نالوں پر غیر قانونی قبضے ہٹانے انہدامی مہم جلد

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th October 2018, 12:27 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،9؍اکتوبر(ایس او نیوز) برہت بنگلور مہانگر پالیکے کی حدود میں آنے والے 20 سے زائد دیہاتوں کے 242 سروے نمبروں میں بڑے نالوں پر قبضے کئے گئے ہیں ان تمام قبضوں کو ہٹانے کے لئے بی بی ایم پی تیار ہے۔ یہ بات آج بی بی ایم پی میں حکمران پارٹی کے لیڈر ایم شیوراج نے کہی۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ انہدامی کارروائی محکمۂ مالگزاری کے ذریعے کرائی جائے گی اور اس محکمے کے ماہرین کے ذریعے کی جانے والی مارکنگ کی بنیاد پر انہدامی کارروائی آگے بڑھے گی۔ انہوں نے کہاکہ کچھ عرصے قبل چیف سکریٹری کی قیادت میں بڑے نالوں پر غیر قانونی قبضے ہٹانے کے سلسلے میں میٹنگ ہوئی ۔ میٹنگ میں یہ طے ہوا کہ آئے دن بارش کے سبب عوام کو درپیش دشواریوں سے آزاد کرنے کے لئے بڑے نالوں پر قبضے ہٹانے کی مہم کو آگے بڑھانے پر زور دیاگیا۔اس کے لئے محکمۂ مالگزاری کو چیف سکریٹری کی طرف سے دس سرویئر بی بی ایم پی تعینات کرنے کی ہدایت کے ساتھ یہ بھی کہاگیا ہے کہ پندرہ دنوں کے اندر یہ سرویئر اپنی رپورٹ بی بی ایم پی کو پیش کردیں۔ ان سرویئروں نے اپنا کام مکمل کرنے کے بعد تفصیلات دی ہیں جن میں کہاگیا ہے کہ 21 دیہاتوں میں242 سروے نمبروں پر آنے والا بڑا نالہ غیر قانونی طور پر قبضہ کرلیاگیاہے، جہاں بھی انہدامی کارروائی کی ضرورت ہے سرویئرروں نے اس کی نشاندہی کرتے ہوئے اس کی مارکنگ بھی کردی ہے۔ اس مارکنگ کی بنیاد پر بی بی ایم پی عنقریب انہدامی کارروائی کا آغاز کرے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

انتخابات تک ودھان سودھا کو تالالگادیا جائے، ضمنی انتخابات کی طرف حکومت کی مکمل توجہ سے یڈیورپا ناراض

سابق وزیراعلیٰ اور ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپا نے پانچ حلقوں کے ضمنی ا نتخابات کے لئے وزراء اور حکمران اتحاد کے اراکین اسمبلی کو مکمل طور پر انتخابی مہم میں جھونک دئے جانے پر سخت اعتراض کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب تک ضمنی انتخابات نہیں ہوجاتے بہتر ہے کہ وزیراعلیٰ کمار سوامی ...

کورگ ضلع کی از سر نوتعمیر کے لئے خصوصی اتھارٹی جلد: کمار سوامی 

وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے اعلان کیا ہے کہ پچھلے ماہ طوفانی بارش ، سیلاب اور زمین کھسکنے کے واقعات سے بدحال کورگ ضلع میں باز آباد کاری اور از سر نو تعمیر کے لئے ایک مخصوص اتھارٹی کا قیام عمل میں آئے گا جس کی قیادت وہ خود کریں گے۔