بھارت بند: اڈپی میں مزدور یونین اور بس ڈرائیور کے درمیان زبانی جھڑپ۔منگلورو میں ملا جلا اثر۔شمالی کرناٹکا میں مکمل بند

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th January 2019, 12:52 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

اڈپی 8؍جنوری (ایس او نیوز)مرکزی حکومت کے خلاف دو دنوں تک بھارت بند منانے کے اعلان کرنے والی مزدور یونین کے اراکین اور بس ڈرائیوروں کے درمیان اڈپی میں زبانی جھڑپ ہونے کی اطلاع ملی ہے۔

موصولہ رپورٹ کے مطابق آٹو رکشا سڑکوں پر دوڑتے ہوئے دیکھ کر بس ڈرائیوروں اور کنڈکٹروں نے اعتراض جتایااور ہڑتالی مزدور یونین کارکنان کے ساتھ ان کی جھڑپ ہوگئی۔ موقع پر شہری پولیس کے علاوہ کرناٹکا ریزرو پولیس کے دستے بھی تعینات کردئے گئے ہیں۔

منگلورو سے ملنے والی خبروں میں بتایا گیا ہے کہ وہاں پر ملا جلا ردعمل دیکھنے کو ملا ہے اور حالات پوری طرح پرامن ہیں۔آٹو رکشا ، ٹیکسی کے علاوہ کچھ نجی اور سرکاری بسیں بھی سڑکوں پر دوڑتی ہوئی پائی گئی ہیں۔جبکہ اس سے پہلے اعلان کیا گیا تھا کہ آٹو رکشا والے ہڑتال میں شامل رہیں گے۔احتیاطی طور پر ڈپٹی کمشنروں کی طرف سے دی گئی ہدایت کے مطابق منگلورو، اڈپی اور ضلع شمالی کینرا میں تمام تعلیمی اداروں میں ایک دن کی چھٹی چل رہی ہے۔کاسرگوڈ کیرالہ کی طرف جانے والی بسیں بند ہیں کیونکہ وہاں مکمل بند منایاجارہا ہے۔منگلورو کی ماہی گیر ی بندر گاہ میں روزمرہ کے معمول کے مطابق کاروبار جاری ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ بنگلورو میں بھی ملا جلا ردعمل دیکھنے کو ملا ہے جبکہ شمالی کرناٹکا کے ہبلی، وجیا پورا، کلبرگی ،بلاری یادگیر جیسے علاقوں میں کاروبار اور ٹریفک بند ہے ۔ سڑکیں سنسان پڑی ہوئی ہیں اورہڑتال پوری طرح کامیاب رہی ہے۔

کیرالہ کے تھیرواننت پورم میں ٹریڈ یونین کے کارکنان نے کئی مقامات پر ٹرین روک کر احتجاجی مظاہرہ کیا۔کرناٹکا کے مختلف شہروں میں ہوٹل اور سنیما گھر کھلے ہوئے ہیں، لیکن عوام کی آمد ورفت نہ ہونے سے ہر طرف سناٹا چھایا ہواہے۔

کسی بھی ناخوشگوار واقعے اور تصادم کو روکنے کے لئے ریاستی پولیس نے حفاظتی بندوبست سخت کردیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

سابق ماہی گیر وزیر پرمود مادھوراج نےملپے سے سات ماہی گیروں کے ساتھ بوٹ کی گم شدگی کے لئے نیوی کو قرار دیا ذمہ دار

اڈپی اورچکمگلورو سیٹ سے جنتادل اور کانگریس کے مشترکہ امیدوار اور سابق وزیر ماہی گیری پرمود مادھو راج نےسات ماہی گیروں کے ساتھ سوورنا تریبھوجا نامی کشتی کی گم شدگی کے لئے بحری فوج کو ذمہ دار قرار دیا ہے۔

اننت کمار ہیگڈے نے کہا، بی جےپی اب سب کی مجبوری ہے : مخالف پارٹی امیدوار پر لگایا پارٹی فنڈ کے لئے الیکشن لڑنے کا الزام

