بھارت بند عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش: یڈیورپا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th September 2018, 9:30 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،10؍ستمبر(ایس اونیوز) پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کے بہانے آنے والے لوک سبھا انتخابات پر نظر رکھ کر کانگریس ملک کے عوام کو گمراہ کرنے میں لگی ہوئی ہے۔یہ بات آج ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپا نے کہی۔

انہوں نے کہاکہ کانگریس ایک ڈوبتی کشتی ہے، اس بند کے سہارے سے وہ ساحل تک آنا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ عوام کی جائز مانگوں پر بند کے اہتمام میں کوئی حرج نہیں ہے، لیکن برسر اقتدار سیاسی جماعتوں کو بند کی تائید نہیں کرنی چاہئے۔ یہ حرکت سپریم کورٹ کی حکم عدولی کے مترادف ہے۔

انہوں نے کہا کہ پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کے متعلق کانگریس قائدین عوام کو گمراہ کرنے میں لگی ہوئی ہیں ، تیل کی قیمتوں کاتعین ملک میں نہیں بلکہ بین الاقوامی بازاروں میں ہوتاہے، پچھلے چودھ ماہ کے دوران خام تیل کی قیمتوں میں73 فیصد اضافہ ہوا ہے، جبکہ مرکزی حکومت نے صرف 29 فیصد قیمتوں میں اضافہ کیا ہے، فی بیرل خام تیل 28 ڈالر سے بڑھ کر 79 ڈالر ہوچکا ہے، اس کی مناسبت سے قیمتوں میں اضافہ کیا جاتا تو کافی زیادہ ہوتا۔ انہوں نے کہاکہ فی لیٹر پیٹرول پر مرکزی حکومت صرف 6.66 روپے سیس وصول کرتی ہے، جبکہ ریاستی حکومتیں 25روپے وصول کرتی ہیں، پھر بھی مرکزی حکومت کو اضافے کے لئے مورد الزام ٹھہرانا کہاں تک درست ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ کانگریس حقائق پر پردہ ڈال کر ملک کے عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہی ہے، لیکن اس میں کامیاب نہیں ہوگی۔
 

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک سی ایم کا دعویٰ: جے ڈی ایس ممبر اسمبلی کو بی جے پی لیڈر نے دس کروڑکی پیش کش کی

رناٹک میں حکومت گرانے کے لیے ’آپریشن لوٹس‘ کا ڈر مخلوط حکومت کو دوبارہ ستانے لگا ہے۔وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے بی جے پی پر ان کی پارٹی کے ایک رکن اسمبلی کو رشوت دینے کی کوشش کا الزام لگایا۔

روشن بیگ کے خلاف کانگریس کی کارروائی، پارٹی مخالف سرگرمیوں کے الزام میں معطل

کرناٹک کے سابق ریاستی وزیر آرروشن بیگ کے خلاف کانگریس نے کارروائی کی ہے۔ انہیں پارٹی مخالف سرگرمیوں کے الزام میں معطل کردیا گیا ہے۔ روشن بیگ نے کانگریس کے ریاستی لیڈروں کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کئے تھے۔ آل انڈیا کانگریس کمیٹی سے منظوری ملنے کے بعد کرناٹک پردیش کانگریس ...

رہائشی علاقوں میں کاروباری سرگرمیوں پر روک لگانے میں بلدیہ ناکام

بنگلور شہر کے رہائشی علاقوں میں رہائشی عمارتوں کے اندر سے کاروباری سرگرمیوں پر قدغن لگانے کے سلسلہ میں بروہت بنگلورو مہا نگرا پالیکے (بی بی ایم پی) کی مہم مکمل طور پر ناکام رہی ہے اور پچھلے دو سالوں کے عرصہ میں بلدیہ کی طرف سے صرف پانچ فیصدی ایسے اداروں کو بند کیا گیا ہے-