فوربس فہرست میں عرب دنیا کے 50 ٹاپ انڈین ایکزیکٹیوز میں بھٹکل کے مشتاق مسعود کانام شامل

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 18th May 2017, 8:54 PM | ساحلی خبریں | خلیجی خبریں |

بھٹکل 18؍مئی (ایس او نیوز) بھٹکل اور اطراف کے عوام کے لئے یہ بڑے رشک اور فخر کی بات ہے کہ Forbes مڈل ایسٹ نے عرب دنیا کے 50ٹاپ ایکزیکٹیوز کی جو فہرست جاری کی ہے اس میں مشتاق مسعود (المعروف ایس ایم سید مشتاق) کانام بھی شامل ہے۔

مشتاق مسعود بھٹکل کے مشہور و معروف مولاناخاندان کے چشم وچراغ ہیں، جو مولانا لنگیز کے لئے دنیا بھر میں مشہور ہے۔مشتاق مولانا لنگیز کے ڈائریکٹر اور میٹا لیکس ایجنسیز ایرناکولم کے پارٹنر ایس ایم سید مسعود مولانا کے صاحبزادے ہیں جو پیشے سے چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ اور دبی انویسٹمنٹ PJSCکے گروپ سی ایف او کے عہدے پر فائز ہیں۔فوربس مڈل ایسٹ نے سید مشتاق کو ان کی بہترین کارکردگی کے لئے 50ٹاپ ایکزیکٹیوز کی فہرست میں 42ویں رینک پر رکھا ہے۔

Dubai Investments PJSCکمپنی جس کے سید مشتاق گروپ سی ایف او ہیں، دبئی کی فنانشیل مارکیٹ میں ایک بہت ہی اہم مقام رکھنے والی کمپنی ہے جو فنانشیل، انڈسٹریل اور ریئل اسٹیٹ کے شعبوں میں متحرک و ملوث ہے۔سید مشتاق نے سال 2008میں اس کمپنی کو جوائن کیا۔مجموعی مالیاتی حکمت عملی اور سرمایہ کارانہ سرگرمیوں میں اپنا بہت ہی مؤ ثر کردار ادا کرتے ہوئے سید مشتاق نے بڑا نام کمایا ہے۔انہوں نے اپنی بہترین صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے کمپنی کے قرضہ جات اور فنڈ منیجمنٹ کو قابل ستائش انداز میں سنبھالا ہے۔دبئی انویسٹمنٹ کی ذیلی کمپنی Al Mal Capital PSCجو کہ ایک کثیر الجہت سرمایہ کاری میں مصروف کمپنی ہے ، اس کے بورڈ آف ڈائریکٹرز میں بھی سید مشتاق شامل ہیں۔

سید مشتاق نے St. Alberts کالج ایرناکولم کیرالہ سے کامرس میں گریجویشن مکمل کیا۔پھر آرٹیکل شپ کے لئے ایک مقامی آڈٹ فرم کے ساتھ جڑ گئے اور 1989میں چارٹرڈ کاؤنٹنٹ بننے کے بعد دبئی کا رخ کیا۔دبئی میں سید مشتاق نے Arthur YoungاورArthur Andersenنامی آڈٹ کمپنیوں کے ساتھ اپنا کیریئر شروع کیا۔ 1992میں وہ ابوظہبی منتقل ہوگئے اور وہاں معروف پٹرولیم کمپنی Adnoc Distributionمیں انٹرنل آڈیٹر کا منصب سنبھالا۔ 1999میں سید مشتاق نے Cupola Groupگروپ جوائن کرتے ہوئے آڈٹنگ سے مالیات(فنانس) کے شعبے کو اپنایااورپھر مڈل ایسٹ اینڈ نارتھ آفریقہ MENAکے علاقے میں سب سے بڑی اکویٹی فرم Abraaj Capitalکے ساتھ منسلک ہوگئے۔Abraaj میں وہ سی ایف او کے عہدے پر فائز رہے جہاں انہیں اپنی صلاحیتیں کھل کر دکھانے کا موقع ملا اور اس طرح Dubai Investmentsکے لئے کام کرنے کا موقع ان کے ہاتھ آیا۔

