ممبئی میں منعقدہ آل انڈیامسابقہ قرات قران میں بھٹکل جامعہ اسلامیہ کے طالب العلم کا شاندار پرفارمینس؛ ملا اول مقام

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 12th March 2018, 1:12 AM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بھٹکل 11/مارچ (ایس او نیوز)  ادارہ دعوۃ السنہ کے زیر اہتمام ممبئی میں منعقدہ ۲۱ویں آل انڈیا مسابقۃ القرآن الکریم کے قرات مقابلہ میں بھٹکل جماعت المسلمین کے نائب قاضی مولانا عبدالعظیم قاضیا ندوی کے فرزند اور مکتب جامعہ اسلامیہ  کارگیدے بھٹکل کے طالب العلم  حافظ جعفرقاضیا نے بہترین قرات کا نمونہ پیش کرتے ہوئے اول مقام حاصل کیا ہے اور نہ صرف ریاست کرناٹک، بلکہ بھٹکل اور اپنے مدرسہ جامعہ اسلامیہ کا بھی نام روشن کردیا ہے۔  حافظ جعفر کو اول مقام آنے پر انہیں اور ان کے والدین کو عمرہ کی ادائیگی کا انعام  دیا گیا  ہے۔ جبکہ عمرہ کے لئے اگر پاسپورٹ نہ بنا ہو تو پاسپورٹ بنوانے کے لئے بھی ہر طرح کے تعائون کا اعلان کیا گیا ہے۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق  مسابقہ قرات کے آخری دن ہندوستان کی مختلف ریاستوں اور الگ الگ مدرسوں کے  35 طلبہ نے حصہ لیا تھا، جبکہ حفظ قران مسابقہ میں 41 بچوں نے حصہ لیا۔

قرات کے شعبہ میں  حافظ جعفر نے زبردست پرفارمینس پیش کرتے ہوئے اول مقام حاصل کیا۔ ممبئی میرا روڈ کے دارالعلوم سلیمانیہ کے محمد اسماعیل ابن محمد صادق نے دوسرا انعام اور پاڑے گائوں کے درالعلوم حمیدیہ تعلیم القران کے محمد عامر ابن شوکت کو تیسرا مقام حاصل ہوا۔ صبح دس بجے سے عصر تک لگاتار مسابقہ جاری رہا جس میں طلبہ نے اپنے فن کا بہترین مظاہرہ کیا اور طلبہ کی اکثریت نے تجوید و قرات کی مکمل ادائیگی و پاسداری کی۔

 فرح حفظ میں پہلی پوزیشن محمد سعد ابن مفتی ابرا ر احمد متعلم جامعہ ابن عباس گونا ایم پی، دوسری پوزیشن محمد عمیر ابن حافظ محمد مرتضی متعلم جامعہ  محمدیہ احمد نگر اور تیسری پوزیشن محمد سعد ابن حافظ محمد احسن مدرسہ تذکرۃ العلوم دہلی نے حاصل کی۔ حفظ میں بھی اول آنے والے طالب العلم اور ان کے والدین کو عمرہ کی ادائیگی کا انعام دیا گیا ہے، جبکہ  دوسرا اورتیسرا مقام حاصل کرنے والوں کو بھی گرانقدر انعامات سے نوازا گیا ہے۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق  بھٹکل سےجملہ سات طلبہ نے مسابقہ میں حصہ لیا تھا۔

 مسابقہ میں حکم کے فرائض مولانا مفتی محمد شافع عارفی ، مولانا حذیفہ قاسمی اور قاری سیف الباری نے انجام دیا جبکہ ممتحن مولانا ذیشان الاسلام ندوی تھے دیگر ممتحنین  میں قاری حاذق ناصری اور قاری صادق ناصری تھے ۔ نظامت مولانا شمیم اختر ندوی نے کی ۔

