بھٹکل کے سابق رکن اسمبلی منکال وئیدیا پٹرول، ڈیزل ڈکیتی معاملے میں باعزت بری

Source: S.O. News Service | Published on 8th November 2018, 6:18 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل8؍نومبر (ایس اونیوز) سال 2009میں کنداپور تعلقہ کے ہوسانگڈی میں ہوئے ڈیزل اورپٹرول ٹینکر ڈکیتی معاملے میں کنداپور کے ایڈیشنل سیشنس ڈسٹرکٹ کورٹ نے بھٹکل کے سابق رکن اسمبلی منکال وئیدیا سمیت 9ملزمین کو باعزت بری کردیا ہے۔

5مئی 2009کو صبح کی اولین ساعتوں میں پیش آئے اس پٹرول ڈیزل ٹینکر ڈکیتی معاملے میں پرکاش بھنڈاری ، منجو عرف منجو ناتھ، پرکاش پجاری، ستیش پجاری، ستیش شیٹی اور شیکھر پجاری پر الزام لگایا گیا تھا کہ انہوں نے کنداپور کیرے کٹے کے انتھونی چرچ کے پاس پارک کیا گیا پیٹرول اور ڈیزل ٹینکر کے ڈرائیور اور کلینر کے ہاتھ پیر اور منھ پر کپڑا باندھ کر ٹینکر اغوا کرلیا تھا۔ پھر موہن پجاری نامی ایک او رملزم کی معرفت اس ٹینکر میں موجود پٹرول اور ڈیزل منکال وئیدیا اور راماموگیر کی ملکیت والے پٹرول بنک میں فروخت کیا گیا تھا۔اس ضمن میں تحقیقات کے بعد پولیس نے عدالت میں چارج شیٹ داخل کی تھی۔

عدالت میں اس مقدمے کی سماعت کے دوران 33گواہوں کے بیانات درج کیے گئے۔ لیکن اس وقت کنداپورکے تحصیلدار راجو موگویر کے سامنے پولیس نے ملزمین کی جو شناختی پریڈ کی تھی، اس میں گواہوں کی طرف سے صحیح شناخت کروانے میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا تھا۔اس کے علاوہ ڈکیتی کے وقت بھارت پٹرولیم کی طرف سے ٹینکر میں 4ہزار لیٹر پٹرول اور 8ہزار لیٹر ڈیزل سپلائی کیے جانے کے تعلق سے مناسب ثبوت بھی عدالت میں پیش نہیں کیے جاسکے۔

مقدمے کی مکمل سماعت کے بعد سیشنس جج پرکاش کھنڈیری نے ناکافی ثبوت کی بنیاد پر تمام ملزمین کو بے قصور قراردیتے ہوئے اس مقدمے سے باعزت بری کردیاہے۔ 

خیال رہے کہ منکال وئیدیا پر چلنے والا یہ مقدمہ ان کے مخالفین کے لئے ایک ہتھیار بن گیا تھا اور اس مسئلے کو اچھال کر اس سے سیاسی فائدہ اٹھانے کی کوشش کی جارہی تھی۔ حالیہ اسمبلی الیکشن کے دوران بھی اس مقدمے کو بنیاد بناکر منکال وئیدیا کے خلاف مہم چلائی گئی تھی۔ سمجھا جاتا ہے کہ اب عدالت کے تازہ فیصلے کے تحت انہیں باعزت بری کیے جانے کے بعد ایک طرف منکال وئیدیا نے راحت کی سانس لی ہوگی تو دوسری طرف ان کے کٹر مخالفین کی بولتی بند ہوگئی ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل :میں ہتک آمیز جذبات نہیں رکھتا : پنچایت ممبر کی الزام تراشی کا رکن اسمبلی نے دیا جواب

ہوناور تعلقہ کیلگی نور پنچایت موگلی ائییپا مندر کونکال باہر کرنےکے معاملے میں تعلقہ پنچایت ممبر گنپیا گوڈا کی طرف سےلگائے گئے الزامات کا بھٹکل رکن اسمبلی سنیل نائک نے تحریری دیتے ہوئے کہا ہےکہ میں ایک شریف خاندان سے تعلق رکھتاہوں اور میری پرورش  انہی کے درمیان ہوئی ہے۔ غلط ...

کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ اتھلیٹک مقابلے میں مرڈیشور بینا وئیدیا ڈگری کالج کی طالبات  رنر اپ

ہوناور کے ایس ڈی ایم ڈگری کالج میں منعقدہ  کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کے اتھلیٹک کھیل مقابلوں میں مرڈیشور کی بینا وئیدیا کامرس اور سائنس ڈگری کالج کی طالبات نے رنر اپ کا مقام حاصل کیا ہے۔

ایران میں قید ضلع شمالی کینرا کے ماہی گیروں نے رہائی کی اپیل کے ساتھ جاری کیا نیا ویڈیو؛ اُترکنڑا کے ڈپٹی کمشنر نے جلد رہائی کی دی یقین دہانی

ایرانی سمندری حدود کے خلاف ورزی کرنے کے الزام میں دبئی سے ماہی گیری کے لئے نکلنے والے شمالی کینرا کے جن 18افراد کو ایرانی حفاظتی دستے نے گزشتہ تقریباً ساڑھے تین مہینوں سے ’کشتیوں میں قید‘کررکھا ہے ، انہوں نے ایک نیا ویڈیو جاری کرتے ہوئے مجلس اصلاح وتنظیم، دبئی جماعت ، ضلع ...

وزیر اعظم نے مانا کہ فضائیہ سے بغیر پوچھے بدلا رافیل کا کنٹریکٹ: راہل

کانگریس صدر راہل گاندھی نے سپریم کورٹ میں حکومت کے رافیل معاملے سے متعلق حلف نامے کو لے کر منگل کو وزیر اعظم نریندر مودی پر نشانہ لگایا اور دعوی کیا کہ مودی نے فضائیہ سے پوچھے بغیر کنٹراکٹ بدلنے کی بات قبول کر لی ہے۔گاندھی نے ٹویٹ کر کہاکہ سپریم کورٹ میں مودی جی نے مانی اپنی ...

کْولنگ ٹیکنالوجی میں اہم اختراعات کے تین ملین امریکی ڈالر انعام کا اعلان 

آج نئی دہلی میں دو روزہ گلوبل کْولنگ انوویشن سمٹ کے افتتاحی اجلاس کے دوران معیاری روم ایئر کنڈیشننگ(آر اے سی)کے مقابلے میں پانچ گنا کم ماحولیاتی اثرات کی حامل رہائشی کولنگ ٹیکنالوجی میں اختراع اور ترقی کو ترغیبات فراہم کرنے کے لیے ایک بین الاقوامی مسابقہ گلوبل کولنگ پرائز کا ...

شادی میں شرکت مہنگی پڑی : 9خاندانوں کا سماجی بائیکاٹ ؛آج بھی انسانیت سوز روایت زندہ ؟

گاؤں کے ذمہ دار کی اجازت کے بغیر شادی میں شریک ہونے پر 9خاندانوں کابائیکاٹ کرتے ہوئے انہیں گاؤں سے ہی باہر کئے جانے کا غیرانسانی واقعہ پیش آیاہے۔ سماجی مقاطعہ ، عدم تعاون جیسے ناسور آج بھی زندہ رہنے کی تازہ مثال ہے۔

مدھیہ پردیش : اقتدار میں آئے تو سرکاری دفاتر میں نہیں ہوگی آر ایس ایس کی نشست ، ملازمین پر بھی پابندی

مدھیہ پردیش میں انتخابی ماحول گرم ہے۔ سیاسی پارٹی ووٹروں کو لبھانے کے لئے زور شور سے تشہیر میں مصروف ہیں۔ تمام طرح کے وعدے کئے جا رہے ہیں۔ اس دوران کانگریس نے اپنا منشور جاری کر دیا ہے۔