بلگاوی سیشن میں کورم نہ ہونے سے دونوں ایوانوں کی کارروائی متاثر پہلے دن کا اجلاس احتجاج اور بائیکاٹ کی نذر۔حکمران اور اپوزیشن کے درمیان جھڑپ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th November 2017, 10:18 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو۔13/نومبر(ایس او نیوز) بارش کی قلت سے سخت خشک سالی کا سامنا کررہے بلگاوی میں آج سے سرمائی اسمبلی اجلاس کا آغاز ہوا ۔اس اجلاس کے آغاز پر ہی ایوان میں احتجاجی مظاہرے دیکھے گئے اور اپوزیشن اراکین نے ایوان کا بائیکاٹ بھی کیا ۔ پہلے دن کا سیشن احتجاجی مظاہروں اور بائیکاٹ کی نذر ہوگیا ۔ بلگاوی کے سورنا سودھا میں آج سے شروع ہوئے اسمبلی اجلاس کے آغاز پر ایوان میں کورم نہ ہونے کی وجہ سے اسمبلی اسپیکر کے بی کولیواڑ کو اجلاس کچھ دیر کے لئے ملتوی کرنا پڑا۔ اس طرح ریاستی قانون ساز کونسل اجلاس میں ریاستی وزراء کے حاضر نہ ہونے کی وجہ سے اپوزیشن بھارتیہ جنتاپارٹی(بی جے پی) اراکین کے احتجاج کرتے ہوئے ایوان سے واک آؤٹ کیا۔ صبح 11بجے اسمبلی اجلاس شروع ہونا طے تھا لیکن اس وقت ایوان میں کورم نہ ہونے کی وجہ سے اسپیکر کو کارروائی ملتوی کرنی پڑی۔ ریاستی قانون ساز کونسل میں کارروائی کا آغاز بھی اسی وقت ہونا طے تھا لیکن اس وقت ایوان میں وزراء کے حاضر نہ ہونے پر اپوزیشن اراکین نے اپنے غصہ کا اظہارکرتے ہوئے کونسل سے بائیکاٹ کیا۔اسمبلی اسپیکر کو اجلاس کے آغاز میں کورم نہ ہونے کی وجہ سے دو تین مرتبہ کارروائی ملتوی کرنی پڑی۔اسمبلی اجلاس میں تقریباً 70 تا80 اراکین اسمبلی نے بہت تاخیر سے شرکت کی۔ اس وقت ایوان میں صرف دو وزراء کاگوڈ تمپا اورڈی کے شیوکمار حاضر رہے ۔اپوزیشن لیڈران جگدیش شٹر اور ایچ ڈی کمارسوامی بھی غیرحاضر رہے۔ اس وقت بی جے پی اراکین کی تعداد 6سے زیادہ نہیں تھی ۔اس سے صاف ظاہر ہے کہ ریاست میں اسمبلی انتخابات قریب ہونے کی وجہ سے اکثر اراکین اسمبلی اپنے اپنے حلقوں میں مصروف ہیں۔ وہ اسمبلی اجلاس میں شرکت کرنے میں زیادہ دلچسپی نہیں لے رہے ہیں ۔ کورم نہ ہونے پر اجلاس کی کارروائی ملتوی کردینے ریاستی گورنر نے اسپیکر کو ایک مکتوب بھی روانہ کیا ہے۔ ایک طرف دونوں ایوانوں میں اراکین کی تعداد نہیں کے برابر ہے تو دوسری طرف بحث کرنے وزراء بھی موجود نہیں ۔اس دوران حکمران پارٹی اوراپوزیشن پارٹی اراکین کے درمیان وقتاً فوقتاً جھڑپیں بھی چلتی رہیں۔ اس موقع پرکونسل میں حاضر دووزراء یوٹی قادراورآنجنیا نے کونسل میں چیرمین سے کہا کہ اراکین جو بھی سوال پوچھیں گے اس کا جواب دینے کے لئے وہ تیار ہیں ۔ اس طرح آج ریاست کے دونوں ایوانوں میں کارروائی متاثر ہوئی۔جب اسمبلیو اجلاس میں اراکین دھیرے دھیرے آنے لگے اور کورم پورا ہوا تو اسپیکر نے کارروائی شروع کرتے ہوئے اس دس روزہ اجلاس میں پیش ہونے والے مختلف بلس اورمعاملات کی تفصیل بتائی۔

ایک نظر اس پر بھی

حکومت کی غیر ذمہ دارانہ حرکت سے پرائیویٹ ڈاکٹروں کامسئلہ الجھا ہے : حزب مخالف لیڈر جگدیش شٹر

ریاستی سرکار کی غیر ذمہ دارانہ حرکت اور ان دیکھی سے مسئلہ الجھا ہے اور پرائیویٹ ڈاکٹروں کا احتجاج ریاست گیر سطح پر عوام کے لئے پریشانی کا باعث بننے کا حزب مخالف لیڈر جگدیش شٹر نے خیال ظاہر کیا۔

حکومت کے مجوزہ کے پی ایم ای ترمیمی بل کی جے ڈی ایس سخت مخالف : ایچ ڈی دیوے گوڈا

جنتادل سکیولر (جے ڈی ایس )ریاستی حکومت کی طرف سے پرائیویٹ ڈاکٹروں پر لگام کسنے کے لئے جاری اجلاس میں پیش کئے جانے والے مجوزہ کے پی ایم ای ترمیمی بل کی سخت مخالفت کئے جانے کا سابق وزیرا عظم ایچ ڈی دیوے گوڈا نے اعلان کیا۔

کالج کی نابالغ طالبہ کی اجتماعی عصمت ریزی،لاڈج کے کنٹراکٹر سمیت چار ملزمین سلاخوں کے پیچھے

کالج کی نابالغ طالبہ کی اجتماعی عصمت ریزی کا ایک واقعہ شہر کے کاڈگوڈی پولیس تھانہ کی حدود میں سامنے آیا ہے۔ کے آر پورم کی ایک کالج میں زیر تعلیم 17سالہ طالبہ کے ساتھ مسلسل ایک ہفتہ تک منہ کالا کرنے والے چار افراد کو کے آر پورم پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

گنپتی معاملہ پر بی جے پی کا اسمبلی میں دھرنا ختم

ڈی وائی ایس پی گنپتی کی مبینہ خود کشی کے معاملے میں سی بی آئی کی طرف سے وزیر ترقیات بنگلور کے جے جارج کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کے معاملے پر بحث کا مطالبہ کرتے ہوئے پچھلے دو دنوں سے ریاستی اسمبلی کی کارروائیوں میں رخنہ اندازی کرنے والی بی جے پی نے آج اپنا احتجاجی دھرنا واپس لے ...