بھاگلپورگھوٹالہ: کیا سابق ضلع حکام اور سیاستدانوں پر ہاتھ ڈالے گی بہار پولیس

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th August 2017, 12:16 PM | ملکی خبریں |

پٹنہ،12/اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) بہار کے بھاگلپور ضلع میں سرکاری محکموں کے بینک میں ایک رضاکار تنظیم کے اکاؤنٹ میں جمع رقم اب 400 کروڑ سے زیادہ ہوگئی ہے۔ اس صورت میں اب تک سات افرادکوگرفتارکیاگیاہے۔ جن میں کئی ضلع حکام کے پرائیویٹ سیکرٹری رہے پریم کمار شامل ہیں۔ ابھی تک اس معاملے کی جانچ ضلع پولیس اور اقتصادی جرائم یونٹ مشترکہ طور پر کر رہی ہے۔ ہرایک دن اس معاملے میں ایک نیا انکشاف ہو رہاہے۔ ابھی تک ریاستی حکومت یہ نہیں بتا رہی کہ آخر کتنی رقم جواین جی اوکے اکاؤنٹ میں بینکوں سے منتقلی ہوئی وہ واپس آئی اور کتنی رقم این جی او کے پاس اب بھی ہے۔ لیکن اس معاملے میں بینک آف بڑودہ اور انڈین بینک کے حکام کی ملی بھگت تھی اور جلد ان افسران کی گرفتاری بھی ہوگی۔جانچ رپورٹ پر غور کریں تواین جی اوکے اکاؤنٹس میں سب سے زیادہ سرکاری رقم کی فرضی طریقے سے منتقلی اس وقت ضلع مجسٹریٹ وریندر کمار یادو کے وقت ہوئی۔وریندریادوجولائی 2014 کی طرف سے اگست 2015 تک ضلع افسر رہے ہیں۔واضح ہوکہ اس گھوٹالہ میں لالویادونے نتیش کماراورسشیل کمارمودی کوگھیراہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کی نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کا اثر گجرات انتخابات کے نتائج میں نظر آئے گا: اکھلیش یادو 

سماجوادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش یادو نے کہا ہے کہ نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کی وجہ سے تاجروں پر کافی برا اثر پڑا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسان مخالف اور تاجر مخالف پالیسیوں کی وجہ سے بی جے پی کا گراف نیچے آتا جا رہا ہے۔

گجرات میں سات انتخابات میں دو بار ووٹنگ کے فیصدی میں کمی، دونوں بار بی جے پی کو نقصان تو کانگریس کا فائدہ 

گجرات میں ہفتہ کو پہلے مرحلہ میں19ضلعوں میں کی89نشستوں پرتقریباً 68فیصدی ووٹنگ ہوئی اس بار 2012کے اسمبلی انتخابات سے تقریباً 3فیصدی ووٹنگ ہوئی۔ 2012 میں پہلے مرحلے میں19 میں سے15 اضلاع میں ووٹنگ ہوئی تھی۔

خواتین کمیشن نے زائرہ وسیم کے ساتھ ہوئی چھیڑ خانی کو بتایا انتہائی شرمناک فعل 

قومی خواتین کمیشن نے زائرہ وسیم کے ساتھ شرمناک حادثہ قرار دیا ہے ۔زائرہ وسیم نے سوشل میڈیا کے ذریعے وستارا ایئر لائنزکی فلائٹ سے دہلی سے ممبئی جانے والی پرواز میں جس طرح ہراساں کیے جانے کی بات کہی ہے وہ بھارتی تہذیب و ثقافت کے شرم کی بات ہے ۔