اترکنڑا ضلع میں مخالف پارٹیوں کے امیدوار لوک سبھا انتخابات میں جیت حاصل کرنے کے لئے نہیں بلکہ پارٹی فنڈ لے کر گھر جانے کے لئے الیکشن لڑنے کی بات کہتے ہوئے اترکنڑا بی جے پی امیدوار  اننت کمار ہیگڈے نے اڑنگا لگایا۔

انتخابی خلاف ورزی کے خلاف ’سی۔ وزل ‘پر شکایت درج کریں تو 30منٹ میں کارروائی : 1950ٹول فری نمبر پر شناختی کارڈ اورالیکشن  کی مکمل جانکاری دستیاب

انتخابات کے دوران انتخابی ضابطۂ اخلاق کی خلاف ورزی ہونے پر یا الیکشن کے متعلق عوام ’سی ۔وزل ایپ ‘ کے ذریعے اپنی شکایات  رجسٹرڈ کرسکتے ہیں۔ شکایت درج کرنے کے صرف 30منٹ میں کارروائی کے لئے عملے کو نامزد کیاگیا ہے۔ ہلیال ودھان سبھا حلقہ ک ےمعاون الیکشن  کمشنرپُٹُّو سوامی ، ...

بھٹکل کے قریب منکی میں شادی شدہ خاتون کا مبینہ قتل؛ کیا اولاد نہ ہونے پر شوہر نے ہی کیا اپنی بیوی کا قتل ؟

پڑوسی تعلقہ ہوناور کے منکی  قریہ میں ایک شادی شدہ خاتون کی مشکوک حالت میں نعش برآمد ہوئی ہے، جس کے تعلق سے اُس کے والد نے اُسی کے شوہر اور دیگر لوگوں پر قتل کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔

ایس ایس ایل سی امتحانات؛ میتھس امتحان میں بھٹکل کے 13 سمیت کاروار تعلیمی ضلع کے 206 طلبا غیر حاضر

20 مارچ سے ریاست کرناٹک میں ایس ایس ایل سی امتحانات جاری ہیں، پہلے دن اولین زبان (فرسٹ لنگویج) امتحان میں تعلیمی ضلع کاروار کے جملہ 170 طلبا غیر حاضر رہے تھے، جبکہ آج پیر کو منعقدہ  حساب (میتھس) امتحان میں  ضلع بھر سے جملہ 206 طلبا غیر حاضر رہے ہیں۔ اس بات کی اطلاع  کاروار کے ضلعی ...

سابق ماہی گیر وزیر پرمود مادھوراج نےملپے سے سات ماہی گیروں کے ساتھ بوٹ کی گم شدگی کے لئے نیوی کو قرار دیا ذمہ دار

اڈپی اورچکمگلورو سیٹ سے جنتادل اور کانگریس کے مشترکہ امیدوار اور سابق وزیر ماہی گیری پرمود مادھو راج نےسات ماہی گیروں کے ساتھ سوورنا تریبھوجا نامی کشتی کی گم شدگی کے لئے بحری فوج کو ذمہ دار قرار دیا ہے۔

انتخابات کیلئے سرمایہ اکٹھا کرنے اولاٹیکسی پرپابندی عائد کی گئی تھی۔ گوڑا

مرکزی وزیر ڈی وی سداننداگوڑا نے الزام لگایا ہے کہ انتخابات کے لئے سرمایہ توقع کے مطابق جمع نہ ہونے کی وجہ سے کانگریس ۔ جنتادل (یس) مخلوط حکومت نے اولا ٹیکسی خدمات پر6؍ماہ کے لئے پابندی عائد کی تھی۔

دیوے گوڈا ٹمکورسے نامزدگی داخل کریں گے، کانگریس کے موجودہ ایم پی مدوہنومے گوڈا بھی اس حلقہ سے نامزدگی داخل کرنے پر بضد

اب تک بھی یہ خبریں ہیں کہ جے ڈی ایس کے سربراہ ایچ ڈی دیوے گوڈا ٹمکورپارلیمانی حلقہ سے چناؤ لڑیں گے۔ کانگریس اور جے ڈی ایس کے درمیان سیٹوں کی تقسیم میں ٹمکور حلقہ جے ڈی ایس کے حصے میں گیاہے ،