کیرالہ اور کرناٹک میں بند سے معمولات زندگی درہم برہم 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th September 2018, 12:46 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

ترواننت پورم / بنگلور ،11؍ ستمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) ایندھن کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ کے خلاف کانگریس اور دیگر اپوزیشن پارٹیوں کے بھارت بند سے پیر کو کیرالہ، کرناٹک اور پڈوچیری میں معمولات زندگی متاثر رہی ، جبکہ دیگر جنوبی ریاستوں میں اس کا ملا جلا اثر رہا۔کچھ جگہوں پر نجی اور سرکاری گاڑیوں پر حملے کی واقعات بھی پیش آئے ہیں۔ حکومت کیرالہ میں گاڑی سڑکوں سے ندارد رہی اور دکانیں اور کاروباری ادارے بند رہے۔ریاست میں 12 گھنٹے بند بلایا گیاتھا۔ حالانکہ کانگریس اور دیگر اپوزیشن جماعتوں نے صبح نو بجے سے تین بجے تک کے بند کا ہی اعلان کیا تھا۔سی پی ایم کی قیادت والے حکمراں بایاں محاذ اور کانگریس کی قیادت والے اپوزیش نے بند کی حمایت کی ہے۔سرکاری دفتروں میں حاضری بہت کم رہی ہے۔ بس ٹرمینلز اور ریلوے اسٹیشنوں پر مسافر پھنسے رہے۔ صبح جو دکانیں کھلیں ان کے بعد میں بند حامیوں نے بند کرادیا۔ویسے سیلاب ریلیف کاموں، لازمی خدمات، سیاحت کی صنعت، بیمار افراد کی نقل و حرکت کو بند کے دائرے سے مستثنیٰ رکھا گیا ہے۔کرناٹک میں بھی عام معمولات زندگی پٹری سے اترگئی، جہاں کانگریس جے ڈی ایس اقتدار میں ہے.۔ شہر میں سڑکیں سنسان رہیں کیونکہ سرکاری بسیں، نجی ٹیکسیاں اور زیادہ ترآٹو رکشا نہیں چلے۔ دکانیں اور مال بند رہے کیونکہ کانگریس، جے ڈی ایس اور لیفٹ پارٹیوں کے سینکڑوں کارکن بند لاگو کرنے کے لئے سڑکوں پر اتر گئے تھے۔ منگلور میں بند حامیوں نے بند لاگو کرنے کے لئے دکانوں پر پتھراؤ کیا۔ 

ایک نظر اس پر بھی

مفرورمنصورخان کاایک اورویڈیو 24 گھنٹے میں ہندوستان واپسی کاوعدہ!

لوگوں کو کروڑوں روپئے کا دھوکہ دینے والی پونزی کمپنی آئی ایم اے کے بانی وایم ڈی محمد منصور خان کیا واقعی 24 گھنٹوں میں ہندوستان واپس لوٹ آئیں گے؟ جبکہ اس گھپلے کی جانچ کررہی ایس آئی ٹی نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ منورخان کا پاسپورٹ انٹرپول کے ذریعہ کالعدم قرار دیا گیا ہے -

 گجرات:  ٹھاکر کمیونٹی کادقیانوسی قانون،لڑکیوں کے موبائل کے استعما ل پر مکمل پابندی، بھاگ کر شادی کرنے پر اہل خانہ کو بھرنا ہوگا جرمانہ 

گجرات کے بناس کا ٹھا میں ٹھا کر کمیونٹی کی طرف سے 12 دیہات میں عجیب و غریب اور دقیانوسی قوانین بنائے گئے ہیں۔ اس میں ایک اصول ایسا ہے کہ لڑکیاں اپنے پاس موبائل نہیں رکھ پائیں گی۔

 اب تمام علاقائی زبانوں میں ہون گے ڈاک محکمہ کے امتحانات، راجیہ سبھا میں ہنگامہ کے بعد حکومت نے منسوخ کیا پیپر 

ڈاک محکمہ کی گزشتہ ہفتے ہوئے ایک امتحان کا ذریعہ صرف ہندی اور انگریزی رکھنے کی مخالفت میں منگل کو راجیہ سبھا میں کئی جماعتوں کے ارکان کے ہنگامے کی وجہ سے کاروائی کئی بار روکنا پڑی۔

پاکستانی جیل میں قید سابق ہندوستانی افسر کلبھوشن پر بین الاقوامی عدالت کا فیصلہ آج

پاکستان کی جیل میں بند ہندوستانی بحریہ کے سابق فوجی افسر کلبھوشن جادھو کے معاملے میں بدھ کو ہیگ واقع بین الاقوامی عدالت (آئی سی جے) اپنا فیصلہ سنائے گی۔ ’دی ہیگ‘ کے پیس پیلس میں 17 جولائی کو ہندوستانی وقت کے مطابق شام ساڑھے چھ بجے کھلی سماعت ہوگی جس کے بعد چیف جسٹس عبدالقوی ...