بیلتھنگڈی میں آر ٹی آئی کارکن پر انڈیلا گیا ابلتا ہواپانی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 5th December 2018, 2:11 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بیلتھنگڈی5؍دسمبر(ایس او نیوز)سرکاری ہاؤسنگ اسکیم میں ہوئی بدعنوانیوں کے خلاف شکایت کرنے والے آر ٹی آئی اکٹیوسٹ پر ایک خاتون نے ابلتاہوا پانی انڈیل دیا جس کی وجہ سے زخمی آر ٹی آئی کارکن کو اسپتال میں داخل کرنا پڑا ۔

موصولہ رپورٹ کے مطابق اجیرے کے رہنے والے بالا سبرامنیا بھٹ نامی آر ٹی آئی اکٹیوسٹ نے جس اسکیم میں بدعنوانی کی شکایت درج کروائی تھی ، اس کی جانچ کے لئے سرکاری افسران بھٹ کو اپنے ساتھ لے کر ملے بٹّو نامی مقام پر معائنے کے لئے گئے ہوئے تھے ۔بالاسبرامنیا بھٹ نے راجیو گاندھی ہاؤسنگ کارپوریشن کے پاس جو شکایت درج کروائی تھی اس کے مطابق سرکار کی طرف سے شروع کی گئی ’بسوا ہاؤسنگ اسکیم‘ کے تحت اجیرے گرام پنچایت کی نائب صدر وینوتا کے نام گھر منظور کیا گیا تھا۔اور وینوتا نے اسے منظور کیے گئے سائز سے بہت زیادہ بڑا مکان اس اسکیم کے تحت تعمیر کروایا تھا۔

ہاؤسنگ کارپوریشن نے اس شکایت پر تحقیقات کرنے کی ذمہ داری تعلقہ پنچایت ایکزیکٹیو آفیسر کو دی تھی۔جس کے بعد تحقیقاتی ٹیم اپنے ساتھ سبرامنیا بھٹ کو لے کر مذکور ہ مقام پر پہنچی تو مبینہ طور پر وینوتا نے ابلتا ہوا پانی سبرامنیا پر پھینک دیا۔

اس تعلق سے جب تعلقہ پنچایت کے سی ای او سے دریافت کیا گیا تو انہوں نے گول مول سا جواب دیتے ہوئے کہا کہ چونکہ افسران آگے نکل چکے تھے اس لئے حقیقی طورپر کیا بات ہوئی انہیں معلوم نہیں ہے۔ البتہ وینوتا نے مکان کے منظور شدہ نقشے سے زیادہ علاقے میں تعمیری کام انجام دینے کے امکانات موجود ہیں۔

پتہ چلا ہے کہ پولیس افسران نے اسپتال پہنچ کر بالاسبرامنیا بھٹ سے ملاقات کی اور واقعے کی تمام تفصیلات معلوم کیں۔

ایک نظر اس پر بھی

اُترکنڑا سے چھٹی مرتبہ جیت درج کرنے والے اننت کمار ہیگڑے کی جیت کا فرق ریاست میں سب سے زیادہ؛ اسنوٹیکر کو سب سے زیادہ ووٹ بھٹکل میں حاصل ہوئے

پارلیمانی انتخابات میں شمالی کینرا کے بی جے پی امیدوار اننت کمار ہیگڈے نے پوری ریاست کرناٹک میں سب سے زیادہ ووٹوں سے کامیابی حاصل کی ہے۔ انہوں نے 479649 ووٹوں کی اکثریت سے کانگریس  جے ڈی ایس مشترکہ اُمیدور  آنند اسنوٹیکر  کو شکست دی ۔

ریاست میں کبھی ہار کا منھ نہ دیکھنے والے سیاسی لیڈروں کی ذلت بھری شکست

ریاست کرناٹکا میں انتخابی میدان میں کبھی ہار کا منھ نہ دیکھنے والے چند نامورسیاسی لیڈران جیسے ملیکا ارجن کھرگے، دیوے گوڈا، ویرپا موئیلی اورکے ایچ منی اَپا وغیرہ کو اس مرتبہ پارلیمانی انتخاب میں انتہائی ذلت آمیز شکست سے دوچار ہونا پڑا ہے۔ 

منگلورو:کلاس میں اسکارف پہننے پر سینٹ ایگنیس کالج نے طالبہ کو دیا ٹرانسفر سرٹفکیٹ۔طالبہ نے ظاہر کیاہائی کورٹ سے رجوع ہونے اور احتجاجی مظاہرے کاارادہ

کلاس روم میں اسکارف پہن کر حاضر رہنے کی پاداش میں منگلورومیں واقع سینٹ ایگنیس کالج نے پی یو سی سال دوم کی طالبہ فاطمہ فضیلا کو ٹرانسفر سرٹفکیٹ دیتے ہوئے کالج سے باہر کا راستہ دکھا دیا ہے۔

بھٹکل میں رمضان باکڑہ کی نیلامی؛ 40 باکڑوں کے لئے میونسپالٹی کو 1126 درخواستیں

رمضان کے آخری عشرہ کے لئے بھٹکل  میں لگنے والے رمضان باکڑہ کی آج میونسپالٹی کی جانب سے  نیلامی کی گئی۔ بتایا گیاہے کہ 40 باکڑوں کی نیلامی کے لئے  میونسپالٹی کے جملہ 1126 درخواست فارمس فروخت ہوئے تھے۔ 

مسلمانوں کے خلاف اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کی بھاری اکثریت کے ساتھ جیت

مسلمانوں کے خلاف ہمیشہ اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کو اس مرتبہ لوک سبھا انتخابات میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اترکنڑا لوک سبھا حلقے کے بی جے پی اُمیدوار اننت کمار ہیگڈے جنہوں نے کہا تھا کہ جب تک اسلام رہے گا دہشت گردی رہے گی،اسی طرح انہوں نے  دستور کی ...

ایچ کے پاٹل نے راہل گاندھی کو بھیجا استعفیٰ

ریاست میں کانگریس کے تشہیری مہم کمیٹی کے صدر ایچ کے پاٹل نے لوک سبھا انتخابات میں ریاست میں پارٹی کی شکست کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفی دینے کی پیشکش کی ہے۔