 مولانا ادارہ دعوۃ السنہ ٹرسٹ ممبئی کے روح رواں مولانا شاہد ناصری الحنفی ، نائب صدر مولانا سید اعجاز احمد ملی ، مفتی محمد نافع عارفی ،مصر کے قونصل جنرل سید تبارک محمد ، مولانا ابو ظفر حسان ندوی ، بصیرت میڈیا گروپ کے چیرمین مولانا غفران ساجد قاسمی ،آمنا سامنا کے ایڈیٹر راشد عظیم ، مولانا عبدالقدوس شاکر حکیمی ، سہراب اعظمی ، قاری شہاب صدیقی ودیگر کافی ذمہ داران  اس موقع پر موجود تھے۔

بھٹکل کے حافظ جعفر قاضیا کے اول مقام حاصل کرنے پر  مجلس اصلاح و تنظیم بھٹکل کے صدر جناب مزمل قاضیا، جنرل سکریٹری محی الدین الطاف کھروری سمیت جامعہ اسلامیہ  بھٹکل کے پرنسپال مولانا مقبول کوبٹے ندوی سمیت دیگر کافی اداروں کے ذمہ دارن نے انہیں مبارکباد پیش کی ہے۔

کیا آپ جانتے ہیں حافظ جعفر قاضیا کون ہیں ؟ اگر نہیں تو ذیل میں  بھٹکل میں پیش کی گئی  ان کی بہترین اور خوش الحان قرات  کو سنئے۔ انہوں نے اس وڈیو میں مرحوم مولانا عبدالباری ندوی کی آواز کی  نقل کرنے کی کامیاب کوشش کی ہے :

 

 

ایک نظر اس پر بھی

گیروسوپا ڈیم سے 61ہزارکیوسیکس پانی چھوڑنے پر شراوتی ندی کے بائیں کنارے پر سیلاب کے بعد حالات میں سدھار 

مسلسل برسات کی وجہ سے شراوتی ندی پر واقع گیروسوپاٹیل ریس ڈیم سے کل جمعہ کے دن صبح کے وقت 61ہزار کیوسیکس پانی چھوڑا گیا جس کی وجہ سے شراوتی ندی میں پانی کی سطح میں تین فٹ کا اضافہ ہواتھا اور اس کے دائیں کنارے پر 35کیلومیٹر تک کے علاقے میں سیلاب آگیا تھا۔

بھٹکل سوپر اسٹار اسوسی ایشن کے زیر اہتمام  ہندوستان کی جنگ آزادی میں مسلمانوں کا رول پراہم جلسہ کا انعقاد

سوپر اسٹار اسوسی ایشن بندرروڈ کے زیر اہتمام یوم ِ آزادی کی مناسبت سے’’ ہندوستان کی آزادی میں مسلمانوں کا رول اور نوجوانوں کی ذمہ داریاں ‘‘ کے عنوان پر الافراح شادی بال میں 17اگست 2018بروز جمعہ کی رات  بعد نمازِ عشاء ایک خوب صورت  اجلاس منعقد ہوا۔  

بھٹکل: پرورگا ہائرپرائمری اسکول کے اساتذہ کا تبادلہ : دیہی عوام  کا تبادلے کے خلاف احتجاج

یلووڑی کوؤور گرام پنچایت حدود کی پرورگا ہائر پرائمری اسکول کے اساتذہ کو زائد اسامی ہونے کے نتیجے میں تبادلہ  کیاگیا ہے۔ مقامی عوام نے اساتذہ کے تبادلے سے بچوں کی تعلیم متاثر ہونے کا الزام عائد کرتے ہوئے والدین اور سرپرستوں کےساتھ سنیچر کو  اسکول کے سامنے احتجاج کیا۔

بھٹکل میونسپالٹی افسران کی دکانوں پر چھاپہ ماری :  پلاسٹک اشیاء ضبط

بھٹکل تعلقہ بلدیہ حدود کے مین روڈ کے دونوں کناروں پر واقع مختلف دکانوں  پر چھاپہ ماری کرتے ہوئے بلدیہ افسران نے دکانوں میں غیر قانونی طورپر استعما ل کئے جارہے قریب 50کے جی وزنی پلاسٹک تھیلیوں کو ضبط کر لیا۔

