امتحانات میں پوری یونیورسٹی میں دوسرارینک حاصل کرتے ہوئے انجمن اور شہر کا نام روشن کیا ہے۔