صرف اعلان سے کوئی شہر اسمارٹ سٹی نہیں بن جاتا: وینکیا نائیڈو

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th October 2018, 12:22 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،9؍اکتوبر(ایس او نیوز) نائب صدر جمہوریہ ایم وینکیا نائیڈو نے کہا ہے کہ اسکولوں میں تعلیم کے ساتھ طلبا کو اسکواؤڈس ، گائیڈس اور این سی سی تربیت سے آراستہ کرنا لازمی قرار دیا جانا چاہئے۔ آج شہر میں بھارت اسکواؤڈس اینڈ گائیڈس اور بی بی ایم پی کی طرف سے مشترکہ طور پر منعقدہ دین دیال نائیڈو صد سالہ تقریبات سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ دسپلن لانے کے لئے اس طرح کی تربیت طلبا کو پہلے سے زیادہ ضروری ہوچکی ہے۔ انہوں نے کہاکہ موجودہ تعلیمی نظام میں سائنس کے شعبے کی ترقی ، معاشی ترقی کی رفتار اور دیگر تمام امور کا احاطہ کیا گیا ہے، لیکن بدقسمتی سے ملک کی گنگا جمنی تہذیب ،اخلاقی اقدار اور بھائی چارگی کے موضوعات نصاب کے حصے میں بہت کم ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اسکواؤڈس اینڈ گائیڈس کی تربیت سے طلبا میں ڈسپلن ، اخلاقی اقدار وغیرہ کو بڑھانے کی ضرورت ہے۔ عوامی نمائندوں کے انتخاب کے معیار پر سوالیہ نشان لگاتے ہوئے نائب صدر نے کہاکہ ایسے عوامی نمائندوں کا انتخاب ہی کسی بھی معاشرے کو ترقی کی جانب لے جاسکتا ہے، جن میں ترقی کو اپنانے کی صلاحیت ، ڈسپلن اور عزم موجود ہو۔ انہوں نے کہاکہ کسی منتخب نمائندے کا انتخاب اگر اس کے پاس دستیاب دولت اور اس کے مجرمانہ ریکارڈ کی بنیاد پر اگر کیا جاتاہے تو عوامی زندگی سے اخلاق کا دیوالیہ نکل جائے گا۔ ملک کی ترقی انہیں لوگوں کی قیادت میں ممکن ہے جو اخلاق کی پاسداری اور ملک کے تئیں اپنی ذمہ داریوں کا احساس رکھتے ہوں۔ ان لوگوں سے ملک کی ترقی کی توقع فضول ہے جو اپنی دولت کے سہارے اقتدار تک پہنچتے ہیں۔ جدوجہد کے پس منظر والے اگر اقتدار پر فائز رہے تو وہ ترقی کے لئے بھی جدوجہد کریں گے۔ ملک بھر میں وقتاً فوقتاً رونما ہونے والی موسمی تبدیلیوں کے متعلق وینکیا نائیڈو نے کہاکہ بڑے بڑے شہروں میں تالابوں ، نالوں ، راستوں وغیرہ پر غیر قانونی قبضے کرلئے گئے ہیں جس کی وجہ سے ماحولیات پر بہت برا اثر مرتب ہو رہاہے۔کیرلا اور کورگ میں سیلاب اسی ماحولیاتی عدم توازن کا نتیجہ ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ شہر بنگلور میں آلودگی کافی بڑھتی جارہی ہے۔ مرکزی یا ریاستی حکومتوں کی طرف سے صرف شہروں کو اسمارٹ سٹی قرار دئے جانے سے یہ اسمارٹ نہیں ہوجاتیں بلکہ ان شہروں کو اسمارٹ بنانے کے لئے حکومت کے عملی منصوبوں کے ساتھ عوامی تعاون سے ترقیاتی منصوبوں کو آگے بڑھانے کی بھی ضرورت ہے۔ اس موقع پر انہوں نے کرناٹک میں اسکواؤڈس اینڈ گائیڈس کی تحریک کو مضبوط کرنے کے لئے سابق وزیر پی جی آر سندھیا کی خدمات کو سراہا۔ گورنر واجو بھائی والا نے بھی اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کیا اور کہاکہ شہر بنگلور کے عالمی معیار کے انفرااسٹرکچر کو اور مضبوط کرنے کی ضرورت ہے۔ تقریب میں ریاستی وزراء یوٹی قادر ، سارا مہیش اور دیگر موجود رہے۔ یوٹی قادر جو خود بھی ایک اسکاؤڈ ہیں وہ تقریب میں باضابطہ اسکاؤڈ کے یونیفارم میں شریک ہوئے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار: کائیگا پلانٹ توسیعی منصوبہ۔ عوامی احتجاج کے درمیان افسران نے منعقد کیا عوامی اجلاس

کائیگا جوہری توانائی اسٹیشن میں مزید دو یونٹس کا اضافہ کرنے کے منصوبے پر عوامی رائے جاننے کے لئے سرکاری افسران نے کائیگا ٹاؤن شپ میں اجلاس منعقد کیا جبکہ ٹاؤن شپ سے باہر موجودہ اور سابق اراکین اسمبلی کی قیادت میں سیکڑوں افراد نے توسیعی منصوبے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔

بنگلورومیٹرو برڈج میں خرابی کا نائب وزیراعلیٰ پرمیشور نے معائنہ کیا

شہر کے ایم جی روڈ پر ٹرینٹی سرکل کے قریب ایم جی روڈ بیپنا ہلی میٹرو روٹ کے پلر نمبر 155کے قریب ایک بیم میں دراڑ کا آج نائب وزیراعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور نے معائنہ کیا اور کہاکہ اس سلسلے میں مرمت کا کام جاری ہے۔

زہریلے کھانے کا معاملہ، اعلیٰ سطحی جانچ کرانے سدارمیاکا مطالبہ

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ اور مخلوط حکومت کے کورابطہ کمیٹی کے صدر سدارمیا نے سُلوادی گاؤں کے مرمَّا مندر میں زہریلا کھانہ کھانے سے 11 عقیدتمندوں کی موت اور 80 افراد کے بیمار ہونے کے معاملے کی اعلیٰ سطحی جانچ کا مطالبہ کیا ہے ۔