بارش کے متاثرین کی بھرپور مدد کرنے شیوکمار کا مطالبہ

ریاستی وزیر برائے آبی وسائل ومیڈیکل ایجوکیشن ڈی کے شیوکمار نے کہا ہے کہ ریاست کے کورگ ، ملناڈ اور پڑوسی ریاست کیرلا میں مسلسل بارش کے سبب سیلاب کی جو صورتحال پیدا ہوئی ہے اس سے متاثرہ خاندانوں کی مدد کے لئے ریاستی عوام کو فراخدلی سے قدم بڑھانا چاہئے۔

بارش کے متاثرین کے لئے بی بی ایم پی کی فراخدلانہ امداد،بنگلورو کے سبھی کارپوریٹر راحت کاری کے لئے عنقریب پدیاترا کریں گے

کیرلا اور کورگ میں بارش کی تباہیوں سے متاثر لوگوں کی مدد کے لئے پہل کرتے ہوئے برہت بنگلور مہانگر پالیکے نے کیرلا کے لئے ایک کروڑ روپے اور کورگ کے لئے ایک کروڑ روپیوں کی امداد

اٹل بہاری واجپئی کے آخری سفر میں بھی مودی نے کیمرے کا فوکس اپنی طرف یقینی بنایا!

بھارت رتن اٹل بہاری واجپئی سپرد خاک ہو گئے۔ جمعہ کی دوپہر جب دہلی کے دین دیال اپادھیائے مارگ واقع بی جے پی صدر دفتر سے ان کا آخری سفر شروع ہوا تو محسوس ہوا جیسے پورا ملک انھیں خراج عقیدت پیش کرنے امنڈ پڑا۔ جمنا کے ساحل پر موجود اسمرتی استھل تک پھولوں کی بارش ہوتی رہی۔

وسندھرا کی ’گورو یاترا‘ میں سرکاری پیسے کا غلط استعمال، عدالت نے مانگی تفصیل

بی جے پی کی جانب سے راجستھان میں اسمبلی انتخابات سے قبل نکالے جا رہے ’گورو یاترا‘ پر ہائی کورٹ نے سوال کھڑا کر دیا ہے۔ راجستھان ہائی کورٹ نے بی جے پی سے ریاست میں وزیر اعلیٰ وسندھرا راجے کی قیادت میں پارٹی کی جانب سے نکالی جا رہی 56 روزہ ’گورو یاترا‘ میں ہو رہے خرچ کی تفصیل طلب ...

نوٹ بندی اور جی ایس ٹی سے چھوٹی صنعتیں برباد ہوئیں: آر بی آئی رپورٹ

ملک میں تقریباً 2 سال پہلے نوٹ بندی اور اس کے ایکس ال بعد نافذ جی ایس ٹی نے ملک کے متوسط اور چھوٹی صنعتوں کی کمر توڑ دی ہے۔ نوٹ بندی نافذ ہونے کے 2 سال بعد بھی ملک کے انتہائی چھوٹے، چھوٹے اور متوسط (ایم ایس ایم ای) سیکٹر اب تک اس کے اثر سے پوری طرح باہر نہیں نکل پایا ہے۔

نابالغ 5 سال کی بھتیجی کے ساتھ چچا نے کیا ریپ ، قتل کرکے جنگل میں پھینکا

مدھیہ پردیش کے رائے سین ضلع میں نابالغ سے ریپ کا ایسا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ جس میں ایک چچا نے چاچا ۔ بھتیجی کے رشتے کو شرمسار کر دیا ہے۔ چاچا نے پانچ سال کی بھتیجی کے ساتھ ریپ کرکے اس کا قتل کرکے اسے جنگل میں پھینک دیا۔