سابق وزیرآر این نائک نے پوچھا اننت کمار ہیگڈےنے ضلع کے لئے آخر کیا کیا ہے ؟ آتی کرم کا مسئلہ پارلیمان میں کیوں نہیں اُٹھایا ؟

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 10th July 2018, 2:42 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

بھٹکل:10/ جولائی (ایس او نیوز) ضلع اُترکنڑا کے عوام نے اننت کمار ہیگڈے کو رکن پارلیمان بنایا، مگرہمیں یہ بتائیں  کہ اننت کمار ہیگڈے نے ضلع کے لئے آخر  کونسا ترقیاتی کام کیا ، عوام کے فائدے کے لئے انہوں نے کیا کیا،  عوام کے کن کن مسائل کو اُنہوں نے حل کیا ؟ یہ سوال سابق ریاستی وزیر اور بھٹکل کے سابق رکن اسمبلی آر۔این نائک نے پوچھا۔ وہ یہاں بھٹکل میں پریس کانفرنس کا انعقاد کرتے ہوئے گفتگو کررہے تھے۔

آر این نائک نے کہا کہ ضلع اُترکنڑا اور ملناڈ کے علاقوں میں آتی کرم جگہوں کو لے کر عوام سخت پریشان ہیں، یہاں جنگلات زیادہ ہونے کی وجہ سے اکثر لوگ جنگلاتی زمینات پر قبضہ کرکے 40 اور 50 سالوں سے مکانات تعمیر کرکے رہتے آرہے ہیں اور عوام ان زمینات کا پٹہ حاصل کرنے اِدھر سے اُدھر بھاگ رہے ہیں۔ حکومت آتی کرم داروں سے جگہ اپنے نام کرنے  درخواست دینے کے لئے کہتی ہے، لیکن کسی کی بھی درخواست کو منظور نہیں ہوتی۔ آر این نائک نے کہا کہ جب تک پارلیمان میں آتی کرم داروں کے لئے قانون نہیں بنایا جائے گا، محکمہ جنگلات والے کیسے جنگلاتی زمینات پر اُنہیں رہنے دیں گے ؟ آر این نائک نے کہا  کہ پورے ساحلی  کینرا میں بی جے پی کے ہی ارکان پالیمان اقتدار پر ہیں، مگر انہوں نے کبھی بھی اس مسئلہ کو لے کر پارلیمان میں آواز نہیں اُٹھائی ہے، مگر آج جب کماراسوامی  بجٹ پیش کرتے ہیں تو ان لوگوں کو ساحلی کینرا یاد آتا ہے کہ بجٹ میں ساحلی کینرا کو کچھ نہیں دیا گیا ہے۔

آر این نائک نے کماراسوامی کے بجٹ کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کا  ان کے پیش کردہ بجٹ کی مخالفت کرنا بالکل بے معنی ہے۔ موصوف وزیر نےسوال کیا کہ اترکنڑا  کے20-25برسوں سے  رکن پارلیمان بنے اننت کمار ہیگڈے بتائیں کہ منگلورو ترقی بورڈ، ہوائی اڈہ کی ترقی ، اترکنڑا ضلع کی دیرینہ مانگ ریلوے لائن کے متعلق انہوں نے اب تک کیا اقدامات کئے ہیں  ؟

ریاستی بجٹ کے متعلق انہوں نے کہاکہ کسی بھی مخلوط حکومت میں بجٹ پیش کرنا ایک حوصلہ کا کام ہوتاہے ریاستی وزیر اعلیٰ کمار سوامی نے ان حالات کے درمیان بھی بہتر بجٹ پیش کیا ہے جس کے لئے ہم انہیں مبارکباد پیش کرتے ہیں۔ بجٹ کی خاص بات یہ ہے کہ سابق وزیر اعلیٰ سدرامیا کی حکومت میں جو عوامی فائدے کے پروگرام جاری کئے گئے تھے اُسے  مخلوط حکومت میں بھی جاری رکھے گئے ہیں۔ بجٹ میں اترکنڑا ضلع کے لئے خصوصی توجہ دیتے ہوئے اسرائیل کونمونہ مانتے ہوئے اترکنڑا ضلع میں اسرائیل کی طرح زرعی کام شروع کرنے کا فیصلہ لیا گیا ہے۔ اتنا سب ہونے کے باوجود ساحلی اضلاع کو بجٹ میں کچھ بھی نہیں دئیے جانےکے متعلق بی جے پی والوں کا کہنا صحیح نہیں  ہے۔

آر این نائک نے کہا کہ بی جے پی کو اقتدار نہ ملنے کی وجہ سےوہ  پتھروں میں  دہی  تلاش کررہی ہے ۔انہوں نے مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے پر الزام لگایا کہ ضلع کے  مسائل کے متعلق لوک سبھا میں وہ بات ہی نہیں کرتے ، حکومت کو جانے دیجئے ، لوک سبھا میں نجی بل پیش کرنے کی سہولت ہے  مگر ایک ایم پی ہونےکے ناطے انہوں نے اس طرح کی بھی کوشش نہیں کی۔مگر  باہر عوام کے سامنے وہ  منہ میں جو آیا وہ کہتے رہتے ہیں۔

