رہائشی علاقوں کی سڑکوں پر تجارتی سرگرمیاں دکانیں اور کمرشیل مراکز قائم کرنے کا منصوبہ زیرغور

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th July 2017, 11:18 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،16؍جولائی(ایس او نیوز)محکمہ ٹاؤن و منصوبہ بندی کی جانب سے نیوزونل ریگولیشن کو پیشکش کی گئی ہے کہ 30فٹ چوڑی سڑکوں کی دونوں جانب دکانیں اور تجارتی مراکز قائم کئے جاسکتے ہیں۔چونکہ اس سلسلہ میں اب تک پابندی عائد ہے کہ رہائشی علاقوں کی سڑکوں پر تجارتی لین دین نہیں کرسکتے۔ مگر نئے منصوبہ کے تحت لوگ اب رہائشی علاقوں میں بھی سڑکوں کے کنارے تجارتی مراکز قائم کرسکتے ہیں۔ ذرائع سے موصولہ اطلاع کے مطابق رہائشی علاقوں کی سڑکیں جس کی چوڑائی 30فٹ یا اس سے زیادہ ہے وہاں دکانیں چلائی جاسکتی ہیں۔ نیوزونل ریگولیشن کے مطابق اس منصوبہ کو عنقریب منظوری ملے گی۔ جس سے شہر بنگلور سمیت ریاست کے دوسرے شہروں میں بھی اس پر عمل آوری ہوگی۔ حالانکہ مذکورہ بل ڈرافٹ سے بنگلور ڈیولپمنٹ اتھارٹی (بی ڈی اے) اور اربن ڈیولپمنٹ ڈپارٹمنٹ کی جانب سے پیش کردہ ہائی کورٹ کی جانب سے جاری قانون کی خلاف ورزی ہوگی۔ جس میں یہ احکامات دیئے گئے تھے کہ رہائشی علاقوں کی سڑکوں پرتجارتی لین دین ممنوع ہے۔ ٹاؤن اینڈ کنٹری پلاننگ کے ڈائرکٹر ایل ششی کمار نے اس سلسلہ میں بتایا کہ ضروری خدمات جس میں چائے کی دکان، ملک بوتھ، سبزی اور پھلوں کی دکانیں، بیکری، دوائیاں اورخوردنی اشیاء فراہم کرنے والے مراکز شامل ہیں کو رہائشی علاقوں کی سڑکوں پر خدمات فراہم کی اجازت ملے گی۔ 2ایچ پی صلاحیتوں والے پاور لومس چلانے کی بھی اجازت دی جائے گی۔ واضح ہو کہ مذکورہ بل ڈرافٹ یکم جولائی 2017کو شائع ہوچکا ہے۔ جس میں تمام تر تفصیلات موجود ہیں۔ محکمہ نے اس سلسلہ میں عوام سے اپیل بھی کی ہے کہ اگر مذکورہ بل ڈرافٹ میں کوئی کمی بیشی ہے تو وہ اپنے تجاویز ہمیں بھیج سکتے ہیں۔ اس کیلئے ایک ماہ کا وقت دیا گیا ہے۔ مسٹر ششی کمار نے مزید بتایا کہ عوامی تجاویز اورمشوروں کو اہمیت دی جائے گی اس لئے جن کو اس سلسلہ میں کوئی اعتراض ہو تو براہ راست محکمہ ٹاؤن اینڈ کنٹری پلاننگ ایم ایس بلڈنگ گیٹ نمبر4 پہنچ کر اپنا اعتراض نامہ پیش کریں۔

ایک نظر اس پر بھی

رکن کونسل بائرتی سریش کی امیر شریعت سے ملاقات

سینئر کانگریس لیڈر اور رکن کونسل بائرتی سریش نے دارالعلوم سبیل الرشاد پہنچ کرامیر شریعت مفتی محمد اشرف علی سے ملاقات کی اور ان سے دعائیں لیں، پچھلے اسمبلی ضمنی انتخابات میں ہبال اسمبلی انتخاب میں کانگریس کی ٹکٹ کیلئے کوشش کرنے والے بائرتی سریش بحیثیت رکن کونسل اپنے حلقہ کے ...

فروغ ہنر سے استفادہ کرنے انجینئروں کو آواز

وشویشوریا ٹیکنیکل یونیورسٹی کی طرف سے دو سو کروڑ روپیوں کی لاگت پر فروغ ہنر مرکز قائم کیاگیا ہے ،جہاں ڈگری یافتہ انجینئرس مختلف فنون کی تربیت کا استفادہ کرسکتے ہیں اور اپنی تعلیم کے ساتھ منتخب ہنر میں غیر معمولی مہارت حاصل کرسکتے ہیں۔ یہ بات آج اس فروغ ہنر سنٹر کے وائس چانسلر ...

بی بی ایم پی کی طرف سے اندراکینٹین کی بروقت شروعات مشکوک

ریاستی حکومت کی طرف سے برہت بنگلور مہانگر پالیکے کی حدود میں یوم آزادی کے موقع پر بڑے پیمانے پر اندرا کینٹین کی شروعات کرکے یہاں پر پانچ روپیوں میں ناشتہ اور دس روپیوں میں دوپہر اور شام کا کھانا مہیا کرانے کا اعلان کیا گیا ہے ، ایسا نہیں لگتا کہ وہ یوم آزادی تک جامۂ حقیقت پہن ...

بی بی ایم پی کے اگلے میئر کے انتخاب کی تیاریاں

برہت بنگلور مہانگر پالیکے کی موجودہ میئر جی پدماوتی کی میعاد 10ستمبر کو پوری ہوجائے گی۔اس کے ساتھ ہی شہر کے اگلے میئر کی تلاش بھی زور پکڑ چکی ہے۔ آنے والی میعاد میں جو بھی میئر بنے گا اس پر انتخابی سال کا دباؤ کافی زیادہ رہے گا۔ جنتادل (ایس) اور آزاد اراکین کے ساتھ کی بدولت پچھلے ...

لنگایت فرقہ کو الگ مذہب کا درجہ دینے کی مانگ، بی جے پی اور آر ایس ایس کے پیروں تلے زمین کھسکنے لگی

ریاست میں لنگایت طبقے کو الگ مذہب کا درجہ دینے کے مطالبے سے پریشان آر ایس ایس نے مطالبہ کیا ہے کہ اس تنازعہ کو سلجھانے کیلئے ایک غیر سیاسی کمیٹی تشکیل دی جائے۔ آر ایس ایس کی طرف سے ریاستی حکومت کے موقف کی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہاگیا ہے کہ لنگایت طبقہ کو علیحدہ مذہب کا درجہ دینے ...

کرناٹک کو بی جے پی سے پاک ریاست بنایا جائے گا: سدرامیا

وزیر اعلیٰ سدرامیا نے آج یہ بات دہرائی کہ ریاست میں انتخابات کے بعد ایک بار پھر کانگریس حکومت ہی برسر اقتدار آئے گی اور کرناٹک میں بی جے پی کو پنپنے نہیں دیا جائے گا۔ ہاویری میں سرکاری پروگراموں میں شرکت کیلئے روانگی سے قبل ہبلی میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سدرامیا ...