ساحل آن لائن اس جواں سال کارپوریٹ اور ایکزیکٹیو کو اپنے دل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتا ہے اوردعاگو ہے اللہ انہیں مزید ترقیوں اور عزت و شہرت سے نوازے ۔آمین

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی اور سنگھ پریوار کے احتجاج اور تشدد کے چلتے بالاخر کرناٹک سرکار کا ہوناور کے پریش میستا کی موت کا معاملہ سی بی آئی کے حوالے کرنے کا اعلان

ریاست میں کافی بحث کا موضوع بنے ہوناور کے پریش میستا کی موت کی گتھی سلجھانے کے لئے بالاخر اب ریاستی حکومت نے   اس  معاملے کو سی بی آئی کے ذریعہ تحقیق کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اخبارنویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرداخلہ رام لنگا ریڈی  نے کہا کہ سچائی کو منظر عام پر لانے کے لئے ...

ضلع اُتر کنڑا میں وہاٹس ایپ پر اشتعال انگیزپیغامات پوسٹ کرنے پر 28 معاملات درج

ہوناور میں ایک نوجوان کی ہلاکت کے بعدبی جے پی اور سنگھ پریوار کی حمایت میں  اور بالخصوص مسلمانوں کے خلاف سوشیل میڈیا پر اشتعال انگیز پیغامات روانہ کئے جارہے تھے، ساتھ ساتھ سوشیل میڈیا کے ذریعے مختلف علاقوں میں بند منائے جانے اور احتجاج کے پیغامات پھیلائے جارہے تھے، جس پر ...

ہوناور پریش میستا کی موت کا معاملہ؛ وہاٹس ایپ پراشتعال انگیز افواہیں پھیلانے کے الزام میں ہائی اسکول ٹیچر گرفتار

ہوناور فساد کے پس منظر میں سوشیل میڈیا اور خاص کر وہاٹس ایپ پر افواہیں پھیلا کر ماحول خراب کرنے کے الزام میں کاروار کے ایک ہائی اسکول ٹیچر کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

پریش میستا کے پوسٹ مارٹم کی فائنل رپورٹ ابھی نہیں ملی ۔ دیشپانڈے

ہوناور میں فرقہ وارانہ فسادات کا سلسلہ شروع ہونے کے بعد پریش میستا نامی نوجوان کی جو لاش دستیاب ہوئی تھی اور اس سے پورے ضلع میں نفرت کی آگ بھڑکائی گئی تھی، اس تعلق سے ضلع انچارج وزیر دیشپانڈے نے کہا ہے کہ پریش کے پوسٹ مارٹم کی قطعی رپورٹ ابھی نہیں آئی ہے۔

شارجہ میں ابناء علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی خوبصورت تقریب؛ یونیورسٹی میں میڈیکل تعلیم صرف 60 ہزار میں ممکن!

علی گڈھ مسلم یونیورسٹی جسے بابائے قوم مرحوم سر سید احمد خان نے دو سو سال قبل قائم کیا تھا آج تناور درخت کی شکل میں ملک میں تعلیم کی روشنی عام کررہا ہے۔اس یونیورسٹی میں میڈیکل کے طلبا کے لئے پانچ سال کی تعلیمی فیس صرف 60,000 روپئے ہے، حالانکہ دوسری یونیورسیٹیوں میں میڈیکل کے طلبا ...

متحدہ عرب امارات میں حفظ قرآن جرم، حکومت کی منظوری کے بغیر کوئی شخص قرآن حفظ نہیں کرسکتا، مساجد میں مذہبی تعلیم اور اجتماع پر بھی پابندی

مشرقی وسطیٰ کے مختلف ممالک میں داخل اندازی اور عرب کی اسلامی تنظیموں کو دہشت گرد قرار دینے کے بعد متحدہ عرب امارات قانون کے ایسے مسودہ پر کام کررہا ہے جس کی رو سے حکومت کی منظوری کے بغیر قرآن شریف کا حفظ بھی غیرقانونی ہوگا۔