حال ہی میں  آنند اسنوٹیکر نے اننت کمار ہیگڈے کے خلاف جو سنگین الزامات عائد کئے تھے، اس کے تعلق سے آر این نائک نے کہا کہ، گرچہ اسنوٹیکر کی بیان  سے میں متفق نہیں ہوں، لیکن  اسنوٹیکر نے کہا ہے کہ اننت کمار ہیگڈ ے نے   ویشویشور ہیگڈے  کاگیری کو چپل سے  مارا ہے اور مجھے بے حد  افسوس اور تعجب ہورہا ہے  کہ  کاگیری  اتنا سب کچھ سہتے ہوئے بھی اسی پارٹی میں ہے۔ آر این نائک کے مطابق ویشویشور ہیگڈے کاگیری  سیاست میں اپنی شرافت کے لئے مشہورہیں اور ایسے میں اُن کو چپل سے مارنے  کی بات کا سامنے آنے کے بعد خاموش رہنا اور اُسی پارٹی سے بنے  رہنا مناسب  نہیں ہے،آر این نائک نے مشورہ دیا کہ وہ  پارٹی سے  استعفیٰ دے کر باہر نکلیں۔ 

آر این نائک نے  اننت  کمار ہیگڈے کی جانب سے  یلاپور  رکن اسمبلی ہیبار کے متعلق  بیان پر بھی ہیگڈے کو آڑے ہاتھوں لیا اور کہا کہ ایک وزیر ہوکر کسی رکن اسمبلی کے تعلق سے ایسا پوچھنا کہ  "کیا آپ کا ایم ایل اے   مرگیا ہے"۔اس  تہذیب  کی طرف اشارہ کرتا ہے کہ  اننت کمار ہیگڈے کو کم سے کم برہمنوں کی تہذیب و روایت بھی  معلوم نہیں ہے۔

آر این نائک نے کہا کہ عوام کسی لیڈر کو ووٹ دے کر اقتدار پر پہنچاتے ہیں مگر ادب اور تہذیب اُنہیں اپنے والدین اور اساتذہ سے سیکھنی ہوتی ہے۔ آر این نائک نے کہا کہ آننت کمارہیگڈے میں تعلیم کا فقدان پایا جاتا ہے جس کی وجہ سے وہ تہذیب سے گری ہوئی باتیں کرتے ہیں جو کسی وزیر یا عوامی نمائندے کو زیب نہیں دیتا۔

پریس کانفرنس کے موقع پر  ٹی ڈی نائک  اور عبد المجید بھی  موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بنٹوال میں ایمبولینس اور ٹرک کا تصادم۔ 1خاتون ہلاک، 4زخمی    

نیرلکٹے کے پاس پیش آنے والے ٹرک اور ایمبولینس کے تصادم میں ایک خاتون موقع پر ہی ہلاک ہوگئے جبکہ ایمبولینس میں موجود مریض سمیت دیگر 4افراد زخمی ہوگئے ہیں، جنہیں علاج کے لئے پتور کے سرکاری اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔

کاروار:اپنی نجی خواہشات کے لئے دوسروں پر الزام عائد نہ کریں : وزیر دیش پانڈے کا ہیبار پرپلٹ وار

اغی گروپ میں شامل یلاپور کے رکن اسمبلی شیورام ہیبار نےاپنے فیس بک پیج پر ضلع نگراں کار وزیر آر وی دیش پانڈے کے خلاف لگائے گئے الزاما ت کا وزیر دیش پانڈے نے بھی فیس بک پر  ہی  کچھ اس طرح جواب دیا ہے۔ ’ہیبار اپنے نجی اور انفرادی فیصلوں اور خواہشات کے لئے خود ذمہ دار ہیں ، اس ...

اڈپی ضلع پولیس نے کروائی گائیں چرانے کے معاملات میں ملوث157 افرادکی پریڈ۔ شہر بدرکرنے اور غنڈہ ایکٹ لاگو کرنے کی دی گئی وارننگ

اڈپی ضلع میں پولیس نے گائیں چرانے کے معاملات میں شامل رہنے والے افراد کو مختلف مقامات پر طلب کرکے ان کی اجتماعی پریڈ کروائی اور انہیں تنبیہ کرتے ہوئے کہا کہ آئندہ اس طرح کی وارداتوں میں اگر وہ ملوث ہونگے تو پھر ان کے خلاف شہر بدر کرنے یا پھر غنڈہ ایکٹ لاگو کرنے جیسے اقدامات کیے ...

مفرورمنصورخان کاایک اورویڈیو 24 گھنٹے میں ہندوستان واپسی کاوعدہ!

لوگوں کو کروڑوں روپئے کا دھوکہ دینے والی پونزی کمپنی آئی ایم اے کے بانی وایم ڈی محمد منصور خان کیا واقعی 24 گھنٹوں میں ہندوستان واپس لوٹ آئیں گے؟ جبکہ اس گھپلے کی جانچ کررہی ایس آئی ٹی نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ منورخان کا پاسپورٹ انٹرپول کے ذریعہ کالعدم قرار دیا گیا ہے -